اسلامی بہنوں کے شرعی مسائل / اسلامی بہنوں کی  مدنی خبریں / سلیقے کی باتیں

عورت کے پاس کتنی رقم ہوتوحج فرض ہوتاہے؟

سوال : کیا فرماتے ہیں علمائے کرام اس مسئلہ کے بارے میں کہ مسلمان عاقلہ بالغہ تندرست عورت کے پاس کتنی مالیت  ہوتواس پرحج کرنافرض ہوتاہے؟

بِسْمِ اللّٰہِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْمِ

اَلْجَوَابُ بِعَوْنِ الْمَلِکِ الْوَھَّابِ اَللّٰھُمَّ ھِدَایَۃَ الْحَقِّ وَالصَّوَابِ

جو عاقلہ بالغہ تندرست مسلمان خاتون اپنی حاجت سے زائد اتنی مالیت رکھتی  ہوکہ حج کےزادِسفراورآنے جانے کے خرچ پرقادرہو اور کسی قابلِ اعتماد محرم کے اخراجات کی استطاعت ہو تو اُس پر حج کرنا لازم ہے اوراس محرم کے اخراجات بھی عورت کے ذمے ہیں۔

وَاللہُ اَعْلَمُ عَزَّوَجَلَّ وَ رَسُوْلُہٗ اَعْلَم  صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم

عدت میں عورت  کا بِلاعذر گھر سے نکلنا کیسا؟

سوال : کیافرماتے ہیں علمائےدین و مفتیان شرع متین اس بارے میں کہ ہندہ کا شوہرفوت ہوا ، ہندہ دورانِ عدت کپڑے وغیرہ کی شاپنگ کے لئے گھرسے نکل جاتی ہےحالانکہ ہندہ  کو کپڑے خریدنے کی حاجت نہیں ہے ، اور زینت بھی اختیار کرتی ہے ، ہندہ کا ایسا کرنا درست ہے یا نہیں؟ ہندہ ابھی عدت میں ہے اور اس کے پا س عدت گزارنے کےلئے کافی مال موجود ہے۔

بِسْمِ اللّٰہِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْمِ

اَلْجَوَابُ بِعَوْنِ الْمَلِکِ الْوَھَّابِ اَللّٰھُمَّ ھِدَایَۃَ الْحَقِّ وَالصَّوَابِ

مذکورہ صورت میں ہندہ کادورانِ عدت گھر سے نکلنا شرعاً ناجائزوگناہ ہےکیونکہ شریعتِ مطہرہ نے گھر سے نکلنے کی بعض صورتوں میں اجازت دی  ہے اور ہندہ کا نکلنا بِلااجازتِ شرعی ہےاوراسی طرح دورانِ عدت اس کازینت اختیار کرنا بھی جائز نہیں ہے کیونکہ دورانِ عدت سوگ کاحکم ہےاور زینت سوگ کے منافی ہے۔

وَاللہُ اَعْلَمُ عَزَّوَجَلَّ وَ رَسُوْلُہٗ اَعْلَم  صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم

خواتین کا اپنے پاس مُوئے مبارک رکھنا کیسا؟

سوال : کیا فرماتے ہیں علمائے کرام اس مسئلہ کے بارے میں کہ کیا خواتین اپنے پاس  تبرکات ، خصوصاً نبیِّ کریم صلَّی اللہ علیہ وسلَّم کے مُوئے مبارک رکھ سکتی ہیں؟       سائل : محمد بلال عطاری (موہنی روڈ ، لاہور)

بِسْمِ اللّٰہِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْمِ

اَلْجَوَابُ بِعَوْنِ الْمَلِکِ الْوَھَّابِ اَللّٰھُمَّ ھِدَایَۃَ الْحَقِّ وَالصَّوَابِ

