اشعار کی تشریح

Image

اِن کے ہاتھ میں ہر کنجی ہے     

مالکِ کُل کہلاتے یہ ہیں

Image
محرمُ الحرام کے مقدس مہینے کی مناسبت سے صحابہ و اہلِ بیت
Image

ہر اِک کی آرزو ہے پہلے مجھ کو ذبْح فرمائیں

تماشا کررہے ہیں مرنے والے عید ِ قرباں میں
Image
فقط اتنا سبب ہے انعقادِ بزمِ محشر کا
کہ ان کی شانِ محبوبی دکھائی جانےوالی ہے
Image
الفاظ و معانی وَارِی:قُربان کی۔خَطَر:(مرادی معنیٰ) شَرَف۔ غُرَر:اَغَر کی جمع،سب سے روشن۔جو کرنی بشر کی ہے: جو انسان کے بس میں ہے۔فُروع:شاخیں۔اَصْلُ الْاُصُول: (مراد ی معنیٰ) سب سےاہم اوربنیادی فرض۔
Image
اشعار کی صورت میں اللہ کے حبیب  صلَّی اللہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّم کی مدح سرائی  نہایت عُمدہ عِبادت اورایک عظیم سعادت ہے لیکن اس کے تقاضوں کو نبھانا ہر کسی کے بس کی بات نہیں۔
Image
الفاظ و معانی مجرم:گناہ گار۔ جَآءَوْكُمْ:تمہارے پاس آئیں۔ رد:مُسْتَرَد(Reject)۔شرحہم گناہ گار اُمّتی اللہ کریم کے فرمانِ عالیشان ” جَآءَوْكُمْ “پر عمل کرتے ہوئے 
Image
وہ خدا نے ہے مرتبہ تجھ کو دیا ،نہ کسی کو مِلے نہ کسی کو مِلا
کہ کلامِ مجید نے کھائی شہا!تِرے شہر و کلام و بَقا کی قسم  (حدائقِ بخشش،ص80)

Image
فرماتے ہیں یہ دونوں ہیں سردارِ دو جہاں
اے مرتضیٰ! عَتِیْق و عُمَر کو خبر نہ ہو (حدائقِ بخشش،ص130)