گناہوں کی نحوست بڑھ رہی ہے دم بدم مولیٰ /آپ کی نسبت اے نانائے حسین/کربلا کے جانثاروں کو سلام

حمد /مناجات

گناہوں کی نحوست بڑھ رہی ہے دم بدم مولیٰ

گناہوں کی نحوست بڑھ رہی ہے دم بَدم مولیٰ

میں توبہ پر نہیں رہ پارہا ثابت قدم مولیٰ

گنہ کرتے ہوئے گَر مرگیا تو کیا کروں گا میں

بنے گا ہائے میرا کیاکرم فرما کرم مولیٰ

سنہری جالیوں کے سامنے اے کاش!ایسا ہو

نکل جائے رسولِ پاک کے جلووں میں دم مولیٰ

بنا مجھ کو محمد مصطفےٰ کا عاشقِ صادق

تُو دیدے سوزِ سینہ کر عنایت چشمِ نم مولیٰ

بچیں بے کار باتوں سے پڑھیں اے کاش کثرت سے

تِرے محبوب پر ہر دم دُرودِ پاک ہم  مولیٰ

رسولِ پاک کی دکھیاری امت پر عنایت کر

مریضوں،غمزدوں،آفت نصیبوں پر کرم مولیٰ

پئے شاہِ مدینہ اب مُشرّف حج سے فرمادے

چلے عطّار پھر روتا ہوا سُوئے حرم مولیٰ

(وسائلِ بخشش،ص97)

از شیخِ طریقت امیرِ اہلِ سنت  دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ


 

 

Share

گناہوں کی نحوست بڑھ رہی ہے دم بدم مولیٰ /آپ کی نسبت اے نانائے حسین/کربلا کے جانثاروں کو سلام

نعت/استغاثہ

آپ کی نسبت اے نانائے حُسین

آپ کی نسبت اے نانائے حُسین

ہے بڑی دولت اے نانائے  حُسین

مرکے بھی نکلے نہ میرے قلب سے

آپ کی الفت اے نانائے  حُسین

واسِطہ غوث و رضا کا دُور ہو

ہر بُری خصلت اے نانائے  حُسین

اب مدینے میں بُلا کر دُور کر

یہ غمِ فُرقت اے نانائے  حُسین

سبز گُنبد کی بہاریں دیکھ لوں

آئے وہ ساعت اے نانائے  حُسین

از طفیلِ غوثِ اعظم دور ہو

قبر کی وحشت اے نانائے  حُسین

ہر ولی کا واسِطہ عطّار پر

کیجئے رحمت اے نانائے  حُسین

(وسائلِ بخشش،ص257)

از شیخِ طریقت امیرِ اہلِ سنت  دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ

 

 

Share

گناہوں کی نحوست بڑھ رہی ہے دم بدم مولیٰ /آپ کی نسبت اے نانائے حسین/کربلا کے جانثاروں کو سلام

کربلا کے جانثاروں کو سلام

کربلا کے جاں نثاروں کو سلام

فاطمہ زہرا کے پیاروں کو سلام

یا حُسین ابنِ علی مشکل کُشا

آپ کے سب جاں نثاروں کو سلام

اکبر و اصغر پہ جاں قربان ہو

میرے دل کے تاجداروں کو سلام

جس کسی نے کربلا میں جان دی

ان سبھی ایمانداروں کو سلام

رحمتیں ہوں ہر صحابی پر مُدام

اور خصوصاً چار یاروں کو سلام

یا خدا!اے کاش!جاکر پھر کروں

کربلا کے سب مزاروں کو سلام

جو حُسینی قافِلے میں تھے شریک

کہتا ہے عطّار ساروں کو سلام

(وسائلِ بخشش،ص605)

از شیخِ طریقت امیرِ اہلِ سنت  دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ

سلام

Share

Articles

Comments


Security Code