معاشرتی اصلاح کےلئے سیرتِ رسول کا مطالعہ کیجئےمعاشرتی اصلاح کےلئے سیرتِ رسول کا مطالعہ کیجئے سورۂ کوثر اور شانِ رسولسورۂ کوثر اور شانِ رسول ایمان ِکامل کی نشانیایمان ِکامل کی نشانی جشنِ ولادت اور بزرگانِ دینجشنِ ولادت اور بزرگانِ دین برف سے وضو کرنا کیسا؟برف سے وضو کرنا کیسا؟ محافلِ میلاد اور جلوس میں ڈھول بجانے کا شرعی حکم / عورت فاتحہ پڑھنے کے لئے قبرستان جاسکتی ہے یا نہیں ؟محافلِ میلاد اور جلوس میں ڈھول بجانے کا شرعی حکم / عورت فاتحہ پڑھنے کے لئے قبرستان جاسکتی ہے یا نہیں ؟ میں کونسی کتاب پڑھوںمیں کونسی کتاب پڑھوں بچے جشن ولادت کس طرح منائیں!بچے جشن ولادت کس طرح منائیں! جنت کی خوش خبریجنت کی خوش خبری پیارے نبی کی پیاری ادائیںپیارے نبی کی پیاری ادائیں اسلام کے بارے میں منفی رائے کیوں ؟اسلام کے بارے میں منفی رائے کیوں ؟ تین خصائص ِ مصطفےٰتین خصائص ِ مصطفےٰ دائیں طرفدائیں طرف تحمل مزاجیتحمل مزاجی مومن کی شانمومن کی شان قصیدہ بردہ شریف کب اور کیسے لکھا گیا ؟قصیدہ بردہ شریف کب اور کیسے لکھا گیا ؟ دیواریں روشن ہوجاتیدیواریں روشن ہوجاتی ایک کام کئی طریقو ں سے ہوسکتا ہے!ایک کام کئی طریقو ں سے ہوسکتا ہے! پیشے کے اعتبار سے نسبتیں (قسط:02)پیشے کے اعتبار سے نسبتیں (قسط:02) پرندہ پکڑا اور مالک معلوم نہیں تو کیا کریں ؟پرندہ پکڑا اور مالک معلوم نہیں تو کیا کریں ؟ حضرتِ سیدتنا جُوَیرِیہ رضی اللہ عنھاحضرتِ سیدتنا جُوَیرِیہ رضی اللہ عنھا جوان لڑکی کا اپنی والدہ اور ماموں کے بیٹےکے ساتھ عمرے پر جانا ؟جوان لڑکی کا اپنی والدہ اور ماموں کے بیٹےکے ساتھ عمرے پر جانا ؟ حضرت زید بن خطاب رضی اللہ عنہحضرت زید بن خطاب رضی اللہ عنہ ربیع الاول اسلامی سال کا تیسرا مہینا ہےربیع الاول اسلامی سال کا تیسرا مہینا ہے پانچ ملکوں کا سفرپانچ ملکوں کا سفر ماہنامہ فیضان مدینہ کے 3 سالہ مضامین کا جائزہماہنامہ فیضان مدینہ کے 3 سالہ مضامین کا جائزہ یرقان میں مفید غذائیںیرقان میں مفید غذائیں بدلتے موسم کے اثراتبدلتے موسم کے اثرات بچوں کو معصوم کہنا کیسابچوں کو معصوم کہنا کیسا جشن ولادت اس طرح منائیےجشن ولادت اس طرح منائیے

اہم نوٹ



”نُعمان کو ایک کام سے باہَر بھیجا ہے، بس تھوڑی دیر میں آنے والا ہے۔“ خالہ نے اُسے جواب دیاپھر اُس نےنیاگھر دیکھنے کی اجازت لی اور اسے دیکھنے چل پڑا، گھر کا لان، بالکونی دیکھنے کے بعداُس کے قدم ایک کمرے کے آگے رُک گئے، دراصل وہ کمرہ اِسٹڈی روم (Study Roomیعنی مطالعہ کرنے کا کمرہ تھا، جس میں ایک چھوٹی لیکن دلکش لائبریری تھی جہاں عَرَبی، اُردو اور انگلش میں چھوٹی بڑی بہت ساری Books موجود تھیں، اویس کتابوں کو دیکھ رہاتھا کہ اچانک اسے سَلام کی آواز سنائی دی، سلام کا جواب دیتے ہوئے پیچھے مُڑکر دیکھا تو نُعمان بھائی موجود تھے، نعمان کو دیکھ کر اویس کا چہرہ کِھل اُٹھا۔