جس طرح مَردوں کو تبرکات رکھنے کی اجازت ہے ، اسی طرح خواتین کو تبرکات رکھنے کی اجازت ہے ، دیگر تبرکات  کے ساتھ ساتھ نبیِّ  کریم صلَّی اللہ علیہ وسلَّم کے موئے مبارک  بھی رکھنا شرعاً جائز ہے۔ کئی صحابیات رضی اللہ عنہن سے نبیِّ کریم صلَّی اللہ علیہ وسلَّم کے موئے مبارک اوردیگرتبرکات اپنےپاس رکھناثابت ہے  جیسے کہ حضرت عائشہ  صدیقہ رضی اللہ عنہا کے پاس نبیِّ کریم صلَّی اللہ علیہ وسلَّم کاکمبل شریف اور تہبندمبارک تھا ، حضرت اسماء بنتِ ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہما کے پاس جبہ مبارک تھااورحضرت اُمِّ سُلَیم رضی اللہ عنہا کےپاس نبیِّ کریم صلَّی اللہ علیہ وسلَّم کا پسینہ مبارک اوربال مبارک تھے۔ اس کے علاوہ بھی کئی صالحات کے پاس نبیِّ کریم صلَّی اللہ علیہ وسلَّم کے بال مبارک  تھے۔

وَاللہُ اَعْلَمُ عَزَّوَجَلَّ وَ رَسُوْلُہٗ اَعْلَم  صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم

ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ

ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ*دارالافتاء اہلِ سنّت ، لاہور

Share

 اسلامی بہنوں کے شرعی مسائل / اسلامی بہنوں کی  مدنی خبریں / سلیقے کی باتیں

مدنی کورسز:* مجلس شارٹ کورسز کے تحت یکم(st1)مارچ 2020ء سے تمام اسلامی بہنوں بالخصوص جاب ہولڈرز ، شعبۂ تعلیم سے منسلک ٹیچنگ و ایڈمن اسٹاف نیز اسٹوڈنٹس کیلئے ایک دن کا “ واقعۂ معراج کورس “ منعقد کیا گیا جس میں شریک اسلامی بہنوں کو معراجِ مصطفےٰ صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم کے حوالے سے مفید معلومات فراہم کی گئیں۔ یہ کورس 124 مقامات پر ہوئے جن میں تقریباً1ہزار962اسلامی بہنوں نے شرکت کی۔ مجلس شعبۂ تعلیم کے زیرِ اہتمام یہ کورس 150مقامات پر ہوئے جن میں تقریباً 4ہزار165اسلامی بہنوں نے شرکت کی۔ یہ کورس آن لائن بھی کروایا گیا جس میں 38ہزار586 اسلامی بہنوں نے شرکت کی * 9مارچ2020ء سے اسلامی بہنوں کی حج سے متعلق تربیت کرنے والی اسلامی بہنوں کے لئے 7 دن پرمشتمل “ فیضانِ رَفیقُ الحَرَمَین کورس “ منعقد کیا گیا۔ کورس کا دورانیہ 3 گھنٹے تھا۔ کورس میں حج و عمرہ کا طریقہ ، نَماز ، وُضو ، غسل اور انفرادی کوشش کا طریقہ نیز ویڈیو کلپس کے ذریعے مسائلِ حج وغیرہ سکھانے کاسلسلہ ہوا۔ شعبۂ تعلیم کی مدنی خبریں: گزشتہ دنوں اسلامی بہنوں کی مجلس شعبۂ تعلیم کے زیر ِ اہتمام گوجرانوالہ میں G.C یونیورسٹی اور Elite group of colleges میں جبکہ نواب شاہ میں قائم Apwa ladies club میں “ میراراستہ میری منزل “ کے نام سے سنّتوں بھرا اجتماع منعقد کیا گیاجس میں کم و بیش 230شخصیات خواتین نے شرکت کی۔ مبلغاتِ دعوتِ اسلامی نے سنّتوں بھرے بیانات کئے اور اس اجتماع میں شریک اسلامی بہنوں کی تربیت کی * پیر محل (ضلع ٹوبہ) کے مہرآباد اسکول نمبر 3 میں 22 فروری 2020ء کو “ درس اجتماع “ کا انعقاد ہوا جس میں پرنسپل ، ٹیچرز اور اسٹوڈنٹس سمیت 180اسلامی بہنوں نے شرکت کی۔ مبلغۂ دعوتِ اسلامی نے سنّتوں بھرا بیان کیا اوراس میں شریک اسلامی بہنوں کو دعوتِ اسلامی کے مدنی کاموں سے متعلق آگاہی فراہم کرتے ہوئے دعوتِ اسلامی کے مدنی ماحول سے وابستہ رہنے اور ہفتہ وار اجتماع میں شرکت کرنے کی ترغیب دلائی * سالاروالاشہرشاہکوٹ کابینہ ، فیصل آبادزون میں قائم اَلفلاح ہائی اسکول اور کالج میں مدنی حلقوں کا انعقاد کیا گیا جن میں کئی اسٹوڈنٹس نے شرکت کی۔ مبلغاتِ دعوتِ اسلامی نے سنّتوں بھرے بیانات کئے اور مدنی حلقوں میں شریک اسلامی بہنوں کو دعوتِ اسلامی کے مدنی کاموں سے متعلق آگاہی فراہم کرتے ہوئے دعوتِ اسلامی کے مدنی ماحول سے وابستہ رہنے اور ہفتہ وار اجتماع میں شرکت کرنے کی ترغیب دلائی۔

