خدا نےجس کےسَرپَرتاج رکھااپنی رحمت کا

خدا نے جس کے سَر پَر  تاج رکھا اپنی رحمت کا

خدا نے جس کے سَر پَر  تاج رکھا اپنی رحمت کا

دُرُود اس پر وہ حاکم بنا مُلکِ رِسالت کا

وہ ماحی کفر و ظُلمت شرک و بدعات و ضَلالت کا

وہ حافظ اپنی مِلّت کا وہ ناصِر اپنی اُمّت کا

اَثر کیا ہوسکے گا مِہرِ مَحشر کی حَرارَت کا

ہمارے سَر پہ ہوگا شامیانہ اُن کی رحمت کا

ہمیں بھی ساتھ لے لو قافلہ والو ذرا ٹھہرو

بہت مدّت سے اَرماں ہے مدینے کی زیارت کا

مِری آنکھیں مدینے کی زیارت کو تَرَستی ہیں

چمک جائے الٰہی اب تو تارا میری قسمت کا

میں سمجھوں گا ہُوا جنّت میں داخل موت سے پہلے

نظر آئے گا جس دن سبز گنبد اُن کی تُربَت کا

دِکھا دے فیضِ استادِ حسن حُضَّارِ محفل کو

جمیلِؔ قادری پھر ہو بَیاں پُرلُطف مِدحت کا

اَز   مَدَّاحُ الْحَبِیْب مولانا جمیل الرحمن قادری رضوی رحمۃ اللہ علیہ

قبالۂ بخشش ، ص38

 

Share

خدا نےجس کےسَرپَرتاج رکھااپنی رحمت کا

عابدِ کِبریا  امام حسین

عابدِ کِبریا امام حسین

زاہدِ بےرِیا امام حسین

دین کے پیشوا امام حسین

رہنما مُقْتَدا امام حسین

دھوم عالَم میں ہے شُجاعت کی

کام ایسا کیا امام حسین

راہِ حق میں کٹایا سب کُنبہ

مَرحبَا مرحبا امام حسین

تیری تلوار کا جہاں میں ہے

آج تک غُلغُلہ امام حسین

آپ سے رکھتے ہیں اُمیدِ کرم

رنج کے مُبتَلا امام حسین

اس نعیمِؔ گناہگار پہ لُطف

اے شہِ اَصفِیاء امام حسین

                                                                                                اَز  صَدْرُ الْاَفاضِل مولانا سیدنعیمُ الدین مرادآبادی رحمۃ اللہ علیہ

حیاتِ صدر الافاضل ، ص223

الفاظ و معانی : ماحی : مٹانے والا۔ مِہرِ مَحشر : قِیامت کے دن کا سورج۔ حُضَّارِ محفل : محفل میں حاضر ہونے والے۔ عابدِ کِبریا  : اللہ پاک کی عبادت کرنے والے۔ زاہدِ بے رِیا : اخلاص کے ساتھ دنیا سے بے رغبتی اختیار کرنے والے۔ مُقْتَدا : جس کی پیروی کی جائے۔ عالَم : زمانہ۔ شُجاعت : بہادری۔ کُنبہ : بال بچے۔ غُلغُلہ : شہرت۔ شہِ اَصفِیاء : چُنے ہوئے لوگوں کے سردار۔

Share

Articles

Comments


Security Code