Book Name:Karbala Ka Khooni Manzar

(6)ذَیلی مشاورت کے نگران کو چاہیئے کہ اپنی مسجِد میں دوخیر خواہ مقَرَّر کرے جو درس (بیان ) کے موقع پر جانے والوں کو نرمی سے روکیں اورسب کو قریب قریب بٹھائیں  ۔

(7)پردے میں پردہ کیے دوزانو بیٹھ کر درس دیجئے ۔ اگر سننے والے زیادہ ہوں تو کھڑے ہو کر   دینے میں بھی حرج نہیں  ۔

(8) آواز نہ تو زیادہ بُلند ہو اور نہ ہی بالکل آہستہ،   حتّی الامکان اتنی آواز سے درس دیجئے کہ صِرْف حاضِرین سُن سکیں  ۔ اس بات کی ہمیشہ احتیاط فرمایئے کہ درس وبیان کی آواز سے کسی سوتے ہوئے یا کسی نمازی یا مشغولِ تلاوت وغیرہ کو تکلیف نہ ہو ۔

(9)درس ہمیشہ ٹھہر ٹھہرکراور دھیمے انداز میں دیجئے ۔

 (10)جو کچھ دَرس دینا ہے پہلے اس کا ایک بار مطالعہ کرلیجئے تا کہ غَلَطِیاں نہ ہوں  ۔

 (11)فیضانِ سنّت کے مُعَرَّب(مُ ۔ عَر ۔ رَب) الفاظ اِعراب  کے مطابِق ہی اداکیجئے اس طرح  اِن شاءَ اللہ عَزَّوَجَلَّ تَلَفُّظکی دُرُست ادائیگی کی عادت بنے گی ۔

(12)حمدو صلوٰۃ،   دُرُود و سلام کے دونوں صیغے،   آیتِ دُرُوداور اِختتامی آیات وغیرہ کسی سُنّی عالم یا قاری کوضَرور سنادیجئے ۔  اسی طرح نَماز   کے اَذکار اور دیگر عَرَبی دُعائیں وغیرہ عُلَمائے اہلسنّت کوسنا کر اصلاح کروا لیجئے ۔

(13)فیضانِ سُنّتکے علاوہمکتبۃُ المدینہ سے شائع ہونے والے مدنی رسائل سے بھی درس دے سکتے ہیں ([1]) ۔

(14)اِختتامی دعاء سمیت درس سات مِنَٹ کے اندر اندر مکمَّل فرما لیجئے ۔

(15)ہر مبلّغ ومبلّغہ کو چاہیے کہ وہ درس کا طریقہ،   بعدکی ترغیب اوراختِتامی دعازَبانی یاد کر لے ۔

فیضانِ سنّت سے دَرس دینے کا طریقہ

تین بارا سطرح اعلان فرمایئے : قریب قریب تشریف لائیے  ۔ پردے میں پردہ کئے دو زانو بیٹھ کر اس طرح ابتِدا ء کیجئے  :  

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

اس کے بعد اِس طرح دُرودو سلام پڑھایئے :

اَلصَّلٰوۃُ وَالسَّلامُ عَلَیْکَ یَا رَسُوْلَ اللہ      وَعَلٰی الکَ وَاَصْحٰبِکَ یَا حَبِیْبَ اللہ

اَلصَّلٰوۃُ وَالسَّلامُ عَلَیْکَ یَا نَبِیَّ اللہ              وَعلٰی ٰالکَ وَ اَصْحٰبِکَ یَا نُوْرَ اللہ

         پھر ا س طرح کہئے  !   پیاری پیاری اسلامی بہنو !  قریب قریب آ کر  درس کی تعظیم کی نیّت سے ہو سکے تو دوزانو بیٹھ جائیے اگر تھک جائیں تو جسطرح آپ کو آسانی ہو اُسی طرح بیٹھ کر نگاھیں نیچی کیے توجُّہ کے ساتھ فیضانِ سُنت کا درس سنئے کہ لاپرواھی کیساتھ اِدھر اُدھر دیکھتے ہوئے،   زمین پر اُنگلی سے کھیلتے ہوئے ،  لباس بدن یا بالوں وغیرہ کوسَہْلاتے ہوئے سننے سے اسکی بَرَکتیں زائل ہو نیکا



[1]    صرف امیر اہلسنّت دَ امَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ کے کتب و رسائل ہی سے درس دیجئے۔مرکزی مجلسِ شوریٰ



Total Pages: 14

Go To