دارُ المدینہ:* 26فروری2020ء دارُالمدینہ زینب مسجد کیمپس فیصل آباد میں پری پرائمری کے رزلٹ کے سلسلے میں  تقریب کا انعقاد کیا گیا۔ اس پُروقار تقریب میں فیصل آباد ریجن نگران ، فیصل آباد زون نگران ، فیصل آباد کابینہ نگران (اسلامی بہنیں) ، دارُالمدینہ کے مدنی عملے اور دارُالمدینہ میں پڑھنے والی بچیوں کی سرپرست اسلامی بہنوں نے شرکت کی۔ اختتام پر بچیوں کی حوصلہ افزائی کے لئے اسناد اور تحائف بھی پیش کئے گئے * 27 فروری 2020ء فیصل آباد کے علاقے رضا آبادمیں قائم  دارُالمدینہ رضا کیمپس میں بسلسلۂ رزلٹ ڈے (Result Day) تقریب کا اِنعقاد کیا گیا جس میں دارُالمدینہ میں زیرِ تعلیم بچیوں کی سرپرست اور شخصیات خواتین نے شرکت کی۔ دارُالمدینہ کی بچیوں نے تلاوتِ کلام پاک سے اس تقریب کا آغاز کیا ، اس کے بعدمختلف مدنی خاکوں کی صورت میں بہت شاندار پرفارمنس پیش کی۔ آخِر میں فیصل آباد ریجن نگران اسلامی بہن نے پوزیشن لینے والی بچیوں میں اسناد اور تحائف تقسیم کئے۔

مجلس برائے کفن دفن: اسلامی بہنوں کو شریعت اور سنّت کے مطابق غسلِ میت کا طریقہ سکھانے کے لئے دعوتِ اسلامی کی مجلس برائے کفن دفن کے تحت فروری 2020ء  میں پاکستان بھر میں تقریباً920مقامات پر کفن دفن تربیتی اجتماعات ہوئے جن میں کم و بیش 14ہزار730اسلامی بہنوں نے تربیت حاصل کی۔ مبلغاتِ دعوتِ اسلامی نے سنّتوں بھرے بیانات کئے اور اجتماعات میں شریک اسلامی بہنوں کو غسل و کفن کا دُرست طریقہ سکھایا نیز ان اسلامی بہنوں کو دعوتِ اسلامی کے مدنی ماحول سے وابستہ رہنے اور مجلس برائے کفن دفن کے مدنی کاموں میں حصہ لینے کی ترغیب دلائی۔

