ڈسٹ بن کیوں ناراض ہوا؟ / کیا آپ جانتے ہیں؟ / نماز کی حاضری / میں بڑا ہو کر کیابنو ں گا؟

امی جلدی کیجئے! میری وین(Van)آنے والی ہے ، حماد اسکول بیگ پہنے کچن میں اسٹول پر بیٹھا کیلا کھا رہا تھا۔

بس ہو گیا تیار ، امی نے لنچ باکس حماد کو پکڑاتے ہوئےکہا۔  اتنے میں باہر وین کا ہارن سنائی دیا  تو حماد نے ہاتھ میں پکڑا کیلا جلدی سے ختم کرتے ہوئے چھلکا کچن سے باہر کی طرف اچھال دیا۔

کتنی بار کہا ہے کہ پھلوں کے چھلکے وغیرہ  کچرے دان (Dustbin)میں پھینکا کرو ، امی نے اسے ڈانتے ہوئے کہا لیکن حماد جا چکا تھا۔ اسکول سے واپس آنے کے بعد وہ کھانا کھا کر سو گیا۔

حماد گندہ بچہ ہے! حماد گندہ بچہ ہے! حماد نے اِدھر اُدھر نظر گھمائی لیکن کمرے میں اسےکوئی نظر نہیں آیا۔

ارے نیچے تو دیکھو! کسی نےہنستے ہوئے کہا ۔

اب حماد کو لگا جیسے آواز کچرے دان سے آ رہی ہو ، کیاتم مجھے پکاررہے ہو؟ حماد نے ڈسٹ بن کی طرف دیکھتے ہوئے کہا۔

ہاں ہاں !میں نے ہی تمہیں گندہ بچہ کہا ہے ، ڈسٹ بن نے کہا۔

حماد جلدی سے بولا : میں گندہ  نہیں اچھا بچہ ہوں ، دیکھو! میں روزانہ نہاتا ہوں اور میرے کپڑے بھی صاف ہیں۔

صرف صاف کپڑے پہننے اور نہانے سے کوئی اچھا بچہ نہیں بن جاتا ، ڈسٹ بن نے غصے سے کہا ، تم نے کبھی میرا خیال نہیں

رکھا ، مجھے بھوک لگتی ہے لیکن تم کھانا بھی نہیں دیتے۔

لیکن!امی جان تو کہتی ہیں کھانا پھینکنا نہیں چاہئےیہ بُری  بات ہوتی ہے ، حماد نے آگے سے جواب دیا۔

نادان لڑکے! میں تمہارا کھانا نہیں مانگ رہا ، میں اپنے کھانے کی بات کر رہا ہوں ، ڈسٹ بن نے ہنستے ہوئے کہا ، تم پھل کھاتے ہو لیکن اس کے چھلکے اِدھر اُدھر پھینک دیتے ہو ، بسکٹ کے خالی ریپر وغیرہ بھی  باہر ہی پھینک دیتے ہو۔ ایسے بچے اچھے نہیں بلکہ ہمارےدشمن ہوتے ہیں۔

حمادنےاِس بات پرشرمندگی سے سرجھکا لیا اور کہنے لگا : سوری ڈسٹ بن! مجھے بتاؤ میں اب ایسا کیا کروں جس سے تمہاری ناراضی ختم ہو جائے؟

اگر تم روز میرا خیال رکھو ، چھلکے ، خالی ریپر اور جوس کے خالی ڈبے وغیرہ اِدھر اُدھر پھینکنے کے بجائے ڈسٹ بِن میں ڈال دیا کرو گے تو گندگی بھی نہیں پھیلے گی اور میری بھوک بھی مٹ جائے گی ، ڈسٹ بن نےکہا ، گھروں ، شاپنگ مالز ، پارکس اور گلی محلوں میں میرے بھائی ہی ہوتے ہیں اپنے دوستوں سے بھی ان کا خیال رکھنے کا کہنا ، اگر سارے بچے اچھے بن گئے تو کوئی ڈسٹ بن بھی بھوکی نہیں رہے گی۔

حماد اٹھ جاؤ عصر کی اذان ہو چکی ہے ، ڈسٹ بن کی بات ختم ہوئی ہی تھی کہ امی جان کی آواز پر حماد کی آنکھ کھل گئی۔

وضو کرتے ہوئے حماد سوچ رہا تھا کہ ڈسٹ بن کی شکایت والا یہ خواب میں اپنے دوستوں کو بھی سناؤں گا تاکہ وہ بھی کچرا

ڈسٹ بن میں پھینک کر اس کی بھوک مٹائیں۔

ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ

ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ*شعبہ فیضانِ قرآن ، المدینۃ العلمیہ ، کراچی

Share

ڈسٹ بن کیوں ناراض ہوا؟ / کیا آپ جانتے ہیں؟ / نماز کی حاضری / میں بڑا ہو کر کیابنو ں گا؟

