لاپرواہی

کسی بھی کام کو کرنے سے پہلے اس کے اچّھے یا برے نتائج پر غور کرلینا اِنتِہائی مفید ہے،اس طرح انسان بہت سارے نقصانات سے بچ جاتا ہے لیکن جب انجام کی پرواہ کئے بغیر آنکھیں بند کرکے جوجی میں آئے کرلیا جائے یا زندگی کے اہم مُعامَلات پر توجّہ دینے کی بجائے ان سے  غفلت برتی جائے تو یہ لاپرواہی ہے  اِس کے نتائج بہت  خطرناک ہوتے ہیں ، جسے اس فرضی حکایت سے بآسانی سمجھا جا سکتا ہے:فرضی حکایت: گاڑی تیزی سے اپنی منزل کی جانب رواں دواں تھی۔نوجوان گاڑی چلاتے ہوئے چند لمحوں کیلئے اپنے موبائل فون پر آنے والے پیغامات (Messages) کا جائزہ لیتا اورپھر دوبارہ سامنے دیکھنے لگتا،انجام کی پرواہ کئےبغیر  کچھ دیر تک وہ اسی میں مگن رہا ، بالآخر عین اُس لمحے جب نوجوان کی توجّہ موبائل فون کی طرف تھی ، اچانک مخالف سَمت سے ایک تیز رفتار گاڑی نمودار ہوئی اور نوجوان کے سنبھلنے سے پہلےدونوں گاڑیاں ایک دوسرے سے ٹکرا چکی تھیں۔ میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو! اِس سے ملتے جلتے واقعات آئے دن سننے میں آتے  رہتے ہیں۔ ہماری  ذرا سی غفلت اورلمحہ بھر کی لاپرواہی کانتیجہ بھیانک ہوسکتا ہے یہ جانتے ہوئے بھی ہم لاپرواہی کرنے سے باز نہیں آتے۔آئیے! روزمرّہ کے مُعامَلات میں کی جانے والی چند لاپرواہیوں کا جائزہ لیتے ہیں:

اپنی صحّت کے بارے میں لاپرواہی: مناسب غذا کھانا،اپنی صحّت کا خیال رکھنا، بیمارہونے کی صورت میں علاج کروانا ، جتنی نیند ضروری ہے اُتنی نیند کرنا، صفائی ستھرائی کا خیال رکھناآپ کے جسم کی ضرورتیں ہیں ان سے لاپرواہی برتنا سخت نقصان دہ ہے۔بعض نوجوان لاپرواہی کاایسامظاہرہ کرتے ہیں کہ اپنی طبعی ضروریات کا بھی خیال نہیں رکھتےجس کے باعث آئے دن بیمار پڑے رہتے ہیں۔ پیارے آقا صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَنے مسلسل  نفلی روزے رکھنے اور رات کو نفلی قیام کرنے والے صحابی سے فرمایا:تم پر تمہارے جسم کا بھی حق ہے اور تم پر تمہاری آنکھ کا بھی حق ہے۔(بخاری،ج1،ص649، حدیث:1975)۔یعنی  ہمیشہ روزہ رکھنے سے تمہارا جسم بہت کمزور ہوجائے گا اور بالکل نہ سونے سے نگاہ کمزور پڑجانے کا خطرہ ہے۔(مراٰۃ المناجیح،ج3،ص188) معلوم ہوا کہ جسم کی حفاظت اور صحّت كا خیال بے حد ضروری ہے اس بارے میں ہرگز غفلت نہیں کرنی چاہئے۔معاملات میں لاپرواہی: بعض افراد گھر کے  کئی معاملات میں بھی لاپرواہی کرتے نظر آتے ہیں۔ مثلاً خراب نَل سے مسلسل پانی بہہ رہا ہے، پنکھے، لائٹیں اور دیگر برقی آلات بلاضرورت استعمال ہورہے ہیں لیکن انہیں کوئی پرواہ نہیں ہوتی۔ موبائل یا لیپ ٹاپ چارجنگ پر لگا کرعموماً بھول جاتے ہیں  ، ماہرین کے مطابق برقی آلات کو کئی گھنٹوں تک چارجنگ پر لگائے رکھنا آتشزدگی کا سبب بن سکتا ہےاور موبائل فونز سے آتشزدگی کے تو کئی واقعات رپورٹ ہوچکے ہیں، لہٰذا احتیاط کیجئے! اس سے پہلے کہ لاپرواہی آپ کو کسی بڑے نقصان سے دوچار کردے۔آخرت کے بارے میں لاپرواہی:  دینی مُعامَلات  میں لاپرواہی کرنادنیوی معاملات میں لاپرواہی سے بھی زیادہ خطرناک ہے مگر افسوس آجکل نوجوانوں کی اکثریت اس کا شکار ہے،یاد رہے!نماز روزے  اور دیگر فرائض و واجبات کی ادائیگی میں لاپرواہی اور صغیر ہ و کبیرہ گناہوں سے بچنے میں لاپرواہی، اللہ و رسول عَزَّوَجَلَّ و صلَّی اللہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّم کی ناراضی کے باعث ہلاکت و رسوائی کا ذریعہ ہے۔انجام پر غور کیجئے!: لاپرواہی ایک خطرناک عادت ہے اس سے پیچھا چھڑانے کیلئے اس کے انجام پر غور کیجئے! مثلاً حُصولِ علمِ دین سے لاپرواہی کا انجام جَہالت ہے،وقت کی قدر نہ کرنے کا انجام حسرت اور پچھتاوا ہے اورڈاکٹر کی ذرا سی لاپرواہی کا نتیجہ مریض کی موت ہے۔بہرحال دینی اُمور ہوں یا دُنیوی مُعامَلات ہر نوجوان کو چاہئے کہ لاپرواہی کی عادت ختم کر کے احساسِ ذِمّہ داری پیدا کرے۔تاکہ دنیا وآخرت میں سُرخُرو ہو سکے۔

Share

Articles

Comments


Security Code