DONATE NOW donation

Home Al-Quran Surah Az Zumar Ayat 27 Translation Tafseer

رکوعاتہا 8
سورۃ ﳨ
اٰیاتہا 75

Tarteeb e Nuzool:(59) Tarteeb e Tilawat:(39) Mushtamil e Para:(23-24) Total Aayaat:(75)
Total Ruku:(8) Total Words:(1274) Total Letters:(4795)
27

وَ لَقَدْ ضَرَبْنَا لِلنَّاسِ فِیْ هٰذَا الْقُرْاٰنِ مِنْ كُلِّ مَثَلٍ لَّعَلَّهُمْ یَتَذَكَّرُوْنَۚ(۲۷)
ترجمہ: کنزالعرفان
اور بیشک ہم نے لوگوں کے لیے اس قرآن میں ہر قسم کی مثال بیان فرمائی تاکہ وہ نصیحت حاصل کرلیں ۔


تفسیر: ‎صراط الجنان

{وَ لَقَدْ ضَرَبْنَا لِلنَّاسِ فِیْ هٰذَا الْقُرْاٰنِ مِنْ كُلِّ مَثَلٍ: اور بیشک ہم نے لوگوں  کے لیے اس قرآن میں  ہر قسم کی مثال بیان فرمائی۔} ارشاد فرمایا کہ بیشک ہم نے لوگوں  کے لیے اس قرآن میں  وہ تمام مثالیں  بیان فرمائی ہیں  جن کی اپنے دین کے معاملے میں  غور کرنے والے کو ضرورت ہے تاکہ وہ (انہیں  پڑھ اور سن کر) نصیحت قبول کریں ۔( بیضاوی، الزمر، تحت الآیۃ: ۲۷، ۵ / ۶۵)

 قرآنِ پاک میں  سب کی ضرورتوں  کا لحاظ رکھا گیاہے:

            یادرہے کہ قرآنِ کریم میں  دلائل ، مثالیں ، بشارت، ڈرانا ، عشقِ الٰہی اور نعتِ مصطفی سب ہی مذکور ہیں  کیونکہ قرآنِ پاک ساری دنیا کے لئے آیا ہے اورہر جگہ اور علاقے کے لوگوں  کی طبیعتیں  مختلف ہیں ،ان میں  سے کوئی دلائل سے مانتا ہے، کوئی خوف سے، کوئی لالچ سے، کوئی عشق و محبت سے،اس لئے قرآنِ پاک میں  سب کی ضرورتوں  کا لحاظ رکھا گیاہے۔

Reading Option

Ayat

Translation

Tafseer

Fonts Setting

Download Surah

Related Links