Book Name:Fazail e Dua

دعاکے فضائل وآداب اور اس سے متعلقہ احکام پر مشتمل بے مثال تحقیقی شاہکار

أحسن الوعاء لآداب الدعاء

مصنّف :  رئیس المتکلمین مولانا نقی علی خان عَلَیْہِ رَحْمَۃُ الرَّحْمٰن

مع

ذیل المدعاء لأحسن الوعاء

شارح :  اعلیٰ حضرت، امام اہلسنت امام احمد رضا خان عَلَیْہِ رَحْمَۃُ الرَّحْمٰن

کی تسہیل وتخریج بنام

 

 

فضائلِ دعا

تسہیل و تخریج :  عبد المصطفیٰ رضا مدنی، محمد یونس علی عطاری مدنی

محمدکاشف سلیم عطاری مدنی، سیدعقیل احمدعطاری مدنی

 

 

پیشکش

مجلس :   المدینۃ العلمیۃ (دعوت ِاسلامی)

شعبۂ کتب ِاعلیٰ حضرت رَحْمَۃُ اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ

 

 

ناشر

مکتبۃ المدینہ، باب المدینہ کراچی

 

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہ الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

’’دعا مومن کا ہتھیار ہے ‘‘  کے سترہ حُروف کی نسبت سے اس کتاب کو پڑھنے کی ’’17 نیّتیں   ‘‘

 فرمانِ مصطفی صَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ :    نِیَّۃُ الْمُؤْمِنِ خَیْرٌ مِّنْ عَمَلِہٖ مسلمان کی نیّت اس کے عمل سے بہتر ہے ۔(’’المعجم الکبیر‘‘ للطبرانی، الحدیث : ۵۹۴۲، ج۶، ص۱۸۵، داراحیاء التراث العربی بیروت)

 دو مَدَنی پھول :

 {1}  بِغیر اچّھی نیّت کے کسی بھی عملِ خیر کا ثواب نہیں   ملتا۔

{2}جتنی اچّھی نیّتیں   زِیادہ، اُتنا ثواب بھی زِیادہ۔

             {1}رِضائے الٰہی عَزَّ وَجَلَّ کیلئے اس کتاب کا اوّل تا آخِر مطالَعہ کروں   گا {2} حتَّی الْوُسْعْ اِس کا باوُضُو اور {3}قِبلہ رُو مُطالَعَہ کروں   گا{4} قرآنی آیات اور {5}اَحادیثِ مبارَکہ کی زِیارت کروں   گا{6}جہاں   جہاں   ’’اللہ ‘‘ کا نام پاک آئے گا وہاں   عَزَّ وَجَلَّ   اور{7} جہاں   جہاں   ’’سرکار‘‘کا اِسْمِ مبارَک آئے گا وہاں   صَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ پڑھوں  گا {8} اس روایت ’’عِنْدَ ذِکْرِ الصَّالِحِیْنَ تَنَزَّلُ الرَّحْمَۃُ یعنی نیک لوگوں   کے ذکر کے وقت رحمت نازل ہوتی ہے ۔‘‘(حلیۃ الاولیائ، حدیث : ۱۰۷۵۰، ج۷، ص۳۳۵، دارالکتب العلمیۃ بیروت) پر عمل کرتے ہوئے اس کتاب میں   دیئے گئے بُزُرْگانِ دین کے واقِعات دوسروں   کو سنا کر ذکرِ صالحین کی بَرَکتیں   لُوٹوں   گا {9})اپنے ذاتی نسخے پر(  ’’یادداشت‘‘ والے صفحہ پر ضَروری نِکات لکھوں   گا{10})اپنے ذاتی نسخے پر( عِندَا لضَّرورت خاص خاص مقامات پر انڈر لائن کروں   گا

 {11} کتاب مکمل پڑھنے کے لیے بہ نیت ِحصولِ علم ِدین روزانہ چند صفحات پڑھ کر علم ِدین حاصل کرنے کے ثواب کا حقدار بنوں   گا{12}دوسروں   کویہ کتابپڑھنے کی ترغیب دلاؤں   گا {13} اس حدیثِ پاک ’’ تَھَادَوْا تَحَابُّوْا ‘‘ ایک دوسرے کو تحفہ دو آپس میں   محبت بڑھے گی )موطأ امام مالک ، ج۲، ص۴۰۷، رقم :  ۱۷۳۱، دارالمعرفۃ بیروت( پرعمل کی نیت سے )ایک یا  حسبِ توفیق تعداد میں  ( یہ کتاب خرید کر دوسروں   کو تحفۃً دوں   گا{14}جو مسئلہ سمجھ میں   نہیں   آئے گا اس کے لیے آیت ِکریمہ ’’ فَسْــٴَـلُوْۤا اَهْلَ الذِّكْرِ اِنْ كُنْتُمْ لَا تَعْلَمُوْنَۙ(۴۳) ‘‘ ترجمۂ کنز الایمان :  ’’ تو اے لوگو علم والوں   سے پوچھو اگر تمہیں   علم نہیں  ۔‘‘ (پ۱۴، النحل : ۴۳) پر عمل کرتے ہوئے علماء سے رجوع کروں   گا {15}جس مسئلے میں   دشواری ہوگی اس کو باربار پڑھوں   گا



Total Pages: 75

Go To