Share

 اسلامی بہنوں کے شرعی مسائل / اسلامی بہنوں کی  مدنی خبریں / سلیقے کی باتیں

مدنی کورسز:اسلامی بہنوں کی مجلس شارٹ کورسز کے زیرِ اہتمام 02اپریل2020ء کو سینٹرل افریقہ کے ملک تنزانیہ  میں 5دن پر مشتمل “ فیضانِ زکوٰۃ “ کورس کا انعقادہوا۔ اس کورس میں رُکنِ عالمی مجلسِ مشاورت ذمّہ دار اسلامی بہن سمیت مقامی اسلامی بہنوں نے شرکت کی۔ مبلغۂ دعوتِ اسلامی نے سنّتوں بھرا بیان کیا اور کورس میں شریک اسلامی بہنوں کو قراٰن و حدیث کی روشنی میں زکوٰۃ کا بیان ، چندہ کرنے کی شرعی حیثیت نیز اہم تنظیمی نکات اور مدنی عطیات جمع کرنےسے متعلق معلومات فراہم کیں * دعوتِ اسلامی کے شعبہ مدرسۃُ المدینہ لِلبَنات کے  زیرِ اہتمام یکم اپریل 2020ء سے آسٹریلیا اور ہند میں قراٰنِ کریم کی تعلیم کو عام کرنے کے لئے “ ناظرہ کورس “ کا آغاز ہوا۔ آسٹریلیا کے شہرسڈنی (Sidney) اورمیلبرن (Melbourne) میں 6 ماہ میں اسلامی بہنوں کو “ ناظرہ کورس “ بذریعہ اسکائپ کروایا جائے گا جس میں اسلامی بہنوں کو مکمل قراٰنِ کریم تجوید کے ساتھ پڑھایا جائے گا۔ اسی طرح ہند کے شہر پٹنہ میں قراٰنِ کریم پڑھی ہوئی اسلامی بہنوں کو تقریباً2 ماہ میں بذریعہ اسکائپ ناظرہ کورس کروایا جائے گا۔ کورس کے اختتام پر اسلامی بہنوں کا ٹیسٹ لیا جائے گا ، کامیاب ہونے والی اسلامی بہنیں اِنْ شَآءَ اللہ مدارِسُ المدینہ لِلبَنات میں پڑھانے کی خدمات انجام دیں گی۔ یومِ قفلِ مدینہ: یومِ قُفلِ مدینہ سے مراد ہر اسلامی مہینے  کی پہلی  پیر Monday))  کو رِسالہ “ خاموش شہزادہ “ کاانفرادی یا اجتماعی طورپر مطالعہ کرنایابولتا رِسالہ (Audio) سُنناہوتاہے ،  اس کا وقت   اتوار (Sunday) مغرب تا پیر شریف(Monday)مغرب  تک ہوتا ہے  ۔ اسی سلسلے میں شعبانُ المعظم 1441ھ کی پہلی پیر شریف 30 مارچ 2020ء کو یوکے ، ہند ، آسٹریلیا ، نیپال ، نیوزی لینڈ ، کویت ، عرب شریف ، ناروے اور بنگلہ دیش سمیت دنیا کے مختلف ممالک  میں یومِ قفلِ مدینہ منایا گیا جس میں ہزاروں اسلامی بہنوں نے رِسالہ “ خاموش شہزادہ “ کا مطالعہ کیا اور قفلِ مدینہ لگانے(یعنی  زبان کو فضول گوئی سے بچانے اورنظر کی حفاظت) کی سعادت حاصل کی۔

Share

 اسلامی بہنوں کے شرعی مسائل / اسلامی بہنوں کی  مدنی خبریں / سلیقے کی باتیں

کہتے ہیں کوئی بھی گھر خاتونِ خانہ کی سلیقہ شِعاری کا آئینہ ہوتا ہے ، گھر کو سجانا سنوارنا ، چیزوں کو سلیقے سے  سنبھال کے رکھنا ، عُموماً سبھی خواتین کا مشغلہ ہوتا ہے۔ لیکن مکمل احتیاط و شوق کے باوجود بعض جگہوں کے متعلق اس معاملے میں دانستہ یا نادانستہ بے توجہی برتی جاتی ہےانہی میں سے ایک گھر میں آمدو رفت کا راستہ  بھی ہے۔