سوال : حضرت سیّدُنا امام اعظم ابو حنیفہ رحمۃ اللہ علیہ نے کم سے کم کتنی رکعات میں ایک قراٰن ختم فرمایا؟

جواب : ایک رکعت میں۔ (مناقب ابی حنیفہ للکردری ، ص242)

سوال : قراٰنِ پاک کی وہ کون سی آیت ہے جس میں ساگ ، ککڑی ، گندم ، مسور اور پیاز کا ذِکْر ہے؟

جواب : پارہ ایک ، سورۂ بقرہ ، آیت نمبر 61 میں : فَادْعُ لَنَا رَبَّكَ یُخْرِ جْ لَنَا مِمَّا تُنْۢبِتُ الْاَرْضُ مِنْۢ بَقْلِهَا وَ قِثَّآىٕهَا وَ فُوْمِهَا وَ عَدَسِهَا وَ بَصَلِهَاؕ- تَرجَمۂ کنزُ الایمان : تو آپ اپنے رب سے دعا کیجئے کہ زمین کی اُگائی ہوئی چیزیں ہمارے لیے نکالے کچھ ساگ اور ککڑی اور گیہوں اور مسور اور پیاز۔ (پ1 ، البقرۃ : 61) (اس آیت کی مزید وضاحت کے لئے یہاں کلک کریں)

سوال : ہاشمی کن کو کہا جاتا ہے؟

جواب : امیرُالمؤمنین حضرت علی ، حضرت جعفر ، حضرت

عقیل ، حضرت عبّاس رضی اللہ عنہم اور حارث بن عبدُالمطّلب کی اولاد کو۔ (درمختار ، 3 / 350)

سوال : کعبہ شریف کے اندر کتنے بزرگوں نے قراٰنِ پاک ختم فرمایا؟

جواب : چاربُزُرگوں نے۔ امیرُالمؤمنین حضرت سیّدُنا عثمان بن عفّان ، حضرت سیّدُنا تمیم داری ، حضرت سیّدُنا سعید بن جُبیر اور حضرت سیّدُنا امامِ اعظم ابو حنیفہ رضی اللہ عنہم۔ (مناقب ابی حنیفہ للکردری ، ص237)

سوال : شعبان کی وہ کون سی رات ہے جس میں کوئی دُعا ردّ نہیں ہوتی؟(یعنی ہر دعا قبول ہوتی ہے)

جواب : 15شعبان کی رات۔ (جامع صغیر ، ص241 ، حدیث : 3952)

ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ

ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ*ماہنامہ  فیضانِ مدینہ ، کراچی

Share

ڈسٹ بن کیوں ناراض ہوا؟ / کیا آپ جانتے ہیں؟ / نماز کی حاضری / میں بڑا ہو کر کیابنو ں گا؟

Aim : I want to be a programmer. I will help Islam by making  such apps to reform myself and the people of the entire world.)Daniya Syeda d / o Mugheesudin Ahmed Syed).

مقصد : میں ایک پروگرامر بننا چاہتی ہوں ، اور میں ایسی ایپلیکیشنز بنا کر دینِ اسلام کی خدمت   کرنا چاہتی ہوں جن کے ذریعےمیری اپنی اور ساری دنیا کے لوگوں کی اصلاح ہو سکے۔

( دانیہ سیدہ بنت مغیث الدین احمد سید ، آسٹریلیا)

منتخب پیغامات:(1)میں بڑا ہوکر قاری و مفتی بنوں گا ، دین کی خوب خدمت کروں گا ، دین اور دنیا کی بھلائی حاصل کروں گا اِنْ شَآءَ اللہ۔ (محمد حنظلہ رضاعطاری ، دارُالمدینہ کلاس ون راولپنڈی)(2)میں بڑا ہوکر دعوتِ اسلامی کا مبلّغ بننا چاہتا ہوں ، اللہ پاک میری اس خواہش کو پورا فرمائے ، اٰمین۔ ( محمد ممتاز رضا بن عامرامتیاز ، کلر سیداں )  (3)مجھے دعوت ِاسلامی سے بہت پیار ہے ، میں  بڑی ہو کر عالمہ اور دعوتِ اسلامی کی مبلّغہ بننا چاہتی ہوں۔ میں اپنے والدین کے لئے صدقۂ جاریہ بننا چاہتی ہوں۔ (آمنہ بنتِ غلام یاسین عمر 9سال ، کراچی) (4)میں بڑا ہوکر علمِ دین سیکھ کر مبلغِ دعوتِ اسلامی بن کر دنیا بھر میں اسلام کی تبلیغ اور اِشاعت کے لئے سفر کروں گا۔ (محمد عثمان رضا قادری عطاری بن غلام ربانی عطاری عمر8 سال ، کشمیر) (5)میرا نام مریم ہے ، میری عمر پانچ سال ہے ، میں بڑی ہو کر حافظۂ قراٰن بننا چاہتی ہوں۔ اِنْ شَآءَ اللہ (مریم ، سکهر)

 

Share

Articles

Comments


Security Code