تفسیر قراٰنِ کریم

Image
اس آیت میں اٰلِ فرعون کے مؤمن کا ذکر ہوا ، اس کے متعلق مفسرین کا ایک قول یہ ہے کہ یہ مؤمن فرعون کا چچازاد بھائی تھااور حضرت موسیٰ علیہ السلام پرایمان لاچکا تھا
Image
اللہ تعالیٰ اس شخص پر رحم فرمائے جو رات میں اُٹھ کر نماز پڑھے اور اپنی بیوی کو بھی ( نماز کے لئے ) جگائے ، اگر وہ نہ اُٹھے تو اس کے منہ پر پانی کے چھینٹے مارے۔
Image
ولایت اللہ تعالیٰ کا خاص انعام ہے ، جو اپنی مشیت و حکمت سے اپنے خاص بندوں کو عطا فرماتا ہے ، چنانچہ اہلِ سُنَّت کا عقیدہ یہ ہے کہ ولایت وہبی ہے ، کسبی (محنت سے حاصل ہونے والی) نہیں۔
Image
نور کی اصطلاحی تعریف یہ ہے کہ نور وہ ہے جو خود ظاہر ہو اور دوسروں کو ظاہر کرے۔ پھر نور کی دو قسمیں ہیں : نورِ حسی اور نورِ معنوی۔نور ِحسی وہ جو آنکھوں سے دیکھا جاسکے
Image
نیک لوگوں سے محبت فرماتااور بدوں کو ناپسند کرتا ہے ، شکر ادا کرنے والوں کو صلہ بخشتا ہے اور صبر ، نیکی اور توکل کرنے سے محبت فرماتا ہے ، اپنے علم کے خزانے سے عطا فرماتا ہے
Image
اس آیت میں اللہ تعالیٰ نے مؤمنین کی شان بیان فرمائی ہے کہ اُن کا طریقہ ہر حکمِ خداوندی تسلیم کرنا اور اُس کے سامنے اپنا سر جھکا دینا ہے۔
Image
ان مشہور صفات میں سے اللہ تعالیٰ کی شانِ رحمت بھی ہے کہ ہمارا پاک پروردگار رحمٰن و رحیم یعنی نہایت مہربان ، بہت رحمت والا ہے ۔ یہ دونوں صفات مخلوق کی زبانوں پر اس قدر جاری ہیں
Image
آسمان والوں میں جبرائیل و میکائیل ، حاملینِ عرش ، مُقَرَّبین اور دیگر تمام فرشتے داخل ہیں اور زمین والوں میں انبیاءو اولیاء و صلحاء و جملہ مؤمنین و مؤمنات شامل ہیں
Image
سورۂ لقمان میں اللہ تعالیٰ نے اپنے برگزیدہ بندے حضرت لقمان رضی اللہُ عنہ کی اُن نصیحتوں کا بیان فرمایا ہے جو اُنہوں نے اپنے بیٹے کو سمجھاتے ہوئے بیان فرمائیں۔