روشن ستارے

Image
امامِ اہلِ سنّت کی تحریروں میں ایک خاص بات یہ بھی ہے کہ ان کے آگے پیدا ہونے والے شبہات اور سوالات خود بہ خود دَم توڑ دیتے ہیں، ان سطور میں دیکھئےکہ”صحابَۂ کرام عظیم کیوں؟“ کا کس قدر جامع جواب دیا ہے:
Image
صحابیِ رسول حضرت سیّدُنا عبدُاللہ بن مَسعود رضی اللہ عنہ ایک عظیم صحابی کے بارے میں کلماتِ تحسین پیش کرتے ہیں کہ ان کا اسلام لانا (کفار پر) غَلَبہ تھا، ان کی ہجرت (مسلمانوں کے لئے) مدد تھی،
Image
ایک مرتبہ آپ رضی اللہ عنہ نے کم و بیش 300 حفاظ ِکرام کو جمع کیا اور قراٰنِ مجید کی عظمت بیان کرتے ہوئے فرمایا:بے شک !یہ قراٰنِ مجید تمہارے لئے اجر وثواب کا ذریعہ ہے لیکن یہ تم پر بوجھ بھی بن سکتا ہے،
Image
تابِعی بُزُرْگ حضرت سیّدُنا مجاہد رحمۃ اللہ علیہ فرماتے ہیں: میں اپنے بارے میں یہ گمان رکھتا تھا کہ لوگوں میں قراٰن کا سب سے مضبوط اور اچّھا حافظ ہوں مگر یہ خیال اس وقت غَلَط ثابت ہوگیا جب میں نے ایک انصاری صحابیِ رسول کے پیچھے نماز پڑھی تو انہوں
Image
آپ رضیَ اللہ عنہ کی رنگت گہری سرخ تھی، قد مبارَک درمیانہ سے کچھ کم تھا، سر کے بال گھنے تھے۔ (تاریخ ابنِ عساکر،ج24،ص215)آپ رضیَ اللہ عنہ سخی اور نرم دل تھے۔ (سیراعلام النبلاء،ج 3،ص361) راہِ خدا میں اپنا مال خرچ کرتے،
Image
خلیفۂ چہارم،امیرُ المؤمنین حضرت سیّدُنا علی بن ابی طالب کَرَّمَ اللہُ وَجہَہُ الْکریم عامُ الفیل کے تیس برس بعد جبکہ حضورِاکرم صلَّی اللہُ علیہِ واٰلہٖ وسَلَّم کے اعلانِ نَبُوَّت فرمانے سے دس سال قبل پیدا ہوئے۔(تاریخ ابن عساکر، ج41، ص361) حضرت علی کَرَّمَ اللہُ وَجہَہُ الْکریم چار بھائیوں
Image
ایک صحابیِ رسول رضیَ اللہُ عنہ ایک رات سورۂ بقرہ کی تلاوت کررہے تھے۔قریب ہی   گھوڑا  بندھا ہوا تھا اورگھوڑے کے قریب ہی ان  کا بیٹا یحییٰ سورہا تھا۔ قراءت جاری تھی کہ اچانک گھوڑا بِدکنے لگا صحابیِ رسول نے پڑھنابند کیا تو گھوڑا بھی ٹھہر گیا ، انہوں نے پڑھنا شروع کیا 
Image
صحابی ابنِ صحابی حضرت سیّدُنا امیر معاویہ بن ابوسفیان رضی اللہ عنہما کا سلسلۂ نسب پانچویں پشت میں حضورِ اکرم صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم سے مل جاتا ہے۔ حضرت امیر معاویہ رضی اللہ تعالٰی عنہ 6ہجری میں صلحِ حُدیبیہ کے بعد دولتِ ایمان سے مالامال ہوئے مگر اپنا اسلام ظاہر نہ کیا۔ 
Image
سن 8ہجری ماہِ رمضان میں فتحِ مکّہ کے بعد نورِ ایمان مکّۂ مکرمہ زادہَا اللہ شرفاً وَّ تعظیماً کے گھر گھر میں داخل ہوچکا تھا، لوگ جوق دَر جوق آ کر رحمتِ عالَم صلَّی اللہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّم کے دستِ مبارک پر اسلام کی بیعت کرنے لگے، مختلف روایات کے مطابق 17،18،یا19دن مکّۂ معظّمہ