Book Name:Akhirat Ki Tyari Ka Andaz Kasay Hona Chahiya

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

اَلصَّلٰوۃُ وَ السَّلَامُ عَلَیْكَ یَا رَسُولَ اللہ                                                                    وَعَلٰی اٰلِكَ وَ اَصْحٰبِكَ یَا حَبِیْبَ اللہ

اَلصَّلٰوۃُ وَ السَّلَامُ عَلَیْكَ یَا نَبِیَّ اللہ                                                                                      وَعَلٰی اٰلِكَ وَ اَصْحٰبِكَ یَا نُوْرَ اللہ

نَـوَیْتُ سُنَّتَ الاعْتِکَاف   (ترجَمہ:میں نے سنّتِ اعتکاف کی نیّت کی)

      پیارے پیارےاسلامی بھائیو!جب کبھی داخلِ مسجدہوں،یادآنےپر اِعْتِکافکی نِیَّت کرلیا کریں کہ جب تک مسجد میں رہیں گے اِعْتِکاف کا ثَواب مِلتا رہےگا ۔یادرکھئے !مسجد میں کھانے،پینے، سونےیاسَحَری،اِفطاری کرنے،یہاں تک کہ آبِ زَم زَم یادَم کیاہواپانی پینےکی بھی شَرعاًاِجازت نہیں ،اَلبتَّہ اگر اِعْتِکاف کی نِیَّت ہوگی تویہ سب چیزیں ضِمْناًجائزہوجائیں گی۔ اِعْتِکافکی نِیَّت بھی صِرف کھانے،پینےیاسونےکےلئےنہیں ہونی چاہئےبلکہ اِس کامقصداللہکریم کی رِضاہو۔”فتاویٰ شامی“ میں ہے:اگرکوئی مسجدمیں کھانا،پینا،سوناچاہےتو اِعْتِکاف کی نِیَّت کرلے، کچھ دیرذِکْرُاللہ کرے،پھر جو چاہےکرے(یعنی اب چاہے تو کھا  پی یا       سو سکتا ہے)

دُرود ِ پاک کی فضیلت

اعلیٰ حضرت،اِمامِ اَہلسنّت،مولانا شاہ امام اَحمد رضا خان رَحْمَۃُ اللّٰہ ِ عَلَیْہ فتاوٰی رَضَوِیَّہ شریف جلد 23 صَفْحَہ 122پر نقل فرماتے ہیں:حَضْرتِ اَبُوالمَوَاہِب رَحْمَۃُ اللّٰہ ِ عَلَیْہ فرماتے تھے کہ میں نے خواب میں رسولُاللہ،مکی مدنی آقاصَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کو دیکھا،حُضُورِ اقدس صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے مجھ سے فرمایا کہ:قیامت کے دن تم ایک لاکھ بندوں کی شَفاعت کرو گے۔میں نےعرض کی: یارسولَاللہ صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم!میں کیسے اس قابل ہوا؟ ارشادفرمایا: اس لیے کہ تم مجھ پردُرود پڑھ کر اس کا ثواب مجھے