مدنی مذاکرے کے سوال جواب

Image
سوال : قبر پر پانی ڈالنے کی شرعی حیثیت کیا ہے؟
Image
حضرت سیّدتُنا عائشہ صدّیقہ رضی اللہ عنہا فرماتی ہیں کہ ایک چاندنی رات میں رسولُ اللہ صلَّی اللہ علیہ واٰ لہٖ وسلَّم سے میں نے عرض کی: یارسولَ اللہ صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم! کیا آسمان کے تاروں کے برابر بھی کسی کی نیکیاں ہوں گی؟
Image
سب کا حساب نہیں ہوگا، اللہ پاک جسے چاہے گا  بےحساب بخشے گا، جیساکہ بہارِ شریعت جلد1صفحہ 143پر ہے: نبی صلَّی اللہ تعالٰی علیہ وسلَّم نے فرمایا:میری اُمّت سے ستّر ہزار (70000) بے حساب جنّت میں
Image
جواب:صبرکریں اور (مشورہ ہے کہ) اس پر ملنے والے اَجر کو غوث پاک رحمۃ اللہ علیہ  کو ایصال کردیں، نیز اللہ پاک نے آپ کو وُسعت دی ہے تو (بہتر ہے کہ)نیّت پوری کرنے کے لئے ایک اور دُنبہ لے کر گیارھویں شریف کرلیں۔
Image
جواب:اس برف سے وضو اسی صورت میں ہوگا جب یہ پِگھل کر پانی بن جائے کیونکہ وضو میں جن اعضاء کا دھونا فرض ہے ان اعضاء کے ہر ہر حصّے پر پانی کے کم اَز کم دو قطرے بہ جانا ضروری ہے۔
Image
جواب:جی ہاں! باقی رہیں گی بلکہ ایصالِ ثواب کرنے کی برکت سے بڑھ جائیں گی۔ ایصالِ ثواب کا یہ بہت بڑا فائدہ ہے کہ جتنوں کو ایصالِ ثواب کیا جائے اُن سب کو پہنچتا ہے اور ایصالِ ثواب 
Image
نماز میں ہنسا تو نماز ٹوٹ جائے گی مگر وضو پھر بھی نہیں ٹوٹے گا کیونکہ بالغ رکوع و سجود والی نماز میں اتنی آواز سے ہنسا کہ خود کے کانوں نے ہنسی کی آواز سُن لی تو نماز ٹوٹے گی وضو نہیں 
Image
نماز کی شرائط میں سے ایک شرط نیّت بھی ہے اور دل میں نماز کی نیّت کا ہونا ضَروری ہے، اگر دل میں نیّت نہ ہو تو زبان سے کہنے کا کوئی فائدہ نہیں ہے۔ البتہ دل میں نیّت ہوتے ہوئے زبان سے کہہ لینا مستحب ہے۔