DONATE NOW donation

Home Al-Quran Surah Abasa Ayat 41 Urdu Translation Tafseer

رکوعاتہا 1
سورۃ ﴔ
اٰیاتہا 42

Tarteeb e Nuzool:(24) Tarteeb e Tilawat:(80) Mushtamil e Para:(30) Total Aayaat:(42)
Total Ruku:(1) Total Words:(151) Total Letters:(552)
38-42

وُجُوْهٌ یَّوْمَىٕذٍ مُّسْفِرَةٌۙ(۳۸)ضَاحِكَةٌ مُّسْتَبْشِرَةٌۚ(۳۹)وَ وُجُوْهٌ یَّوْمَىٕذٍ عَلَیْهَا غَبَرَةٌۙ(۴۰)تَرْهَقُهَا قَتَرَةٌؕ(۴۱)اُولٰٓىٕكَ هُمُ الْكَفَرَةُ الْفَجَرَةُ۠(۴۲)
ترجمہ: کنزالایمان
کتنے منہ اس دن روشن ہوں گے ہنستے خوشیاں مناتے اور کتنے مونھوں پر اس دن گرد پڑی ہوگیان پر سیاہی چڑھ رہی ہے یہ وہی ہیں کافر بدکار


تفسیر: ‎صراط الجنان

{وُجُوْهٌ یَّوْمَىٕذٍ مُّسْفِرَةٌ: بہت سے چہرے اس دن روشن ہوں  گے۔} قیامت کا حال اوراس کی ہَولْناکیاں  بیان فرمانے کے بعد اب اس آیت اور ا س کے بعد والی 4آیات میں مُکَلَّف لوگوں  کی دو قسمیں  بیان کی جا رہی ہیں  ۔ (1)سعادت مند۔(2)بد بخت۔ جو لوگ سعادت مند ہیں  ان کا حال یہ ہو گا کہ قیامت کے دن ان کے چہرے ایمان کے نور سے یا رات کی عبادتوں  سے یا وضو کے آثارسے روشن ہوں  گے اور حساب سے فارغ ہونے کے بعد وہ اللّٰہ تعالیٰ کی نعمت ،اس کے کرم اور اس کی رضا پر ہنستے ہوئے خوشیاں  منارہے ہوں  گے اور جو لوگ بد بخت ہیں  قیامت کے دن ان کا حال یہ ہو گا کہ (ان کی بد عملیوں  کی وجہ سے) ان کے چہروں  پر گرد پڑی ہوگی اور (ان کے کفر کی وجہ سے) ان پر سیاہی چڑھ رہی ہوگی، یہ وہی کافر بدکارہیں  جن کے ساتھ ایسا سلوک کیا گیا۔( خازن، عبس، تحت الآیۃ: ۳۸-۴۲، ۴ / ۳۵۵)

Reading Option

Ayat

Translation

Tafseer

Fonts Setting

Download Surah

Related Links