Book Name:Wasail e Bakhshish

اِلتجائے غمِ مصطَفٰے ہے                  یاخدا تجھ سے میری دُعا ہے

حُبِّ دُنیا میں   دل پھنس گیا ہے               نَفسِ بدکار حاوِی ہوا ہے

ہائے شیطاں   بھی پیچھے پڑا ہے                 یاخدا تجھ سے میری دُعا ہے

آہ! بندہ دُکھوں   میں   گِھرا ہے                  اِس کو تیرا ہی بس آسرا ہے

اِلتجائے کرم یاخُدا ہے                           یاخدا تجھ سے میری دُعا ہے

تیرا اِنعام ہے یاالٰہی               کیسا اِکرام ہے یاالٰہی

ہاتھ میں   دامنِ مصطَفیٰ ہے                    یاخدا تجھ سے میری دُعا ہے

عِشق دے سَوز دے چشمِ نَم دے                 مجھ کو میٹھے مدینے کا غم دے

واسِطہ گُنبدِم سبز کا ہے                  یاخدا تجھ سے میری دُعا ہے

ہر گنہ سے بچا مجھ کو مولیٰ              نیک خَصلَت بنا مجھ کو مولیٰ

تجھ کو رَمضان کا واسِطہ ہے           یاخدا تجھ سے میری دُعا ہے

فضل کر رحم کر تو عطا کر               اور مُعاف اے خدا ہر خطا کر

واسِطہ پنجتن پاک کا ہے                یاخدا تجھ سے میری دُعا ہے

عَفو و رَحمت کا بخشش کا سائِل        ہوں   نہایت گنہگار و غافِل

میرا سب حال تجھ پر کھلا ہے         یاخدا تجھ سے میری دُعا ہے

ہوں   بظاہِر بڑا نیک صورت کر بھی دے مجھ کو اب نیک سِیرت

ظاہِر اچھا ہے باطِن بُرا ہے           یاخدا تجھ سے میری دُعا ہے

بے سبب اے خدا کردے بخشش                حَشر میں   مجھ سے کرنا نہ پُرسِش

نام غَفّار مولیٰ تِرا ہے                   یاخدا تجھ سے میری دُعا ہے

مجھ خطاکار پر بھی عطا کر               بے سبب بخش دے رَبّ اکبر

مجھ کو دوزخ سے ڈر لگ رہا ہے         یاخدا تجھ سے میری دُعا ہے

نَزع میں   ربِّ غفّار تجھ سے           موت سے قبل بیمار تجھ سے

طالبِ جلوئہ مصطَفٰے ہے               یاخدا تجھ سے میری دُعا ہے

قبر میں   مجھ کو تنہا لِٹا کر                      چلدیئے ہائے سارے بَرادَر

دل اندھیرے میں   گھبرا رہا ہے          یاخدا تجھ سے میری دُعا ہے

 



Total Pages: 406

Go To