DONATE NOW donation

Home Al-Quran Surah Ibrahim Ayat 23 Translation Tafseer

رکوعاتہا 7
سورۃ ﷼
اٰیاتہا 52

Tarteeb e Nuzool:(72) Tarteeb e Tilawat:(14) Mushtamil e Para:(13) Total Aayaat:(52)
Total Ruku:(7) Total Words:(935) Total Letters:(3495)
23

وَ اُدْخِلَ الَّذِیْنَ اٰمَنُوْا وَ عَمِلُوا الصّٰلِحٰتِ جَنّٰتٍ تَجْرِیْ مِنْ تَحْتِهَا الْاَنْهٰرُ خٰلِدِیْنَ فِیْهَا بِاِذْنِ رَبِّهِمْؕ-تَحِیَّتُهُمْ فِیْهَا سَلٰمٌ(۲۳)
ترجمہ: کنزالعرفان
اور وہ جو ایمان لائے اور اچھے کام کئے وہ جنتوں میں داخل کیے جائیں گے جن کے نیچے نہریں جاری ہیں ، اپنے رب کے حکم سے ہمیشہ ان میں رہیں گے ، وہاں اُن کی ملاقات کی دعا ،سلام ہے۔


تفسیر: ‎صراط الجنان

{اَلَّذِیْنَ اٰمَنُوْا:جو ایمان لائے۔} اس سے پہلی آیتوں  میں  اللّٰہ تعالیٰ نے کافر اور بدکار لوگوں  کے حالات تفصیل سے بیان فرمائے اور اس آیت میں  مومن اور نیکوکار لوگوں  کے حالات بیان فرما رہا ہے، چنانچہ اس آیت میں  بیان فرمایا کہ ایمان قبول کرنے اور نیک اعمال کرنے والوں  کو اللّٰہ تعالیٰ کے اِذن سے جنت کی دائمی نعمتیں  عطا کی جائیں  گی اور اللّٰہ تعالیٰ کے اِذن سے انہیں  نعمتیں  عطا ہونا بھی ان کے حق میں  ایک طرح کی تعظیم ہے اور وہ خود بھی ایک دوسرے کی تعظیم کرتے ہوئے آپس میں  ایک دوسرے کو سلام کریں  گے،فرشتے بھی ان کی تعظیم کرتے ہوئے انہیں  سلام کریں  گے اور اللّٰہ تعالیٰ کی طرف سے بھی انہیں سلام کہا جائے گا۔ جنت میں  سلام کا معنی یہ ہے کہ وہ دنیا کی آفتوں ،حسرتوں  یا دنیا کی بیماریوں ،دردوں ، غموں  اور پریشانیوں  سے سلامت ہو گئے اور دنیا کے فانی جسموں  سے نکل کر جنت کے دائمی جسموں  میں  منتقل ہو جانا اللّٰہ تعالیٰ کی بہت بڑی نعمت ہے۔ (تفسیرکبیر، ابراہیم، تحت الآیۃ: ۲۳، ۷ / ۸۹، ملخصاً)

Reading Option

Ayat

Translation

Tafseer

Fonts Setting

Download Surah

Related Links