Book Name:Jahannam Main Lay Janay Walay Amaal (Jild-1)

بھی رہو مجھ پر درودِ پاک پڑھا کرو کیونکہ تمہارا درودِ پاک مجھ تک پہنچ جاتا ہے۔ ‘‘                   (المعجم الاوسط،الحدیث: ۳۶۵،ج۱،ص۱۱۶)

 (المصنف لابن ابی شیبۃ، کتاب صلاۃالتطوع،باب فی ثواب الصلوۃالخ،الحدیث: ۱۱،ج۲،ص۳۹۹)

{23}…مَحبوبِ رَبُّ العزت، محسنِ انسانیت عَزَّ وَجَلَّ  وصَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمکا فرمانِ عالیشان ہے :  ’’ جو مجھ پر درودِ پاک پڑھتا ہے اس کا درودِ پاک مجھ تک پہنچ جاتا ہے اور میں اس کے لئے دعائِ رحمت کرتا ہوں اور اس کے علاوہ اس کے لئے 10نیکیاں لکھی جاتی ہیں ۔ ‘‘                                                                                             (المعجم الاوسط،الحدیث: ۱۶۴۲،ج۱،ص۴۴۶)

{24}…شہنشاہِ مدینہ،قرارِ قلب و سینہ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمکا فرمانِ عالیشان ہے :  ’’ جو مجھ پر سلام بھیجتا ہے اللہ  عَزَّ وَجَلَّمجھے میری قوت گویائی لوٹا دیتا ہے تا کہ میں اس کے سلام کا جواب دے سکوں ۔ ‘‘

 (المسندللامام احمد بن حنبل، مسند ابی ھریرہ،الحدیث: ۱۰۸۱۷،ج۳،ص۶۲۰)

{25}…صاحبِ معطر پسینہ، باعثِ نُزولِ سکینہ، فیض گنجینہ صَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمنے ارشاد فرمایا :  ’’ اللہ  عَزَّ وَجَلَّنے میری قبر پر ایک فرشتہ مقرر فرمایا ہے جسے اس نے تما م مخلوق جتنی قوتِ سماعت عطا فرمائی ہے، لہٰذا قیامت تک جو بھی مجھ پر درودِ پاک پڑھے گا وہ فرشتہ مجھے اس کا اور اس کے باپ کا نام بتائے گا کہ یہ فلاں بن فلا ں ہے جس نے آپ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمپر درودِ پاک پڑھا ہے۔ ‘‘

  (الترغیب والترہیب،کتاب الذکروالدعا،باب فی اکثارالصلوٰۃ علی النبیصَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمالحدیث: ۲۵۸۶،ج۲،ص۳۲۴)

{26}…نور کے پیکر، تمام نبیوں کے سَرْوَرصَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمکا فرمانِ عالیشان ہے :  ’’ قیامت کے دن لوگوں میں میرے قریب ترین وہ شخص ہو گا جس نے دنیا میں مجھ پر کثرت سے درودِ پاک پڑھا ہو گا۔ ‘‘

 (شعب الایمان باب فی تعظیم النبیصَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمالخ،الحدیث:  ۱۵۶۳،ج۲،ص۲۱۲)

{27}…دو جہاں کے تاجْوَر، سلطانِ بَحرو بَرصَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمکا فرمانِ عالیشان ہے :  ’’ جب کوئی بندہ مجھ پر درودِ پاک پڑھتا ہے تو جب تک وہ درودِ پاک پڑھتا رہتا ہے ملائکہ اس کے لئے دعائِ مغفرت کرتے رہتے ہیں ، اب بندے کی مرضی ہے کہ  درودِ پاک کم پڑھے یا زیادہ۔ ‘‘      (لمسندللامام احمد بن حنبل، حدیث عامر بن ربیعہ،الحدیث: ۱۵۶۸۰،ج۵،ص۳۲۴)

{28}…سرکارِ والا تَبار،بے کسوں کے مددگارصَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمایک چوتھائی رات گزرنے کے بعد اُٹھ کر ارشاد فرماتے :   ’’ اے لوگو!  اللہ  عَزَّ وَجَلَّکا ذکر کرو، پہلا صورپھونکا جانے والاہے، اس کے بعد دوسرا صور پھونکا جائے گا اور موت اپنی تمام تر تکالیف کے ساتھ آنے والی ہے۔ ‘‘

