DONATE NOW donation

Home Al-Quran Surah Al Qamar Ayat 5 Translation Tafseer

رکوعاتہا 3
سورۃ ﳺ
اٰیاتہا 55

Tarteeb e Nuzool:(37) Tarteeb e Tilawat:(54) Mushtamil e Para:(27) Total Aayaat:(55)
Total Ruku:(3) Total Words:(382) Total Letters:(1460)
5

حِكْمَةٌۢ بَالِغَةٌ فَمَا تُغْنِ النُّذُرُۙ(۵)
ترجمہ: کنزالعرفان
۔(یہ قرآن) انتہاء کو پہنچی ہوئی حکمت ہے تو (ایسوں کو) ڈر انے والے امور فائدہ نہیں دیتے۔


تفسیر: ‎صراط الجنان

{حِكْمَةٌۢ بَالِغَةٌ: انتہاء کو پہنچی ہوئی حکمت۔} اس آیت کا ایک معنی یہ ہے کہ یہ قرآن انتہاء کو پہنچی ہوئی حکمت سے بھرپور ہے تو جب کافر ڈرسنانے والوں  کی مخالفت کریں  گے اور انہیں  جھٹلائیں  گے تو یہ انہیں  کیا فائدہ دیں  گے۔ (خازن، القمر، تحت الآیۃ: ۵، ۴ / ۲۰۲)اسی طرح ایک اور مقام پر ارشاد فرمایا:

’’ قُلِ انْظُرُوْا مَا ذَا فِی السَّمٰوٰتِ وَ الْاَرْضِؕ-وَ مَا تُغْنِی الْاٰیٰتُ وَ النُّذُرُ عَنْ قَوْمٍ لَّا یُؤْمِنُوْنَ‘‘(یونس:۱۰۱)

ترجمۂکنزُالعِرفان: تم فرماؤ: تم دیکھو کہ آسمانوں  اور زمین میں  کیا کیا (نشانیاں ) ہیں  اور نشانیاں  اور رسول ان لوگوں  کو کوئی فائدہ نہیں  دیتے جو ایمان نہیں  لاتے۔

          دوسرا معنی یہ ہے کہ یہ قرآن انتہاء کو پہنچی ہوئی حکمت سے بھرپور ہے تو (کافروں  کو پھربھی) ڈر انے والے اُمور جیسے سابقہ امتوں  پر آنے والے عذابات نے فائدہ نہ دیا۔( جلالین مع صاوی، القمر، تحت الآیۃ: ۵، ۶ / ۲۰۶۱)

Reading Option

Ayat

Translation

Tafseer

Fonts Setting

Download Surah

Related Links