Book Name:101 Madani Phool

مستحب یہ ہے کہ باطہارت سوئے اور{7} کچھ دیرسیدھی کروٹ پر سیدھے ہاتھ کو رخسار (یعنی گال) کے نیچے رکھ کر قبلہ رُو سوئے پھر اس کے بعد بائیں کروٹ پر (اَیْضاً) {8}  سوتے وَقت قَبْر میں سونے کو یاد کرے کہ وہاں تنہا سونا ہوگا سوا اپنے اعمال کے کوئی ساتھ نہ ہوگا{9} سوتے وقت یادِ خدا میں مشغول ہو تہلیل و تسبیح وتحمید پڑھے {یعنیلَا اِلٰہَ اِلاَّ اللہُ- سُبْحٰنَ اللّٰہ-اور اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ ۔ کا ورد کرتا رہے } یہاں تک کہ سوجائے ، کہ جس حالت پر انسان سوتا ہے اُسی پر اٹھتا ہے اور جس حالت پر مرتا ہے قیامت کے دن اُسی پر اٹھے گا  (اَیْضاً){10} جاگنے کے بعد یہ دعا پڑھئے : ’’اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ الَّـذِیْٓ اَحْیَانَا بَعْدَ مَآ اَمَا تَنَا وَاِلَیْہِ النُّشُوْرُ ۔ ( بخاری ج۴ص۱۹۶ حدیث ۶۳۲۵)ترجمہ :  تمام تعریفیں  اللہ  عَزَّوَجَلَّ  کے لئے ہیں جس نے ہمیں مارنے کے بعد زندہ کیا اور اسی کی طرف لوٹ کر جانا ہے {11} اُسی وَقت اس کا پکا ارادہ کر ے کہ پرہیز گاری وتَقویٰ کرے گا کسی کو ستائے گا نہیں ۔ ( فتاوٰی    عالَمگیری   ج ۵ ص ۳۷۶)  {12} جب لڑکے اور لڑکی کی عمر دس سال کی ہوجائے تو ان کو الگ الگ سُلانا چاہیے بلکہ اس عُمر کا لڑکا اتنے بڑے (یعنی اپنی عمر کے ) لڑکوں یا (اپنے سے بڑے ) مَردوں کے ساتھ بھی نہ سوئے (دُرِّمُختار، رَدُّالْمُحتار ج ۹ ص۶۲۹)  {13}میاں بیوی جب ایک چار پائی پر سوئیں تو دس برس کے بچّے کو اپنے ساتھ نہ سُلائیں ، لڑکا جب حدِشَہوت کوپَہنچ جائے تو وہ مَرد کے حکم میں ہے ( دُرِّمُختار ج۹ص۶۳۰) {14} نیند سے بیدار ہوکرمِسواک کیجئے {15}رات میں نیند سے بیدار ہوکر تہَجُّد ادا کیجئے تو بڑی سعادت ہے ۔ سیِّدُ المُبَلِّغین، رَحمۃٌ  لِّلْعٰلمِین  صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے ارشادفرمایا : ’’فرضوں کے بعد افضل نَماز رات کی نماز ہے ۔ ‘‘(صَحِیح مُسلِم ، ص ۵۹۱ حدیث ۱۱۶۳) طرح طرح کی ہزاروں سنّتیں سیکھنے کیلئے مکتبۃُ المدینہ کی مطبوعہ دو کُتُب بہارِ شریعت حصّہ16 (312صفحات)نیز120صَفَحات کی کتاب’’ سنّتیں اور آداب‘‘ ھدِیّۃً حاصِل کیجئے اور پڑھئے ۔  سنّتوں کی تربیّت کا ایک بہترین ذَرِیعہ دعوتِ اسلامی کے مَدَنی قافِلوں میں عاشِقانِ رسول کے ساتھ سنّتوں بھرا سفر بھی ہے ۔

سیکھنے سنّتیں قافلے میں چلو                         لُوٹنے رَحمتیں قافلے میں چلو

ہو ں گی حل مشکلیں قافلے میں چلو                                پاؤ گے بَرَکتیں قافلے میں چلو

مُبَلِّغین و مُبَلّغِات کی خدمات میں معروضات

            ہر سنّتوں بھرے بیان کے آخِر میں حتَّی الامکان کچھ نہ کچھ سنّتیں پڑھ کرسنایئے ۔ سُنَتیں بتانے سے قبل پَیریگراف نمبر(۱) اور بتانے کے بعد نمبر(۲) پڑھ کر سنایئے  ۔ (مُبَلّغِات آخِری پیرے میں سے قافلے والا حصّہ بیان نہ فرمائیں )

 {1}میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو! بیان کو اِختِتام کی طرف لاتے ہوئے سنّت کی فضیلت اور چند سنّتیں اور آداب بیان کرنے کی سعادت حاصِل کرتا ہوں ۔ تاجدارِ رسالت ، شَہَنْشاہِ نُبُوَّت ، مصطَفٰے جانِ رحمت، شمعِ بزمِ ہدایت ، نوشۂ بزمِ جنّت صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَکا فرمانِ جنّت نشان ہے :  جس نے میری سنّت سے  مَحَبَّت کی اُس نے مجھ سے مَحَبَّت کی اور جس نے مجھ سیمَحَبَّت کی وہ



Total Pages: 16

Go To