پیاری اسلامی بہنو! مرکزی دروازہ (Main Entrance) اور زینہ گھر کا سب سے اہم حصّہ ہے کیونکہ ہمارے گھر آنے والے مہمان نے لازمی ان جگہوں سے گزرنا ہے اور ان جگہوں کی صورتِ حال دیکھ کر بآسانی ہمارے ذوق اورہماری نَظافت و نَفاست پسندی کا اندازہ لگاسکتا ہے۔  ہمیں چاہئے کہ ان جگہوں کو  صاف ستھرا رکھیں اور اگر ممکن ہوتو اپنے بجٹ (Budget) کو سامنے رکھتے ہوئے کچھ نا کچھ Decorate بھی کردیں تاکہ اسلام نے جو ہمیں صفائی ستھرائی کی تعلیم دی ہے اس پر بھی عمل ہو اور آنے والوں پر بھی ہمارے گھرانے کا خوشگوار تأثر پڑے کہ First impression is the last impression یعنی پہلی بار میں پڑنے والا تأثر ہی آخری تأثر ہوا کرتا ہے۔ اس سلسلے میں نیچے لکھے گئے کچھ نِکات (Points) امید ہے آپ کے لئے فائدہ مند ہونگے :

* سب سے پہلی بات تو یہ کہ ان جگہوں کو ہمیشہ صاف ستھرا رکھیں ، مثلادروازے کی باہری اور اندرونی طرف یونہی سیڑھیوں کی ریلنگ پر پڑی مٹی بروقت  جھاڑی نہ جائے تو جَم جاتی ہے* ان جگہوں کو مصنوعی(Artificial) اور ممکن ہو تو  قدرتی(Natural)  پودوں  سے بھی سجانے کا اہتمام کیا جا سکتا ہے لیکن دونوں صورتوں میں اس بات کا خیال رکھیں کہ سیڑھیوں پر ان کا رکھنا گزرنے والوں کی پریشانی کا باعث تو نہیں ہے یوں ہی قدرتی پودے رکھنے کی صورت میں ان کی مناسب دیکھ بھال کا انتظام بھی ہونا چاہئے۔ سیڑھیوں کی ریلنگ پر مصنوعی بیل بھی لگائی جا سکتی ہے * خوبصورت قدرتی مناظر  پر مشتمل  وال پیپرز بھی چسپاں کیے جا سکتے ہیں * Wall Clock سے بھی Main Entrance اور سیڑھیوں کے راستے کو  Decorate کیا جاسکتا ہے جبکہ وہاں وقت دیکھنے کی ضرورت بھی پڑتی ہو* گھر میں داخل ہوتے ہی پھیلی ہوئی چپلیں اور جوتے طبیعت پر گِراں گزرتے ہیں لہٰذا چپلوں اور جوتوں کے لئے ایک الگ ریک کا انتظام کریں * اس بات کو ہمیشہ مدِّنظر رکھیں کہ اللہ پاک ہے اور صفائی ستھرائی کو پسند فرماتا ہے لہٰذا ڈیکوریشن نہ بھی کریں تو  کم اَز کم صفائی ستھرائی کا خیال لازمی رکھیں۔

نوٹ : ضروری نہیں ہے کہ بہت مہنگی چیزیں ہی استعمال کی جائیں ضرورت صرف اس سلیقے کی ہے کہ جس کے ذریعے ہم   اپنے پیارے گھر کو ضرورتاً Decorate کر سکتے ہیں۔

اللہ پاک ہمارے ظاہر و باطن دونوں کو ستھرا اور پاکیزہ بنائے۔ اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم

Share

Articles

Comments


Security Code