حدیث شریف اور اس کی شرح

Image
پیارے اسلامی بھائیو! حلال روزی کمانےکی دینِ اسلام میں بہت زیادہ اہمیت ہے۔
Image
علمائے کرام و مُحَدِّثِین عُظّام نے اس حدیثِ پاک کے تحت کئی ایسے اُمور کو بیان کیا ہے
Image
شہید کو شہید کیوں کہتے ہیں؟
Image
یعنی میرے اِس بندے کے لئے جنّت میں ایک گھر بناؤ اور اُس کا نام بَیْتُ الْحَمْد رکھو۔
Image
اللہ کے پیارے حبیب   صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم  کا فرمانِ عظیم ہے: مَنْ کَانَ یُؤْمِنُ بِاللہِ وَالْیَوْمِ الْاٰخِرِ فَلْیُکْرِمْ ضَیْفَہٗ یعنی جو اللہ اور قِیامت کے دن پر ایمان رکھتا ہے تو اسے چاہئے کہ مہمان کا اِکرام کرے۔
Image
علم کی آفت یعنی نِسْیان اور بُھولنے کا مرض کوئی معمولی آفت نہیں ہے بلکہ بہت بڑی آفت ہے اس آفت سے کیسے بچا جائے اس سے متعلق حکیمُ الاُمّت  مفتی احمد یار
Image
حکیمُ الاُمّت مفتی احمد یار خان نعیمی رحمۃ اللہ علیہ اس حدیث مبارکہ کی شرح میں فرماتے ہیں: یعنی عجز و اِنکسار اختیار کرو تاکہ کوئی مسلمان کسی مسلمان پر تکبّر نہ کرے نہ مال میں نہ نسب و خاندان میں نہ عزت یا جتھہ (طاقت) میں۔
Image
بخاری شریف کی ذِکْر کَردہ حدیثِ پاک میں والد، اولاد اور تمام لوگوں کا ذکر ہے، مگراس میں بندے کی اپنی ذات بھی شامل ہے، لہٰذا اس حدیث سے مراد یہ نہیں کہ والد اور اولاد سے بڑھ کر تو محبت کرے