بطخ کھانا کیسا

بطخ کھانا کیسا؟

سوال:کیا فرماتے ہیں علمائےدین و مفتیانِ شرْع متین اس مسئلہ کے بارے میں کہ بطخ کھانا حلال ہے یا حرام؟

بِسْمِ اللّٰہِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْمِ

اَلْجَوَابُ بِعَوْنِ الْمَلِکِ الْوَھَّابِ اَللّٰھُمَّ ھِدَایَۃَ الْحَقِّ وَالصَّوَابِ

قوانینِ شرعیہ کے مطابق جو پرندہ اپنے پنجوں سے شکار کرتا ہو،حرام ہے اور جو پرندہ پنجوں سے شکار نہ کرتا ہو، حلال ہے۔ بطخ پنجوں سے شکار کرنے والے پرندوں میں سے نہیں ہے لہٰذا بلاشبہ حلال ہے،اسے ذبحِ شرعی کے بعد کھایا جاسکتا ہے۔

وَاللہُ اَعْلَمُ عَزَّوَجَلَّ وَ رَسُوْلُہٗ اَعْلَم صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم

محمد رافِع نام رکھنا کیسا؟

سوال:کیا فرماتے ہیں علمائے دین و مفتیانِ شرع متین اس مسئلہ کے بارے میں کہ کیا کسی بچّے کا نام محمد رافع رکھ سکتے ہیں یا نہیں؟

بِسْمِ اللّٰہِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْمِ

اَلْجَوَابُ بِعَوْنِ الْمَلِکِ الْوَھَّابِ اَللّٰھُمَّ ھِدَایَۃَ الْحَقِّ وَالصَّوَابِ

محمد رافِع نام رکھنا،شرعاً جائز ہے کہ رافع اگرچہ اللہ عَزَّوَجَلَّ کے صفاتی ناموں میں سے ایک نام ہے مگر یہ اسمائے مشترکہ یعنی ان ناموں میں سے ہے کہ جن کا مخلوق پر بھی اطلاق جائز ہے۔صحابۂ کرام رضوان اللہ تعالٰی علیہم اَجْمعین میں سے متعدد صحابۂ کرام کا اسمِ مبارک رافع تھا مثلاً رافع بن خدیج، رافع بن عمرو،وغیر ذلک لہٰذا محمد رافع نام رکھ سکتے ہیں البتہ مشورہ یہ ہے کہ اصل نام صرف محمد رکھا جائے کہ احادیثِ طیبہ میں محمد و احمد نام کے متعدد فضائل و برکات بیان ہوئے اور یہ فضائل تنہا اِن ہی اسمائے مبارکہ یعنی محمد و احمد نام رکھنے کے ہیں لہٰذا نام صرف محمد رکھیں اور پھر پکارنے کے لئے کوئی دوسرا نام مثلاً رافع وغیرہ رکھ لیں۔

وَاللہُ اَعْلَمُ عَزَّوَجَلَّ وَ رَسُوْلُہٗ اَعْلَم صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم

عورت کو نامحرم کا خون چڑھانا کیسا؟

سوال:کیا فرماتے ہیں علمائے دین و مفتیانِ شرع متین اس مسئلہ کے بارے میں کہ اگر کسی اسلامی بہن کو خون کی ضرورت ہو تو کیا نامحرم مرد کا خون انہیں چڑھایا جاسکتا ہے؟

بِسْمِ اللّٰہِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْمِ

اَلْجَوَابُ بِعَوْنِ الْمَلِکِ الْوَھَّابِ اَللّٰھُمَّ ھِدَایَۃَ الْحَقِّ وَالصَّوَابِ

شرعی نقطۂ نظر سے خون،کسی قریبی محرم رشتہ دار کا ہو یا غیرمحرم کا،نجس و ناپاک ہے،اس کا جسم میں چڑھانا ،عام حالت میں ناجائز و حرام ہے ۔ ہاں ضرورت و شرعی حاجت کا تحقق ہو تو اس صورت میں اب فقہائے کرام کی اکثریت نے خون چڑھانے کی اجازت دی ہے،لہٰذا جن صورتوں میں شرعاً خون چڑھانے کی اجازت ہے،ان صورتوں میں مسلم غیرمسلم، محرم یا غیر محرم، سب کا خون چڑھایا جا سکتا ہے۔جائز ہے ہاں غیرمسلم کے خون سے بچنا مناسب ہے، مسلمان کا خون میسّر ہو تو غیرمسلم کا خون نہ لیا جائے۔

وَاللہُ اَعْلَمُ عَزَّوَجَلَّ وَ رَسُوْلُہٗ اَعْلَم صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم

ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ

٭…دارالافتاء اہل سنت عالمی مدنی مرکز فیضان مدینہ کراچی

Share

بطخ کھانا کیسا

علمائےکرام اور دیگر شخصیات کے تأثرات

(1)مولانا سیّدعمادُ الدّین شاہ ترمذی (ایم فل M Phil اسکالر جی سی یونیورسٹی، فیصل آباد):”ماہنامہ فیضانِ مدینہ“ کا مضمون نئے تعلیمی سال کا آغاز پڑھنے کا موقع ملا، مَاشَآءَ اللّٰہ!طالبِ علم کی پوری زندگی پر انتہائی مختصر جگہ میں جامِع الفاظ کے ساتھ کی گئی بحث واقعی قابلِ تعریف ہے، اللہ پاک نظرِبَد سے بچائے۔ اِنْ شَآءَ اللہ اس طرح کے مضامین سے طَلَبہ کا ضَرور فائدہ ہوگا۔

(2)مولانا محمد اویس رضا رضوی (خطیب جامع مسجد اشرفیہ، دستگیر ٹاؤن گوجرانوالہ):اس پُرفِتَن دور میں جہاں دیگر مَحاذوں پر دعوتِ اسلامی دین و مسلک کا کام کر رہی ہے وہیں ”ماہنامہ فیضانِ مدینہ“ کا اِجْرا بھی نہایت مستحسن قدَم ہے۔ اِعتقادی معلومات کے ساتھ ساتھ دیگر اصلاحی اور دلچسپ معلومات سے بھر پور مضامین پڑھنے کو ملتے ہیں۔ اللہ کریم مزید ترقّیاں عطا فرمائے۔اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہ وسلَّم

اسلامی بھائیوں کے تأثرات

(3)مَاشَآءَ اللّٰہ! ”ماہنامہ فیضانِ مدینہ“ میں وہ باتیں بیان کی جاتی ہیں جو بہت مفید اور کارآمد ہوتی ہیں۔ اللہ پاک ”ماہنامہ فیضانِ مدینہ“ کو اور دعوتِ اسلامی کو خوب خوب ترقّی عطا فرمائے۔(محمدانور رضا، ساؤتھ کوریا) (4)میرے خیال میں ”ماہنامہ فیضانِ مدینہ“اُردو زبان کا بہترین رِسالہ ہے۔ اس ماہنامے کے تمام مضامین پیارے اور قابلِ تعریف ہیں۔ اللہ پاک دعوتِ اسلامی اور اس ماہنامے کو مزید ترقیاں عطافرمائے۔(محمد حبیب، حضرو، اٹک) (5)”ماہنامہ فیضانِ مدینہ“دینِ متین کی خدمت اور اشاعت کا بہترین کا ذریعہ ہے۔اللہ پاک مجلس ماہنامہ کی خدمات کو قبول فرمائے۔اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم(محمد رمضان عطاری، گلشن فرید لیاقت پور)

بچوں کے تأثرات

(6)امّی جن کاموں سے منع کرتیں میں اکثر ضِد کیا کرتی تھی۔ جب میں نے جانوروں کی کہانی میمنے کی خواہش والا مضمون پڑھا ذِہْن بناکہ آئندہ ہر بات پر ضد نہیں کروں گی۔(فاطمہ بنتِ اللہ بخش، حب چوکی بلوچستان) (7)میں ہر ماہ سلسلہ کیا آپ جانتے ہیں؟ کے سوال جواب پڑھ کر یاد کر لیتا ہوں جس کی وجہ سے بہت سی ایسی باتیں مجھے معلوم ہوتی ہیں جو مجھ سے بڑے بچّوں کو بھی پتا نہیں ہوتیں۔(حنظلہ بن نصیر، کورنگی کراچی)

اسلامی بہنوں کے تأثرات

(8)”ماہنامہ فیضانِ مدینہ“ ایک دلچسپ اور معلوماتی رسالہ ہے جس کے تمام سلسلے اچّھے ہیں مگر ”مدنی سفر نامہ“، ”پھلوں اور سبزیوں کے فوائد“ مضمون زبردست ہوتے ہیں۔(بنتِ یونس عطّاریہ، وہاڑی) (9)”ماہنامہ فیضانِ مدینہ“ کی تو کیا ہی بات ہے۔ اس ماہنامے میں جُملہ مضامین کو موتیوں کی لڑی کی طرح اَحسن و خوبصورت انداز میں پرویا جاتا ہے۔(بنتِ تحسین، کراچی) (10)علمِ دین حاصل کرنے کے ذرائع میں سے ایک بہترین ذریعہ ”ماہنامہ فیضانِ مدینہ“ بھی ہے، جس میں دیگر مضامین کے ساتھ ساتھ اس ماہ کے عُنوانات کا لحاظ بھی رکھا جاتا ہے۔(بنتِ محمد ارشد، گجرات)

Share

Articles

Comments


Security Code