روشن ستارے

Image
زبانِ رسالت سے صاحبِ عزت و صاحبِ خیر کا لقب پانے والے ، بارگاہِ رسالت میں اونچا مقام پانے والے صحابیِ رسول حضرت عَمْرو بن جَمُوح کے بارے میں کہا جاتا ہے
Image
حضرت مولا علی رضی اللہُ عنہ کا قد درمیانہ تھا ، آنکھوں کی سیاہی خوب سیاہ اور سفیدی بے انتہا سفید تھی ، چہرہ حسین تھا گویا کہ حُسن میں چودھویں رات کا چاند ہے ، پیٹ بڑا ، دونوں کندھے کشادہ اور چوڑے تھے ،
Image
علم ایسا کہ جس کی روشنی ہر سمت پھیلی ، عمل ایسا کہ جس کی خوشبو ہر جانب مہکی ، عشقِ رسول ایسا کہ جس کی گرمی عُشّاق کے دِلوں کو گرما گئی ، بےپناہ فضائل ،
Image
پیارے آقا صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم کا فرمان ہے : ہم اہلِ بیت کی محبت کو خود پر لازم کرلو! جو اللہ پاک سے اس حال میں ملے کہ ہم سے محبت کرتا ہو تو وہ ہماری شفاعت كے صدقے جنّت میں چلا جائے گا۔
Image
8 ہجری میں مکّہ فتح ہوا تو گھر کا دروازہ بند کرکے بیٹھ گئے پھر جان کی امان طلب کرنے کیلئے اپنے مسلمان بیٹے حضرت عبدُالله بن سہیل کو بارگاہِ رسالت میں بھیجا
Image
آخرت میں حتمی نجات اور جنّت میں بلندیٔ درجات کا دارو مدار اللہ کے آخری نبی صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم سے مُشابہت (Resemblance) پر ہے۔
Image
پھر مولا علی شیرِخدا رضی اللہُ عنہ نے (ہجرت سے پہلے کا واقعہ بیان کرتے ہوئے) فرمایا : میں نے دیکھاکہ رسولُ اللہ صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم کو قریش نے پکڑ رکھا ہے۔
Image
اس واقعہ کے بارے میں حضرت ہِشام رضی اللہُ عنہ فرماتے ہیں : زمانۂ خلافت میں ہم 2 ساتھیوں کو روم کے بادشاہ ہرقل کی جانب بھیجا گیا تاکہ ہم اسے دعوت اسلام پیش کریں۔
Image
پیارے اسلامی بھائیو! میدانِ جنگ میں جان ہتھیلی پر رکھ کر نبیِّ آخرُ الزّماں صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم کے سامنے ڈھال بَن کر کھڑے ہونے والے ،