                حضرت سیدنا اُبی ّ بن کعب رَضِیَ اللہ  تَعَالٰی عَنْہ  ارشاد فرماتے ہیں کہ میں نے شفیعِ روزِ شُمار، دو عالَم کے مالک و مختارباِذنِ پروردگار عَزَّ وَجَلَّ  وصَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمکی خدمتِ بابرکت میں عرض کی ’’ میں کثرت سے درودِ پاک پڑھتا ہوں ،توآپ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمپر درودِ پاک پڑھنے کے لئے وقت کا کتنا حصہ مقرر کروں ؟ ‘‘  تو آپ صَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمنے ارشاد فرمایا :  ’’ جتنا چاہو مقرر کر لو۔ ‘‘  میں نے عرض کی:  ’’ چوتھائی حصہ؟ ‘‘  تو آپ صَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمنے ارشاد فرمایا :  ’’ جتنا چاہو مقرر کر لو لیکن اگر اس میں اضافہ کرو تو تمہارے لئے بہتر ہو گا۔ ‘‘  میں نے عرض کی:  ’’ نصف حصہ مقرر کر لوں ؟ ‘‘ تو آپ صَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمنے ارشاد فرمایا :  ’’ جتنا چاہو مقرر کر لو لیکن اگر اس میں بھی اضافہ کرو گے تو تمہارے لئے بہتر ہو گا۔ ‘‘  میں نے عرض کی:  ’’ اگرمیں  (فرائض کے علاوہ)  اپنا سارا وقت آپ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمپر درودِ پاک پڑھنے کے لئے خاص کر لوں ؟ ‘‘  تو آپ صَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمنے ارشاد فرمایا :  ’’ اگر تم ایسا کرو گے تو یہ تمہاری پریشانیوں کو کفایت کرے گا اور تمہارے گناہوں کو مٹا دے گا۔ ‘‘

 (جامع الترمذی، ابواب الزھد ،باب فی الترغیب فی ذکر اللہ  الخ،الحدیث: ۲۴۵۷،ص۱۸۹۸ )

{29}…ایک شخص نے عرض کی ’’ یا رسول اللہ  عَزَّ وَجَلَّوصَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم ! اگرمیں  (فرائض کے علاوہ)  اپنا سارا وقت آپ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمپر درودِ پاک پڑھنے میں صرف کروں تو آپ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمکا کیا خیال ہے؟ ‘‘ تو آپ صَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمنے ارشاد فرمایا :  ’’ اگر تم ایسا کرو گے تو اللہ  عَزَّ وَجَلَّتمہاری دنیوی و اُخروی پریشانیوں میں تمہاری کفایت فرمائے گا۔ ‘‘

 (المسندللامام احمد بن حنبل، حدیث طفیل بن ابی بن کعب،الحدیث: ۲۱۳۰۰،ج۸،ص۵۰)

{30}…حسنِ اخلاق کے پیکر،نبیوں کے تاجور، مَحبوبِ رَبِّ اکبر عَزَّ وَجَلَّ  وصَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمنے ارشاد فرمایا:  ’’ جس مسلمان کے پاس صدقہ کرنے کے لئے کچھ نہ ہو اسے چاہئے کہ وہ اپنی دعا میں  ’’  اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰی مُحَمَّدٍ عَبْدِکَ وَرَسُوْلِکَ وَصَلِّ عَلٰی الْمُؤْمِنِیْنَ وَالْمُؤْمِنَاتِ وَالْمُسْلِمِیْنَ وَالْمُسْلِمَاتِ ‘‘  (یعنی اے اللہ  عَزَّ وَجَلَّ! اپنے بندے اور رسول حضرت سیدنا محمد صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمپررحمت نازل فرما اور تمام مؤمن اورمسلمان مردوں ،عورتوں پربھی رحمت بھیج ) پڑھ لیا کرے کیونکہ یہ بھی صدقہ ہے۔ ‘‘

 (المستدرک،کتاب الاطعمۃ، باب زکاۃ المسلمالخ،الحدیث: ۷۲۵۷،ج۵،ص۱۷۹)

{31}…نور کے پیکر، تمام نبیوں کے سَرْوَرصَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمکا فرمانِ عالیشان ہے :  ’’ مؤمن کبھی خیر سے سیر نہیں ہوتا یہاں تک کہ اس کا آخری مقام جنت ہوتی ہے۔ ‘‘                  (صحیح ابن حبان،باب الادعیۃ،الحدیث: ۹۰۰،ج۲،ص۱۳۰)

{32}…رسولِ اکرم، شہنشاہ ِبنی آدم صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمنے ارشادفرمایا:  ’’ جمعہ کے دن مجھ پر درودِ پاک کی کثرت کیا کرو کیونکہ یہ یومِ مشہود ہے جس میں فرشتے حاضر ہوتے ہیں اور جو بھی مجھ پر درودِ پاک پڑھتا ہے اس کے درودِ پاک سے فا رغ ہونے سے پہلے اس کا درودِ پاک مجھ تک پہنچ جاتا ہے۔ ‘‘  حضرت سیدنا ابو درداء رَضِیَ اللہ  تَعَالٰی عَنْہ  ارشاد فرماتے ہیں کہ میں نے عرض کی ’’ یا رسول اللہ  عَزَّ وَجَلَّوصَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم !  آپ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمکے وصال ( ظاہری)  کے بعد؟ ‘‘  تو آپ صَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمنے ارشاد فرمایا:   ’’ اللہ  عَزَّ وَجَلَّنے زمین پر انبیاء کرام

Total Pages: 320

Go To