Book Name:Jannat ki Tayyari

ہے لہٰذاقاری سے کہا جائے گا کہ تو جتنی آیتیں پڑھ سکتاہے اُتنے دَرَجے طے کرتاجاتو جواُس وقت پورا قراٰن پاک پڑ ھ لے گا وہ جَنّت کے انتہائی درجے کو پالے گا اور جِس نے قراٰن کا کوئی جُز پڑھا تو اُس کے ثواب کی اِنتہاء قراء ت کی اِنتہاء تک ہوگی۔‘‘  وَاللّٰہُ اَعْلَمُ بِالصَّوَاب

یا نبی عطارؔ کو جَنّـت میں دے اپنا جوار

وَاسِطَہ صدِّیق کا جو تیرا یارِ غار ہے

(ارمغانِ مدینہ، ازامیر اہلسنت  دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ  )

        جَنّت کی لازوال نعمتوں کے طلبگار اسلامی بھائیو!اَلْحَمْدُلِلّٰہِ عَزَّ وَجَلَّ     تبلیغِ قراٰن و سُنّت کی عالمگیر غیر سیاسی تحریک دعوتِ اسلامی کے مدنی ماحول کی برکت سے قراٰنِ پاک کی تعلیمات عام ہو رہی ہیں ۔تادمِ تحریر کم و بیش 641 مدارسُ المدینہ قائم ہو چکے ہیں ، جن میں پچاس ہزار(50,000)سے زائد طلباء و طالبات  حِفظ و ناظرہ کی تعلیم مُفت حاصل کر رہے ہیں ۔

        عاشقِ اعلیٰ حضرت ، امیر ِاہلسنّت  دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ   دعوتِ اسلامی کے اکتالیس (41) منَٹ کے مدرسۃ المدینہ بالغان میں قراٰنِ پاک پڑھنے ، پڑھانے اور انفرادی طور پر بھی اِس کی تِلاوت کرنے کی تاکید فرماتے رہتے ہیں مدنی انعام نمبر3 میں ارشاد ہوتا ہے : کیاآج آپ نے نمازِ پنجگانہ کے بعد نیز سوتے وقت کم از کم ایک بار آ یَۃُ الکُرْسی، سُورَۃُ الاخْلاص اور تسبیحِ فاطمہرَضِیَ اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ ا  پڑھی؟نیز رات میں سُورَۃُ المُلک پڑھ یا سُن لی؟مدنی انعام نمبر13 میں ارشاد ہوتا ہے : کیاآج آپ نے مدرسۃ المدینہ (بالِغان)میں پڑھا یا پڑھایا؟نیز مسجدِ مَحلَّہ کی عشاء کی جماعت کے وقت سے دو(2)گھنٹے کے اند ر اندرگھر پہنچ گئے؟

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب !             صلَّی اللّٰہُ تعالٰی علٰی محمَّد

ذِِکْرُ اللّٰہ   عَزَّ وَجَلَّ   کے حَلْقے

         حضرتِ سَیِّدُ نااَنَس بن مالِک رَضِیَ اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ  سے رِوَایت ہے کہ سَرکارِ مدینۂ مُنَوَّرَہ، سَردارِ مَکَّۂ  مُکرّمہ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے فرمایا :  ’’جب تمہارا گزر جَنّت کی کِیاریوں پرسے ہوتو اُس میں سے کچھ نہ کچھ چُن لیا کرو۔‘‘ صحابۂ کرام( عَلَیْھِمُ الرِّضْوَان ) نے عَرض کیا : ’’جنت کی کیاریاں کیا ہیں ؟‘‘ فرمایا :  ’’ ذِکْر کے حَلْقے۔‘‘

(تر مذی ، کتاب الدعوات ، باب ۸۷ ، حدیث ۲۱ ۳۵ ، ج ۵ ، ص ۳۰۴ )

شہاجب خُلْد میں آپ آگے آگے جائیں اُس دم کاش!

