Book Name:Saas Bahu main Sulha Ka Raaz

لیا کہ لگتا ہے جو کام میں بھر پور اِنفرادی کوشش کے باوُجود نہ کرسکا میرے مُرشد امیراہلسنّتدامت برکاتہم العالیہ کے میٹھے میٹھے اندازِ گفتگو نے کردیا ہے ۔

            میرے سسرال پہنچ کر والدہ صاحبہ نے بڑ ی محبت سے میری زوجہ کو منایا اور اُسے واپس گھر لے آئیں ۔دوسری جانب میری زوجہ نے بھی مُثبت طرزِ عمل کا مظاہرہ کیا اور گھر پہنچنے کے بعد دوسرے ہی دن اپنی ساس (یعنی میری والدہ)سے کہنے لگیں: امی جان !میرا کمرہ بہت بڑا ہے  ، جبکہ دیگر گھر والے جس کمرے میں رہتے ہیں وہ قدرے چھوٹا ہے  ، آپ میرا کمرہ لے لیجئے اور میں اُس چھوٹے کمرے میں رہائش اختیار کر لیتی ہوں ۔‘‘الحمدللّٰہ عَزَّوَجَلَّ ہمارا گھر جو فتنے اور فساد کا شکار تھا  ، VCD’’گھر امن کا گہوارہ کیسے بنے ؟‘‘ کی برکت سے امن کا گہوارہبن گیا ۔

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب !                                         صلَّی اللّٰہُ تعالٰی علٰی محمَّد

 

(2) سبز عمامے والے  بزرگ

            بابُ المدینہ  (کراچی) کے علاقہ اورنگی ٹاؤن کے مقیم اسلامی بھائی کے بیان کا لبّ لباب ہے :  ہماری خوش نصیبی کہ مجھ سمیت تمام گھر والے دعوتِ اسلامی کے سنّتوں بھرے مَدَنی ماحول سے وابستہ اور شیخ ِطریقت امیرِ اہلسنّت دامت برکاتہم العالیہکے مُرید ہیں۔صفر المظفر۱۴۲۹؁ھ بمطابق فروری 2008؁ء میں مجھے عاشقانِ رسول کے ساتھ دعوتِ اسلامی کے مَدَنی قافلے میں سفر کی سعادت ملی ۔اسی دوران میں نے 63دن کا تربیتی کورس کرنے کی نیت بھی کی اور نام بھی لکھوا دیا ۔ اسی طرح کی اچھی اچھی نیّتیں کرنے کے بعد جب میں گھر پہنچا تو میرے بچوں کی امّی نے بتایا کہ کل شام دونوں بیٹے گھر کے باہر کھیلتے کھیلتے کہیں نکل گئے ۔کافی تلاش کیا مگر نہ ملے۔ صدمے سے میرابُرا حال تھا۔ دل میں طرح طرح کے وسوسے آرہے تھے ۔ میں رونے لگ گئی ۔اتنے میں دونوں مَدَنی مُنّے گھر میں داخل ہوئے  ، انہیں دیکھ کر میری جان میں جان آگئی۔وہ بہت گھبرائے ہوئے تھے ۔جب ان کی حالت ذرا سنبھلی تو بتایا کہ ہم باہر کھیل رہے تھے کہ ایک کچرا چُننے والا شخص (جس کے ہاتھ میں بوری تھی ) ہمارے قریب آیا اور آنا ًفاناً کوئی چیز سنگھائی جس سے ہم بے سُدھ ہوکر گر پڑے اس نے جلدی سے ہمیں بوری میں ڈال لیا ۔اس کے بعد ہمیں کسی چیز کا ہوش نہ رہا ۔پھر نہ جانے کتنی دیر بعد جب ہمیںہوش آیا تو دیکھا کہ ہم بوری سے باہر زمین پر پڑے ہیں اور وہ کچرا چُننے والا ہمارے قریب ہی زمین پر پڑا درد کے مارے کراہ رہا تھا ۔ایسا لگتا تھا جیسے کسی نے اسے بہت مارا ہو۔ پھر ہماری نظر  سبز عمامے والے ایک بُزُرگ پر پڑی جن کے چہرے سے نُور برس رہا تھا ۔ وہ ہمیں تسلی دیتے ہوئے فرمانے لگے : ’’ بچو! گھبراؤ مت  ، آؤ میں تمہیں تمہارے گھر چھوڑ آتا ہوں ۔‘‘چنانچہ وہی بزرگ ابھی ہمیں گھر چھوڑ کر گئے ہیں ۔ (میری بیوی نے مزید بتایا کہ)میں نے رب تعالیٰ کا لاکھ لاکھ شُکر ادا کیا اور اس بزرگ کے بارے میں سوچنے لگی کہ ہمارے مُحسن ‘وہ سبز عمامے والے بزرگ نہ جانے کون تھے؟ پھر جب میں نے سونے سے پہلے مکتبۃ المدینہ کی جاری کردہ VCD’’عوامی وسوسے اور امیرِ اہلسنّت دامت برکاتہم العالیہکے جوابات‘‘ لگائی تو جیسے ہی شیخِ طریقت امیرِ اہلسنّت دامت برکاتہم العالیہ کا جلوۂ مبارک دکھائی دیاتو دونوں مَدَنی منّے بے ساختہ پُکارنے لگے : امّی! یہی تو وہ بزرگ ہیں جنہوں نے ہمیں اغوا ہونے سے بچایا تھا اور گھر تک چھوڑنے بھی آئے تھے ۔‘‘

