امّی جان کی پریشانی دور کردی

حضرت امام شافعی رحمۃ اللہ علیہ کی والدہ ایک نیک اور عبادت گزار خاتون تھیں، لوگ اپنی امانتیں آپ کے پاس رکھواتے تھے۔

ایک روز دو شخص آئے اور ایک صَندوق (Box) امانت  کے طور پر رکھوا کر چلے گئے۔ چند دن بعد ان دونوں میں سے ایک شخص نے آکر صندوق مانگا تو امام شافعی رحمۃ اللہ علیہ کی والدہ نے دے دیا۔

تھوڑے دن بعد دوسرا شخص آیا اور اس نے بھی صندوق مانگا۔ امام شافعی کی والدہ نے بتایا کہ تمہارا ساتھی آکر صندوق لے گیا ہے۔اس نے کہا: کیا ہم نے آپ سے یہ نہ کہا تھا کہ جب تک ہم دونوں نہ آئیں صندوق مت دیجئے گا۔ یہ سُن کر امام شافعی کی والدہ پریشان ہوگئیں۔

اتنے میں امام شافعی رحمۃ اللہ علیہ مدرسے سے واپس گھر پہنچ گئے، اس وقت آپ کی عمر 6 سال تھی۔ آپ نے والدہ کو پریشان دیکھ کر اُس کی وجہ پوچھی توامّی جان نے پریشانی کا سبب بتا دیا، جسے سُن کر آپ نےکہا: پریشانی کی کوئی بات نہیں، اس شخص کو میں جواب دیتا ہوں۔

آپ نے اس شخص سے کہا: اگر تم صَندوق لینا چاہتے ہو تو اپنے ساتھی کو لے کر آؤ تاکہ صندوق تم دونوں کے حوالے کیا جائے۔ یہ جواب سُن کر وہ شخص بہت حیران ہوا اور  لاجواب(Speechless) ہو  کر واپس چلا گیا۔ (سچی حکایات،ج2،ص406بحوالہ تذکرۃ الاولیاء،ص192)

پیارے بچّو! حضرت امام شافعی رحمۃ اللہ علیہ کی اس حکایت سے جہاں آپ کی ذہانت کا پتا چلتا ہے وہیں یہ بھی سیکھنے کو ملا کہ اگر والدین کسی بات پر پریشان ہوں تو ان کی پریشانی بڑھانے کے بجائے اُس کو حل(Solve) کرنے میں ان کا ساتھ دینا چاہئے۔ اِنْ شَآءَ اللہ آپ کے والدین آپ سے خوش ہوں گے اور ان کے خوش ہونے سے اللہ پاک بھی آپ سے   خوش ہوگا۔

اس واقعے سے دوسرا سبق یہ سیکھنے کو ملا کہ جب کوئی مشکل پیش آئے تو ہمّت نہیں ہارنی چاہئے۔ حوصلہ (Courage) سے کام لیتے ہوئے مشکل کا سامنا  کرنا چاہئے۔ اللہ پاک کے کرم سے بڑی سے بڑی مصیبتیں بھی تھوڑی سی دیر میں دور ہوسکتی ہیں۔

اللہ کریم حضرت امام شافعی رحمۃ اللہ علیہ کے صدقے ہمیں اپنے والدین کا فرمانبردار اور ان کی پریشانیاں دور کرنے والا بنائے۔

اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم

Share

امّی جان کی پریشانی دور کردی

الفاظ تلاش کیجئے

پیارے بچّو!اللہ پاک نے انسانوں کی ہدایت اور راہنمائی کے لئے جن پاک بندوں کو اپنے احکام پہنچانے کیلئے بھیجا ان کو ”نبی“ کہتے ہیں۔( کتاب العقائد، ص 15)