مالدار بزرگوں کی سیرت کے مطالعے سے ایک بات یہ پتا چلتی ہے کہ وہ مالدار ہونے کے باوجود سادہ زندگی گزارتے تھے اور غریبوں کی بہت زیادہ مدد کرتے تھے اور ایسا نہیں ہوتا تھا کہ مدد کرنے کے بعد ان پر احسان جتاتے تھے بلکہ وہ اپنی کمائی میں غریبوں کا حق سمجھتے تھے اور ان کا احسان مانتے تھے کہ انہوں نے ہمارا مال قبول کرلیا اور ان سے شکریہ کی بھی بالکل تمنا نہیں کرتے تھے، چنانچہ قراٰنِ مجید میں ارشاد ہوتا ہے:( وَ فِیْۤ اَمْوَالِهِمْ حَقٌّ لِّلسَّآىٕلِ وَ الْمَحْرُوْمِ(۱۹) ) تَرجَمۂ کنزُ الایمان:اور ان کے مالوں میں حق تھا منگتا اور بے نصیب کا۔(پ26، الذّٰریٰت:19)(اس آیت میں) منگتا (سے مراد) وہ (ہے) جو اپنی حاجت کے لئے لوگوں سے سوال کرے اور محروم وہ کہ حاجت مند ہو اور حیاءً سوال بھی نہ کرے۔(خزائن العرفان، ص960 ملخصاً) اس آیتِ مبارکہ سےمعلوم


کسی بھی معاشرے (Society) کو پُرامن بنانے اوراس میں سنتوں کی بہار لانے کے لئے اس کے افراد کی درست تربیت Training)) بے حد ضروری ہے کیونکہ فرد سے معاشرہ بنتا ہے۔ جس معاشرے میں فرد کی تربیت صحیح انداز سے نہ ہوتو اس کے مجموعے سے تشکیل پانے والا معاشرہ بھی خستہ حالی کا شکار رہتا ہے۔اگرہم اپنے ارد گرد کا ماحول اسلامی اقدار کے مطابق بنانا چاہتے ہیں تو ہمیں اپنی اصلاح کے ساتھ ساتھ دیگر لوگوں کی تربیت بھی کرنی ہوگی۔اگر تربیت کی اس اہم ذمہ داری کو بوجھ تصور کر کے اس سے غفلت برتتے رہے تو معاشرے کا بگاڑ بڑھتا چلا جائے گا جس کا کسی حد تک مشاہدہ بھی کیا جاسکتا ہے۔


ایک ٹیچر نے اپنی کلاس کے 60اسٹوڈنٹس کو ایک ایک غُبارے (Balloon)میں ہوا بھرنے کا کہا، پھر ہر غُبارے پر اس طالبِ علم کا نام لکھوا کر تمام غُبارے ایک کمرے میں ڈَلوا دئیے پھر اسٹوڈنٹس سے مخاطِب ہوا:آپ کے پاس 10 منٹ ہیں، اس کے بعد ہر ایک کا غبارہ اس کے ہاتھ میں ہونا چاہئے۔اب سب نے کمرے میں جاکر اپنا غُبارہ تلاش کرنا شروع کیا، حالت یہ تھی کہ 60 اسٹوڈنٹس تلاش کرنے والے تھے اور 60 ہی غُبارے !ایسے میں جو کوئی غُبارہ اُٹھاتا وہ کسی اور کا نکلتا چنانچہ نتیجہ یہ ہوا کہ دس منٹ کا وقت ختم ہونے کے بعد چند ہی طلبہ کو اپنا غُبارہ مِل سکا باقی خالی ہاتھ تھے۔ اب ٹیچر نے اسٹوڈنٹس سے کہا کہ آپ نے روایتی طریقہ (Traditional Method) اپنا یا کہ سب نے ایک ساتھ کمرے میں گھسنے اور صرف اپنا غُبارہ تلاش کرنےکی کوشش کی تو آپ سب کامیاب نہ ہوسکے۔


ماہنامہ ربیع الاول کی ویڈیوز لائبریری



ماہنامہ ربیع الاول کی بُک لائبریری



ماہنامہ ربیع الاول کی تصویر لائبریری



ماہنامہ ربیع الاول کے آرکائیو مطلوبہ الفاظ