DONATE NOW donation

Home Al-Quran Surah Taha Ayat 52 Translation Tafseer

رکوعاتہا 8
سورۃ ﰏ
اٰیاتہا 135

Tarteeb e Nuzool:(45) Tarteeb e Tilawat:(20) Mushtamil e Para:(16) Total Aayaat:(135)
Total Ruku:(8) Total Words:(1485) Total Letters:(5317)
52

قَالَ عِلْمُهَا عِنْدَ رَبِّیْ فِیْ كِتٰبٍۚ-لَا یَضِلُّ رَبِّیْ وَ لَا یَنْسَى٘(۵۲)
ترجمہ: کنزالعرفان
موسیٰ نے فرمایا: ان کا علم میرے رب کے پاس ایک کتاب میں ہے، میرا رب نہ بھٹکتا ہے اور نہ بھولتا ہے۔


تفسیر: ‎صراط الجنان

{قَالَ:موسیٰ نے فرمایا۔} فرعون کی بات سن کر حضرت موسیٰ عَلَیْہِ  الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامنے فرمایا: پہلی قوموں  کے حال کا علم میرے رب عَزَّوَجَلَّ کے پاس ایک کتاب لَوحِ محفوظ میں  ہے جس میں  ان کے تمام اَحوال لکھے ہوئے ہیں  اور قیامت کے دن انہیں  ان اعمال پر جزا دی جائے گی ۔

            یہاں  یہ بات ذہن میں  رہے کہ آپعَلَیْہِ  الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامنے جو جواب دیا کہ اس کاعلم لوحِ محفوظ میں  ہے اس کی وجہ یہ نہ تھی کہ آپ کوگذشتہ قوموں  کے حالات معلوم نہ تھے بلکہ وجہ یہ تھی کہ وہ آپ عَلَیْہِ  الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَام کوتبلیغ ِدین سے نہ پھیر سکے ۔ مزید فرمایا کہ میرا رب عَزَّوَجَلَّ نہ بھٹکتا ہے اور نہ بھولتا ہے۔ گویا فرمایا کہ تمام اَحوال کا لوحِ محفوظ میں  لکھنا، اس لئے نہیں  کہ رب تعالیٰ کے بھولنے بہکنے کا اندیشہ ہے بلکہ یہ تحریر اپنی دوسری حکمتوں  کی وجہ سے ہے جیسے فرشتوں  اور اپنے محبوب بندوں  کو اطلاع دینے کیلئے ہے جن کی نظر لوحِ محفوظ پر ہے۔

Reading Option

Ayat

Translation

Tafseer

Fonts Setting

Download Surah

Related Links