DONATE NOW donation

Home Al-Quran Surah Al Qiyamah Ayat 22 Translation Tafseer

رکوعاتہا 2
سورۃ ﴏ
اٰیاتہا 40

Tarteeb e Nuzool:(31) Tarteeb e Tilawat:(75) Mushtamil e Para:(29) Total Aayaat:(40)
Total Ruku:(2) Total Words:(180) Total Letters:(671)
22-23

وُجُوْهٌ یَّوْمَىٕذٍ نَّاضِرَةٌۙ(۲۲)اِلٰى رَبِّهَا نَاظِرَةٌۚ(۲۳)
ترجمہ: کنزالعرفان
کچھ چہرے اس دن تر و تازہ ہوں گے۔اپنے رب کو دیکھنے والے ہوں گے۔


تفسیر: ‎صراط الجنان

{وُجُوْهٌ یَّوْمَىٕذٍ نَّاضِرَةٌ: کچھ چہرے اس دن تر و تازہ ہوں  گے۔} اس آیت اور اس کے بعد والی آیت میں  مخلص مومنین کے بارے میں  فرمایا گیا کہ جب قیامت قائم ہو گی تو اس دن کچھ چہرے ایسے ہوں  گے جو اللّٰہ تعالیٰ کی نعمت و کرم پر مَسرور ہوں  گے اور ان سے اَنوار پھوٹ رہے ہوں  گے اور انہیں  اللّٰہ تعالیٰ کے دیدار کی نعمت سے سرفراز کیا جائے گا۔( خازن، القیامۃ، تحت الآیۃ: ۲۲-۲۳، ۴ / ۳۳۵، روح البیان،القیامۃ، تحت الآیۃ: ۲۲-۲۳،۱۰ / ۲۵۰)

جنتیوں  میں  سب سے زیادہ عزت والا شخص:

            حضرت عبداللّٰہ بن عمر رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُمَا سے روایت ہے،رسولِ کریم صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ  وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے ارشاد فرمایا:’’ادنیٰ درجے کا جنتی اپنے باغات،بیویوں ،خادموں  اور تختوں  کو ہزار برس کی مسافت تک دیکھے گا،اللّٰہ تعالیٰ کے نزدیک ان میں  سب سے زیادہ عزت والا وہ ہو گا جو صبح و شام اللّٰہ تعالیٰ کے دیدار سے مُشَرَّف ہوگا۔ اس کے بعد نبی ٔکریم صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ  وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے پڑھا: ’’وُجُوْهٌ یَّوْمَىٕذٍ نَّاضِرَةٌۙ(۲۲) اِلٰى رَبِّهَا نَاظِرَةٌ‘‘ ۔( ترمذی، کتاب التفسیر، باب ومن سورۃ القیامۃ، ۵ / ۲۱۸، الحدیث: ۳۳۴۱)

{اِلٰى رَبِّهَا نَاظِرَةٌ: اپنے رب کو دیکھنے والے ہوں  گے۔} اس آیت سے ثابت ہوا کہ آخرت میں  مومنین کو اللّٰہ تعالیٰ کا دیدارہو گا، یہی اہلِ سنت کا عقیدہ ہے اور اس پر قرآن و حدیث اور اِجماع کے کثیر دلائل قائم ہیں  اور یہ دیدار کسی کَیْفِیَّت اور جِہَت کے بغیر ہوگا۔

            نوٹ:اس عقیدے سے متعلق تفصیلی معلومات حاصل کرنے کے لئے سورۂ اَنعام کی آیت نمبر 103کی تفسیر ملاحظہ فرمائیں ۔

Reading Option

Ayat

Translation

Tafseer

Fonts Setting

Download Surah

Related Links