روشن ستارے

Image
ان مصیبتوں میں سے ایک مصیبت ہے جن پر میں نے اللہ پاک سے ثواب مانگا تھا۔
Image

جن خوش نصیبوں  نے اىمان کے ساتھ سرکارِ عالی وقار  صلَّی اللہُ علیہِ واٰلہٖ وسَلَّم کى صحبت پائى، چاہے یہ صحبت اىک لمحے کے لئے ہی ہو اور پھر اِىمان پر خاتمہ ہوا انہیں صحابی کہا جاتا ہے۔ یوں توتمام ہی صحابۂ کرام  رضیَ اللہُ عنہم عادل،

Image
سِن 9یا 10 ہجری ماہ رمضانُ المبارک میں سر کارِ دو عالَم صلَّی اللہُ علیہِ واٰلہٖ وسَلَّم مسجدِ نبوی میں تشریف فرما تھےکہ اس دوران  یمن سے 150 افراد کا ایک قافلہ مُشرَّف بَہ اسلام ہونے کے لئے  مدینے کے قریب پہنچا اس قافلے کا سردار 
Image
غزوۂ اُحُد میں حضرتِ سَیِّدُناعمر فاروق رضیَ اللہ عنہ نے اپنے بھائی زید بن خطّاب رضیَ اللہ عنہ سے فرمایا: میں تمہیں قسم دیتا ہوں کہ میری زِرَہ (یعنی لوہے کے جنگی لباس ) کو پہن لو، 
Image
امامِ اہلِ سنّت کی تحریروں میں ایک خاص بات یہ بھی ہے کہ ان کے آگے پیدا ہونے والے شبہات اور سوالات خود بہ خود دَم توڑ دیتے ہیں، ان سطور میں دیکھئےکہ”صحابَۂ کرام عظیم کیوں؟“ کا کس قدر جامع جواب دیا ہے:
Image
صحابیِ رسول حضرت سیّدُنا عبدُاللہ بن مَسعود رضی اللہ عنہ ایک عظیم صحابی کے بارے میں کلماتِ تحسین پیش کرتے ہیں کہ ان کا اسلام لانا (کفار پر) غَلَبہ تھا، ان کی ہجرت (مسلمانوں کے لئے) مدد تھی،
Image
ایک مرتبہ آپ رضی اللہ عنہ نے کم و بیش 300 حفاظ ِکرام کو جمع کیا اور قراٰنِ مجید کی عظمت بیان کرتے ہوئے فرمایا:بے شک !یہ قراٰنِ مجید تمہارے لئے اجر وثواب کا ذریعہ ہے لیکن یہ تم پر بوجھ بھی بن سکتا ہے،