تاریخ کے اوراق

Image
صحابیِ رسول حضرتِ سیِّدُناسعد بن ابی وقاص رضی اللہ تعالٰی عنہ کے پوتے حضرت سیِّدُنااسماعیل بن محمد رحمۃ اللہ تعالٰی علیہ فرماتے ہیں: ہمارے والد  غزواتِ رسول کا تذکرہ کرتے ہوئے فرماتے: 
Image
حدیثِ پاک میں ہے کہ جب نبیِّ کریم، رءوفٌ رَّحیم صلَّی اللہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّم خطبہ ارشاد فرماتے توکھڑے ہوجاتےپھر قیام  کو طویل کرتے توکھڑے رہنا دُشوار ہوتا چنانچہ کھجور کا ایک تنا لا کر 
Image
حضورنبیِّ کریم، رءوفُ رَّحیم صلَّی اللہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّم جب مکّہ معظّمہ سے ہجر ت فرما کر مدینۂ منورہ تشریف لائے تو قبیلہ بنی عَمْرو بن عَوف کے پاس دس دن سے کچھ زائد قیام فرمایا ،  وہاں مسجد قُبا کی بنیاد رکھی 
Image
بَیتُ المُقَدَّس: بَیتُ المُقَدَّس مسلمانوں کا قِبلہ اوّل ہے ، یہ فلسطین کے شہر القُدْس میں واقع ہے، بعض نے  شہر کو بھی بَیتُ المُقَدَّس کہا ہے۔
Image
غارِثور میں جلوہ نُمائی:راستے میں سیّدنا صدیق ِاکبر رضیَ اللہُ تعالٰی عنہ کبھی حضور صلَّی اللہُ تعالٰی علیہِ واٰلہٖ وسَلَّم کے دائیں بائیں اور کبھی آگے پیچھے چلتے کہ کہیں کوئی گھات لگانے والا نقصان نہ پہنچادے۔
Image
”خیبر“ ایک بڑے شہر کا نام ہے جو مدینۂ منوّرہ زاد ہَااللہ شرفاً وَّ تعظیماً سے (شمال مغرب میں) تقریباً169کلومیٹر کی دوری پر واقع ہے۔ یہ جگہ کھجور کے درختوں اور ہرے بھرے کھیتوں سے بھرپور تھی،
Image
حسینی قافلے کے شُرَکا امامِ عالی مقام رضی اللہ تعالٰی عنہ سے بے پناہ محبت کرتے اور اپنا تَن مَن دَھن آپ پر لٹانے کا بے مثال جذبہ رکھتے تھے اور بڑے بہادر وشجاع تھے۔
Image
تمام مسجدوں  میں افضل ”مسجد حرام“ اورساری مساجد کا قبلہ  ”خانۂ کعبہ“ ہے(تفسیر نسفی،ص429،پ10،التوبۃ،تحت الآیۃ:18) اور اللہ کی عبادت کے لیے روئے زمین پر سب سے پہلا گھریہی مُقرر ہوا۔(پ4،اٰل عمران:96)
Image
ہجرتِ مدینہ کےچھٹےسال رسول اللہ صلَّی اللہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّم نے خواب دیکھا کہ آپ صحابۂ کرام علیہمُ الرِّضوان کے ساتھ امن و عافِیَّت سے مکّۂ مکرّمہ  میں داخل ہوئے اور عمرہ  ادا فرمایا،