DONATE NOW donation

Home Al-Quran Surah Al Hajj Ayat 22 Translation Tafseer

رکوعاتہا 10
سورۃ ﰓ
اٰیاتہا 78

Tarteeb e Nuzool:(103) Tarteeb e Tilawat:(22) Mushtamil e Para:(17) Total Aayaat:(78)
Total Ruku:(10) Total Words:(1439) Total Letters:(5238)
22

كُلَّمَاۤ اَرَادُوْۤا اَنْ یَّخْرُجُوْا مِنْهَا مِنْ غَمٍّ اُعِیْدُوْا فِیْهَاۗ-وَ ذُوْقُوْا عَذَابَ الْحَرِیْقِ۠(۲۲)
ترجمہ: کنزالعرفان
جب گھٹن کے سبب اس میں سے نکلنا چاہیں گے توپھر اسی میں لوٹا دیے جائیں گے اور انہیں کہا جائے گا کہ آگ کا عذاب چکھو۔


تفسیر: ‎صراط الجنان

{كُلَّمَاۤ اَرَادُوْۤا اَنْ یَّخْرُجُوْا مِنْهَا مِنْ غَمٍّ:جب گھٹن کے سبب اس میں  سے نکلنا چاہیں  گے۔} ارشاد فرمایا کہ جب وہ کفار گھٹن کے سبب جہنم میں  سے نکلنا چاہیں  گے تو گرزوں  سے مار کرپھر اسی میں  لوٹا دیے جائیں  گے اور انہیں  کہا جائے گا کہ آگ کا عذاب چکھو جس کا جلانا انتہائی شدید ہے۔( جلالین، الحج، تحت الآیۃ: ۲۲، ص۲۸۰)

جہنم کو پیدا فرمانے میں  حکمت:

            جہنم  اللہ تعالیٰ کے جلال کا مظہر ہے اور  اللہ تعالیٰ نے جہنم کو ا س لئے پیدا فرمایا ہے تاکہ مخلوق کو  اللہ تعالیٰ کے جلال اور اس کی کبریائی کا اندازہ ہو جائے اور لوگ اس سے ڈرتے رہیں  اور ا س کے خوف کی وجہ سے گناہوں  سے باز رہیں ۔( روح البیان، الحج، تحت الآیۃ: ۲۲، ۶ / ۱۹) افسوس! آج لوگوں  کے دل کی سختی کا یہ حال ہے کہ قرآنِ مجید میں  جہنم کے انتہائی دردناک عذابات کے بارے میں  پڑھنے کے باوجود ان سے ڈرتے نہیں  اور بڑی دیدہ دلیری کے ساتھ گناہوں  میں  مصروف ہیں ۔  اللہ تعالیٰ انہیں  ہدایت اور عقلِ سلیم عطا فرمائے،اٰمین۔

Reading Option

Ayat

Translation

Tafseer

Fonts Setting

Download Surah

Related Links