Book Name:Meethay Bol

رونَقَیں اور بَرَکتیں دیکھ کر میں حَیران رَہ گیا ، اجتِماع میں ہونے والے آخِری بیان’’ گانے باجے کی ہَو لناکیاں ‘‘سُن کر میں تھرّا اُٹھا اور آنکھوں سے آنسو جاری ہو گئے  ۔ اَلْحَمْدُلِلّٰہِ عَزَّ وَجَلَّ میں گناہوں سے توبہ کر کے اُٹھا اور دعوتِ اسلامی کے مَدَنی ماحول  سے وابَستہ ہوگیا ۔ میری مَدَنی ماحول سے وابَستگی سے ہمارے گھر والوں نے اطمینان کا سانس لیا، دعوتِ اسلامی کے مَدَنی ماحول کی بَرَکت سے مجھ جیسے بگڑے ہوئے بد اَخلاق اور خَستہ خراب نوجوان میں مَدَنی انقِلاب سیمُتأَثِّر ہو کر میرے بڑے بھائی نے بھی داڑھی مبارَک رکھنے کے ساتھ ساتھ عمامہ شریف کا تاج بھی سجا لیا ۔  میری ایک ہی بہن ہے ۔ اَلْحَمْدُ لِلّٰہ عَزَّ وَجَلَّ  میری اُس اکلوتی بہن نے بھی مَدَنی بُرقع  پہن لیا ، اَلْحَمْدُلِلّٰہعَزَّ وَجَلَّ  گھر کا ہر فرد سلسلۂ عالیہ قادریہ رضویہ میں داخِل ہو کر سرکارِ غوثِ اعظم علیہ رحمۃُاللہ الاکرم کا مُرید ہو گیا ۔ اوراس انفِرادی کوشش کرنے والے میرے محسن اسلامی بھائی کے میٹھے بول کی برکت سے مجھ پر اللہ اعظم عَزَّ وَجَلَّ  نے ایسا کرم فرمایا کہ میں نے قراٰنِ پاک حِفظ کرنے کی سعادت حاصِل کرلی اور درسِ نظامی ( عالم کورس) میں داخِلہ لے لیا اور یہ بیان دیتے وقت دَرَجۂ ثالِثہ یعنی تیسری کلاس میں پَہنچ چکا ہوں ۔ اَلْحَمْدُلِلّٰہِ عَزَّ وَجَلَّ  دعوتِ اسلامی کے مَدَنی کاموں کے تعلُّق سے عَلاقائی قافِلہ ذِمّہ دار ہوں ۔ میری نیّت ہے کہ  اِن شاءَ اللّٰہ عَزَّ وَجَلَّ  شَعبانُ المُعظَّم  ۱۴۲۷ ھ سے یکمشت2 1ماہ کیلئے مَدَنی قافِلوں میں سفر کروں گا ۔  

دل پہ گر زنگ ہو، گھر کاگھر تنگ ہو،     ایسا فیضان ہو، حِفظ قراٰن ہو،

ہو گا سب کا بھلا، قافِلے میں چلو کر کے ہمّت ذرا، قافِلے میں چلو

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب !              صلَّی اللہ تعالیٰ علیٰ محمَّد

مغفِرت کی بِشارت

          اِس زَبان سے تِلاوتِ قرآنِ پاک کیجئے اور ثواب کا ڈھیروں خزانہ حاصِل کیجئے ۔  چُنا نچِہ ’’روحُ البیان‘‘ میں یہ حدیثِ قُدسی ہے :  جس نے ایک بار بِسْمِ اللّٰہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِیْمِ کو الحمد شریف کے ساتھ ملا کر (یعنی بِسْمِ اللّٰہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِیْمِ الْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْن ختمِ سورۃ تک) پڑ ھا تو تم گواہ ہوجاؤ کہ میں نے اسے بَخش دیا، اس کی تمام نیکیاں قَبول فرمائیں اور اس کے گناہ مُعاف کر دیئے اور اس کی زَبان کو ہر گز نہ جلاؤں گا اور اس کو عذابِ قبر، عذابِ نار، عذابِ قِیامت اور بڑے خوف سے نَجات دوں گا ۔  (روح البیان ج۱ ص۹ داراحیاء التراث العربی بیروت)  ملانے کا مزیدواضح طریقہ سماعت فرما لیجئے : بِسْمِ اللّٰہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِیْ ۔ مِلْ ۔ حَمْدُ للہِ ربِّ العٰلمین ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ( سورۃ پوری کیجئے )

حُوریں پانے کا عمل

   میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو!تھوڑی سی زَبان چلایئے ، اَسْتَغْفِرُ اللّٰہَ الْعَظِیم کہہ لیجئے اور جنَّت کی حوریں حاصِل کیجئے چُنانچِہ ’’رَوضُ الرَّیاحِین‘‘ میں ہے :  ایک بُزُرگ رَحْمَۃُ اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ نے چالیس سال تکاللہ عَزَّ وَجَلَّ   کی عبادت کی، ایک بار دعا کی :  یا  اللّٰہ عَزَّ وَجَلَّ   ! تیری رَحمت سے مجھے جو کچھ جنّت میں ملنے والا ہے اس کی کوئی جھلک دنیا میں بھی دکھا دے ۔  ابھی دعا جاری تھی کہ یک دم محراب شَق ہوئی اور اس میں سے ایک حسینہ و جمیلہ حُور بر آمد ہوئی، اُس نے کہا کہ تجھے جنَّت میں مجھ جیسی سو حوریں عنایت کی جائیں گی،



Total Pages: 17

Go To