DONATE NOW donation

Home Al-Quran Surah Yusf Ayat 96 Translation Tafseer

رکوعاتہا 12
سورۃ ﷸ
اٰیاتہا 111

Tarteeb e Nuzool:(53) Tarteeb e Tilawat:(12) Mushtamil e Para:(12-13) Total Aayaat:(111)
Total Ruku:(12) Total Words:(1961) Total Letters:(7207)
96

فَلَمَّاۤ اَنْ جَآءَ الْبَشِیْرُ اَلْقٰىهُ عَلٰى وَجْهِهٖ فَارْتَدَّ بَصِیْرًاۚ-قَالَ اَلَمْ اَقُلْ لَّكُمْ ﳐ اِنِّیْۤ اَعْلَمُ مِنَ اللّٰهِ مَا لَا تَعْلَمُوْنَ(۹۶)
ترجمہ: کنزالعرفان
پھر جب خوشخبری سنانے والا آیا تو اس نے وہ کرتا یعقوب کے منہ پر ڈال دیا، اسی وقت وہ دیکھنے والے ہوگئے۔ یعقوب نے فرمایا: میں نے تم سے نہ کہا تھا کہ میں اللہ کی طرف سے وہ بات جانتا ہوں جو تم نہیں جانتے۔


تفسیر: ‎صراط الجنان

{فَلَمَّاۤ اَنْ جَآءَ الْبَشِیْرُ:پھر جب خوشخبری سنانے والا آیا۔} جمہور مفسرین فرماتے ہیں  کہ خوشخبری سنانے والے حضرت یوسف عَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَام کے بھائی یہودا تھے ۔ یہودا نے کہا کہ حضرت یعقوب عَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَام کے پاس خون آلودہ قمیص بھی میں  ہی لے کر گیا تھا، میں  نے ہی کہا تھا کہ حضرت یوسف عَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَام کو بھیڑیا کھا گیا، میں  نے ہی اُنہیں  غمگین کیا تھا اس لئے آج کُرتا بھی میں  ہی لے کر جاؤں  گا اور حضرت یوسف عَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامکی زندگانی کی فرحت انگیز خبر بھی میں  ہی سناؤں  گا ۔ چنانچہ یہود ابرہنہ سر اور برہنہ پا کُرتا لے کر 80 فرسنگ (یعنی240میل) دوڑتے آئے ، راستے میں  کھانے کے لئے سات روٹیاں  ساتھ لائے تھے، فَرطِ شوق کا یہ عالَم تھا کہ اُن کو بھی راستہ میں  کھا کر تمام نہ کرسکے ۔ الغرض یہودا نے جب حضرت یوسف عَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامکی قمیص حضرت یعقوب عَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامکے چہرے پر ڈالی تو اسی وقت ان کی آنکھیں  درست ہوگئیں  اور کمزوری کے بعد قوت اور غم کے بعد خوشی لوٹ آئی، پھر حضرت یعقوب عَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَام نے فرمایا: میں  نے تم سے نہ کہا تھا کہ میں  اللّٰہ تعالیٰ کی طرف سے وہ بات جانتا ہوں  جو تم نہیں  جانتے کہ حضرت یوسف عَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامزندہ ہیں  اور اللّٰہ تعالیٰ ہمیں  آپس میں  ملا دے گا۔ (تفسیرکبیر، یوسف، تحت الآیۃ: ۹۶، ۶ / ۵۰۸، جمل مع جلالین، یوسف، تحت الآیۃ: ۹۶، ۴ / ۸۰، ملتقطاً)

Reading Option

Ayat

Translation

Tafseer

Fonts Setting

Download Surah

Related Links