حمدونعت و منقبت

Image
ایسی قدرت نے تِری صورت سنواری یا رسول
Image
حج کے اسباب آقا بنا دو
Image
سر ہے خَم ہاتھ میرا اُٹھا ہے، یا خدا تجھ سے میری دُعا ہے/تم ہی ہو چین اور قرار دلِ بے قرار میں
Image
ٹھنڈی ٹھنڈی ہوا حَرَم کی ہے/وہ سرورِ کشورِ رسالت جو عرش  پر جلوہ گر ہوئے تھے
Image
کب گناہوں سے کَنارا میں کروں گا یارب/غیر ممکن ہے ثنائے مصطفےٰ
Image
عمل کا ہو جذبہ عطا یا الٰہی /سلطانِ جہاں محبوبِ خدا تری شان وشوکت کیا کہنا
Image
ہمارے دل سے زمانے کے غم مِٹا یارب/قمر کے دو کیے انگلی سے طاقت اس کو کہتے ہیں/واہ کیا مرتبہ اے غوث ہے بالا تیرا
Image
مُعاف فضل و کرم سے ہو ہر خطا یا رب/بِحَمْدِاللہ عَبْدُاللہ کا نورِ نظر آیا/منانا جشنِ میلادُ النّبی ہر گز نہ چھوڑیں گے
Image
حُبِّ دنیا سے تُو بچا یارب -عرشِ حق ہے مسندِ رفعت رسول اللہ کی- واہ کیا بات اعلیٰ حضرت کی