خانوں میں لکھے ہوئےحُروف میں اللہ پاک کے 6 انبیائے کرام علیہمُ السَّلامکےنام چُھپے ہوئے ہیں،آپ نے حُروف ملا کر نیچے لکھے ہوئے 6 نام تلاش کرنے ہیں، آپ ان ناموں کو اوپر سے نیچے، دائیں سے بائیں تلاش کر سکتے ہیں،جیسے ٹیبل میں حضرت آدم علیہ السَّلام کے نام کو واضح کیا گیا ہے:

ش

ع

ی

و

س

ع

ش

د

ق

ع

ی

ش

ا

ھ

م

ح

م

د

ح

م

ع

ث

ڈ

ر

آ

د

م

آ

ح

ی

ص

م

ٹ

ک

ی

ے

ا

خ

ب

ر

و

ل

ن

و

م

ی

د

ع

ی

س

ی

ث

ش

ف

ن

و

ح

س

ی

د

م

ع

ہ

(1)محمد صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم (2)نوح علیہ السَّلام (3)یُوشع علیہ السَّلام(4) موسیٰ علیہ السَّلام (5)عیسیٰ علیہ السَّلام  (6)شعیب علیہ السَّلام۔

Share

امّی جان کی پریشانی دور کردی

اَلسَّلَامُ عَلَیْکُمْ وَرَحْمَۃُ اللّٰہِ وَبَرَکَاتُہٗ! میں بڑا ہو کر عالمِ دین بنوں گا اِنْ شَآءَ اللہ اور دین ودنیا کی بھلائی حاصل کروں گا۔ ماں باپ کا فرماں بردار بنوں گا ان کا نام روشن کروں گا۔ میں نے  آ بِ  زم زم پی کر بھی دعا کی ہے کہ اللہ مجھے باعمل عالمِ دین بنائے اور میرے بابا جان نے بھی میرے لئے مکّہ مدینہ میں دعا کی ہے کہ میں عالم اور حافظِ قراٰن بنوں۔مجھے اپنی اور ساری دنیا کے لوگوں کی اصلاح کی کوشش کرنی ہے۔ اِنْ شَآءَ اللہ

شیطان کے خلاف جنگ جاری رہے گی۔اِنْ شَآءَ اللہ

حارث عطّاری  بن عبدُالرّحمٰن عطّاری مدنی ( کلاس دوم)

منتخب پیغامات

(1) میں بڑا ہوکر مفتی بننا چاہتا ہوں ۔اِنْ شَآءَ اللہ (علی حسن بن محمدبوٹا، منڈی واربرٹن، ضلع ننکانہ)(2)میرا نام اُمیمہ ہے اور میری عمر دس سال ہے، میں بڑی ہوکرعالمہ بننا چاہتی ہوں۔(اُمیمہ عطاریہ بنت اویس جیلانی، حاصل پور،ضلع بہاولپور) (3) میرا ارادہ ہے کہ میں بڑا ہوکرمفتی بنوں گا۔اِنْ شَآءَ اللہ (ہارب بن مقبول، عمر 8سال،کراچی)(4)میری نیت ہے کہ میں بڑا ہوکرمفتی بنوں گا۔اِنْ شَآءَ اللہ (وجیھ بن آصف خان، کراچی)(5) بڑا ہوکر میں امیر اہل سنت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ جیسا بننا چاہتا ہوں۔(حامد رضا بن عبد الخالق، عمر 6سال، گلستان جوہرکراچی)(6)میں نے  ارادہ کیا ہے کہ میں بڑی ہوکر عالمہ بنوں گی۔(عائشہ بنت عبد الخالق، عمر 8سال، گلستان جوہر کراچی)(7)اِنْ شَآءَ اللہ میں عالم دین بنوں گا۔ (مکی رضا بن ندیم عطاری، لاہور) (8) میں بڑا ہوکرامام بنوں گا ۔(محمد ریحان ،بلدیہ ٹاؤن کراچی)

پیارے بچّو! آپ بھی بتائیے کہ آپ بڑے ہوکر کیا بنیں گے؟ واٹس ایپ: 923012619734+ mahnama@dawateislami.net

Share

Articles

Comments


Security Code