میں بھی ہوجاؤں پیچھے پیچھے داخِل یارسول اللہ

(ارمغانِ مدینہ، ازامیر اہلسنت  دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ  )   

        جَنّت کی کیاریوں کے طلبگار اسلامی بھائیو!دعوتِ اسلامی کے بین الاقوامی ، صوبائی، ہفتہ وار(شبِ جمعہ ، مسجد اجتماع) اور بڑی راتوں کے اجتماعِ ذِ کر و نعت میں پابندیٔ وقت کے ساتھ اوّل تا آخر شرکت کی سعادت حاصل کیا کریں ، نا صرف تنہا بلکہ دوسرے اسلامی بھائیوں پر بھی اِنفرادی کوشش کر کے اُنہیں بھی ساتھ لایا کریں ۔مالکِ جَنّت، قاسمِ نِعمت، مصطفی جانِ رحمت  صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ کے صدقیجَنّت کی بہاریں دیکھنا نصیب ہو جائیں گی اِنْ شَآءَاللہ عَزَّ وَجَلَّ  ۔  پیکرِ علم و حِکمت، امیر ِاہلسنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ   دعوتِ اسلامی کے اجتماعات کی ترغیب دِلاتے رہتے ہیں چنانچہ مدنی انعام نمبر51میں ارشاد ہوتا ہے :  کیا آپ نے اِس ہفتے اِجتماع میں آغاز ہی سے شریک ہو کر(جتنا بیٹھ سکیں اُتنی دیر)دو زانو بیٹھ کر حتّی الامکان نگاہیں نیچی کئے ہر بیان، ذکر و دُعا اور کھڑے ہو کر صلوٰۃ و سلام میں شرکت اور مسجد میں (بمع حلقہ تہجد و نمازِفجر، اشراق ، چاشت)ساری رات اِعتکاف فرمایا؟مدنی انعام نمبر56میں ارشاد ہوتا ہے : کیا آپ نے اِس 5 از کم ایک نئے اسلامی بھائی کو ساتھ لے جا کر اوّل تا آخر شرکت فرمائی؟

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب !             صلَّی اللّٰہُ تعالٰی علٰی محمَّد   

کَلِماتِِ رِضائے الٰہی   عَزَّ وَجَلَّ   

         حضرت ِ ِسَیِّدُ نا ابنِ عمر رَضِیَ اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ  سے روایت ہے کہ دُکھیا دِلوں کے چین، سَرورِ کونَین، نانائے حَسَنَیْن صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ وَ رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُمَا نے فرمایا :  ’’ جو اللّٰہ  عَزَّ وَجَلَّ  کی رِضا کے لئے  لَا اِلٰہَ اِلَّا اللّٰہُ وَحْدَ ہٗ لَاشَرِیْکَ لَہٗ لَہُ الْمُلْکُ وَلَہُ الْحَمْدُ یُحْیٖ وَیُمِیْتُ  وَھُوَ الْحَیُّ الَّذِیْ لَا یَمُوْتُ بِیَدِہِ الْخَیْرُ وَھُوَ عَلٰی کُلِّ شَیْئٍ قَدِیْرٌ کہے گا  اللّٰہ   عَزَّ وَجَلَّ   اُسے یہ کلمات پڑھنے کی وجہ سے جَنّتِ نعیم میں داخِل فرمائے گا۔ (مجمع الزوائد، کتا ب الاذکار، باب ماجاء فی لا الہ الا اللہ  وحدہ لا شریک لہ ، حدیث ۱۶۸۲۵، ج ۱۰، ص ۹۵)

تمھارا ہوں غلام اور ہے غلامی پر مجھے تو ناز

کرم سے ساتھ جَنّت میں چلوں گا یارسول اللہ

(ارمغانِ مدینہ، ازامیر اہلسنت  دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ  )

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب !         صلَّی اللّٰہُ تعالٰی علٰی محمَّد

لَاحَوْل شریف کی کثرت

         حضرت ِسَیِّدُناابوہُرَیْرَہ  رَضِیَ اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ  سے مَروِی ہے کہ شَہَنْشَاہِ اَبْرَار،  جَنابِ احمد ِمختارصَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے فرمایا : ’’ لَاحَوْ لَ وَلَا قُوَّۃَ اِلاَّ بِاللّٰہ کی کثرت کیا کرو کیونکہ یہ جَنّت کے خَزانوں میں سے ایک خزانہ ہے۔‘‘

قسمت میں غمِ دُنیا جنّت کا قَبالہ ہو

 



Total Pages: 31

Go To