DONATE NOW donation

Home Al-Quran Surah Maryam Ayat 33 Translation Tafseer

رکوعاتہا 6
سورۃ ﰍ
اٰیاتہا 98

Tarteeb e Nuzool:(44) Tarteeb e Tilawat:(19) Mushtamil e Para:(16) Total Aayaat:(98)
Total Ruku:(6) Total Words:(1085) Total Letters:(3863)
33

وَ السَّلٰمُ عَلَیَّ یَوْمَ وُلِدْتُّ وَ یَوْمَ اَمُوْتُ وَ یَوْمَ اُبْعَثُ حَیًّا(۳۳)
ترجمہ: کنزالعرفان
اور مجھ پر سلامتی ہو جس دن میں پیدا ہوا اور جس دن وفات پاؤں اور جس دن زندہ اٹھایا جاؤں ۔


تفسیر: ‎صراط الجنان

{وَ السَّلٰمُ عَلَیَّ:اور مجھ پر سلامتی ہو۔} آخر میں  حضرت عیسیٰ عَلَیْہِ  الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامنے ویساہی کلام کیا جوگزشتہ رکوع میں  حضرت یحیٰ عَلَیْہِ  الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَام کے حوالے سے گزر چکا ہے کہ میں  جس دن پیدا ہوا اس دن مجھ پر سلامتی ہو، جس دن وفات پاؤں  اس دن مجھ پرسلامتی ہو اور جس دن زندہ اٹھایا جاؤں  اس دن مجھ پر سلامتی ہو۔ جب حضرت عیسیٰ عَلَیْہِ  الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَام نے یہ کلام فرمایا توتمام لوگ خاموش ہوگئے اور ان کوآپ عَلَیْہِ  الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَام کی والدہ ماجدہ کے نیک، پرہیزگار ہونے پر یقین آگیا کہ جوبچہ اس طرح کی باتیں  کر رہا ہے اس کی والدہ ہمارے لگائے ہوئے الزامات سے بَری ہیں ، اس کلام کے بعد آپ خاموش ہوگئے اور دوبارہ اسی وقت کلام کیاجب دوسرے بچوں  کی طرح بولنے کی عمرتک پہنچ گئے۔( خازن، مریم، تحت الآیۃ: ۳۳، ۳ / ۲۳۴) اس سے معلوم ہوا کہ  اللہ تعالیٰ کے نبیعَلَیْہِ  السَّلَام ولادت، زندگی، وفات،حشر ہر جگہ  اللہ عَزَّوَجَلَّکے امن میں  رہتے ہیں ۔

Reading Option

Ayat

Translation

Tafseer

Fonts Setting

Download Surah

Related Links