            اس اسلامی بھائی کا بیان ہے کہ یہ سُن کر میری آنکھوں میں آنسو آگئے اور میں اللّٰہ تعالیٰ کا شکر ادا کرنے لگا جس نے ہمیں امیرِ اہلسنّت دامت برکاتہم العالیہ جیسے ولیٔ کامل کے دامن سے وابستہ ہونے کی سعادت عطا فرمائی ۔

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب !                                         صلَّی اللّٰہُ تعالٰی علٰی محمَّد

(3) ہاتھوں ہاتھ مَدَنی قافلے کے مسافر بن گئے

            قطر کے ایک ذمہ دار اسلامی بھائی کا کچھ اس طرح سے بیان ہے :  قطر میں جمعرات کو ایک نئی جگہ پر ہفتہ وار سنّتوں بھرے اجتماع کی ترکیب بنائی گئی ۔ اس اجتماع میں مکتبۃ المدینہ سے جاری ہونے والی بین الاقوامی اجتماع واجتماعی اعتکاف کی VCDدکھائی گئی ۔ شرکاء اجتماع اس VCDکو دیکھ کر بے حد متأثر ہوئے ۔اَلْحَمْدُلِلّٰہعَزَّوَجَلَّ  اس VCDکی برکت سے کم وبیش 26اسلامی بھائیوں نے ہاتھوں ہاتھ عاشقانِ رسول کے ہمراہ 3دن کے مَدَنی قافلے میں سفر اختیار کیا ۔

اللہ کرم ایسا کرے تجھ پہ جہاں میں

اے دعوت اسلامی تیری دھوم مچی ہو

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب !                                         صلَّی اللّٰہُ تعالٰی علٰی محمَّد

 (4) بے نمازی نمازی بن گیا

            روات(کہوٹہ ،  اسلام آباد) کے ایک اسلامی بھائی کا کچھ اس طرح سے بیان ہے کہ میں ایک بے نمازی شخص تھا ۔ میری اصلاح کا سامان یوں مہیاہوا کہ میں نے بین الاقوامی اجتماع واجتماعی اعتکاف نامیVCD دیکھی ۔ جس میں مدینۃ الاولیاء ملتان شریف میں ہونے والے دعوتِ اسلامی کے بین الاقوامی سنّتوں بھرے اجتماع کے رُوح پرور مناظِر دیکھ کر اجتماع میں شرکت کا ذہن بنا ۔ چنانچہ میں بین الاقوامی اجتماع میں شریک ہوا ۔وہاں پر سنّتوں بھرے اِصلاحی بیانات سُن کر میں نے نمازوں کی پابندی کی پکی نیّت کر لی ۔ اجتماع سے



Total Pages: 8

Go To