DONATE NOW donation

Home Al-Quran Surah Az Zumar Ayat 26 Translation Tafseer

رکوعاتہا 8
سورۃ ﳨ
اٰیاتہا 75

Tarteeb e Nuzool:(59) Tarteeb e Tilawat:(39) Mushtamil e Para:(23-24) Total Aayaat:(75)
Total Ruku:(8) Total Words:(1274) Total Letters:(4795)
25-26

كَذَّبَ الَّذِیْنَ مِنْ قَبْلِهِمْ فَاَتٰىهُمُ الْعَذَابُ مِنْ حَیْثُ لَا یَشْعُرُوْنَ(۲۵)فَاَذَاقَهُمُ اللّٰهُ الْخِزْیَ فِی الْحَیٰوةِ الدُّنْیَاۚ-وَ لَعَذَابُ الْاٰخِرَةِ اَكْبَرُۘ-لَوْ كَانُوْا یَعْلَمُوْنَ(۲۶)
ترجمہ: کنزالعرفان
ان سے پہلے لوگوں نے جھٹلایا تو ان کے پاس وہاں سے عذاب آیا جہاں سے انہیں خبر نہ تھی۔ اور اللہ نے انہیں دنیا کی زندگی میں رسوائی کا مز ہ چکھایا اور بیشک آخرت کا عذاب سب سے بڑا ہے۔ کیا اچھا ہوتا اگر وہ جان لیتے۔


تفسیر: ‎صراط الجنان

{كَذَّبَ الَّذِیْنَ مِنْ قَبْلِهِمْ: ان سے پہلے لوگوں  نے جھٹلایا۔} اس آیت اور اس کے بعد والی آیت کا خلاصہ یہ ہے کہ اے حبیب! صَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ، جس طرح آپ کی قوم نے آپ کو جھٹلایا اسی طرح کفارِ مکہ سے پہلے کافروں  نے بھی اپنے رسولوں  کو جھٹلایا تو ان کے پاس وہاں  سے عذاب آیا جہاں  سے عذاب آنے کا انہیں خطرہ بھی نہ تھا اور وہ غفلت میں  پڑے ہوئے تھے۔ اللہ تعالیٰ نے انہیں  دنیا کی زندگی میں  رسوائی کا مز ہ چکھایا کہ کسی قوم کی صورتیں  مَسخ کیں ، کسی کو زمین میں  دھنسایا ، کسی کو قتل اور جلا وطنی میں  مبتلا کیا،کسی پر پانی کا طوفان بھیجا اور کسی پر پتھر برسائے اور بیشک آخرت کا جوعذاب ان کے لئے تیار کیا گیا ہے وہ دنیا کے سب عذابوں سے بڑاہے۔ اگر وہ اس بات کو جان لیتے اور تکذیب کرنے کی بجائے ایمان لے آتے تو ان کیلئے بہترہوتا۔(خازن، الزمر، تحت الآیۃ: ۲۵-۲۶، ۴ / ۵۴، مدارک، الزمر، تحت الآیۃ: ۲۵-۲۶، ص۱۰۳۶، روح البیان، الزمر، تحت الآیۃ: ۲۵-۲۶، ۸ / ۱۰۱، ملتقطاً)

آیت ’’ كَذَّبَ الَّذِیْنَ مِنْ قَبْلِهِمْ‘‘ سے حاصل ہونے والی معلومات:

            اس سے دو باتیں  معلوم ہوئیں ۔

(1)… غفلت بھی کفار کے عیوب میں  سے ایک عیب ہے، یعنی سرکشی کرنا اور انجام سے بے خبر رہنا۔

(2)… کبھی بد عملی کی سزا دنیا میں  بھی مل جاتی ہے مگر یہ سزا آخرت کی سزا پر اثر انداز نہ ہوگی بلکہ وہ سزا پوری پوری علیحدہ ہے۔

Reading Option

Ayat

Translation

Tafseer

Fonts Setting

Download Surah

Related Links