Book Name:Jahannam Main Lay Janay Walay Amaal (Jild-1)

کوسچاکہنیوالا۔ ‘‘   (المسند للامام احمد بن حنبل،حدیث ابی موسیٰ اشعری،الحدیث:  ۱۹۵۸۶،ج۷، ص۱۳۹)

{41}… شہنشاہِ مدینہ،قرارِ قلب و سینہ،باعث نزول سکینہ صَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمکا فرمانِ عالیشان ہے،اللہ  عَزَّ وَجَلَّفرماتاہے :   ’’ تین شخص ایسے ہیں جن سے میں قیامت کے دن جھگڑوں گا:  (۱) وہ شخص جسے میرے لئے کچھ مال دیا گیا پھر اس نے اس مال میں خیانت کی  (۲) وہ شخص جس نے آزاد آدمی کو بیچا پھر اس کی قیمت کھالی  (۳) وہ شخص جس نے کسی کو اُجرت پر رکھا پھر اس سے کام پورا لیا مگر اجرت پوری نہ دی۔ ‘‘            (المسند للامام احمد بن حنبل،مسند ابی ھریرہ، الحدیث: ۸۷۰۰،ج۳،ص۲۷۸،بدون ’’  العمل ‘‘ )

{42}…سرکارِ مدینہ ، صاحبِ معطر پسینہ، باعثِ نُزولِ سکینہ، فیض گنجینہ صَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمکا فرمانِ عالیشان ہے :  ’’ والدین کا نافرمان ، شراب کا عادی اور چغل خور جنت میں داخل نہ ہوں گے۔ ‘‘   (المسند للامام احمد بن حنبل،مسند عبداللہ  بن عمروبن العاص، الحدیث:  ۶۹۰۹،ج۲، ص۶۴۷ ’’ نمام بدلہ ’’  منان ‘‘ )

{43}… نور کے پیکر، تمام نبیوں کے سَرْوَرصَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمکا فرمانِ عالیشان ہے :  ’’ والدین کا نافرمان، شراب کا عادی اور تقدیر کا منکر جنت میں داخل نہ ہوں گے۔ ‘‘   (المسندللامام احمد بن حنبل،حدیث ابی الدرداء عویمر، الحدیث: ۴ ۲۷۵۵،ج۱۰، ص۴۱۶)

{44}… دو جہاں کے تاجْوَر، سلطانِ بَحرو بَرصَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمکا فرمانِ عالیشان ہے :  ’’ پانچ شخص جنت میں داخل نہ ہوں گے:   ’’  (۱)  شراب کا عادی  (۲) جادو کرنے والا  (۳) رشتہ داری توڑنے والا  (۴) کاہن اور (۵) احسان جتلانے والا۔ ‘‘   (المسند للامام احمد بن حنبل،مسند ابی سعید الخدری، الحدیث:  ۱۱۱۰۷،ج۴، ص۳۰)

{45}…سرکارِ والا تَبار، بے کسوں کے مددگارصَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمکا فرمانِ عالیشان ہے :  ’’ اللہ  عَزَّ وَجَلَّ کی اس شخص پر لعنت ہو جو جانور ذبح کرتے وقت غیر اللہ  کا نام لیتا ہے، اللہ  عَزَّ وَجَلَّ کی اس شخص پر لعنت ہو جو اپنے والدین پر لعنت بھیجتا ہے، اللہ  عَزَّ وَجَلَّ کی اس شخص پر لعنت ہو جو کسی بدعتی کو پناہ دیتاہے اوراللہ  عَزَّ وَجَلَّ کی اس شخص پر لعنت ہو جو زمینی راستوں کے نشان مٹا دیتاہے۔ ‘‘    (صحیح مسلم، کتاب الاضاحی،باب تحریم الذبح لغیر اللہ الخ،الحدیث: ۵۱۲۵،۵۱۲۴،ص۱۰۳۱)

{46}… شفیعِ روزِ شُمار، دو عالَم کے مالک و مختارباذنِ پروردگار عَزَّ وَجَلَّ  وصَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمکا فرمانِ عالیشان ہے :  ’’ تین شخص جنت میں داخل نہ ہوں گے:  ’’   (۱) والدین کا نافرمان  (۲) دیوث اور (۳) عورتوں کی شکل اختیار کرنے والے مرد۔ ‘‘  (المستدرک،کتاب الایمان،باب ثلاثۃ لایدخلون الجنۃ الخ،الحدیث: ۲۵۲،ج۱،ص۲۵۲)

                یہ وہی احادیث مبارکہ ہیں جن کی طرف علامہ علائی رَحْمَۃُ اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہوغیرہ نے اشارہ کیا تھا کہ یہ احادیث اس بات پر نص ہیں کہ ان میں بیان کردہ گناہ، کبیرہ ہیں یاکبیرہ گناہوں کو لازم ہیں ۔ اگر اللہ  عَزَّ وَجَلَّ نے چاہا تو اس کی عطا کردہ مدد اور قوت سے ہم ان احادیث کی تفصیل میں جاتے ہوئے عنقریب ان گناہوں کوبھی بیان کریں گے جو مذکورہ گناہوں کے علاوہ ہیں ، مگر ہم نے اس تفصیل سے پہلے علامہ علائی رَحْمَۃُ اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہوغیرہ کے کلام کے ماخذ کی طرف اشارہ کرنا مناسب سمجھا، اور جہاں تک تمام کبیرہ گناہوں اور ان کے بارے میں مروی روایات کے بیان کا تعلق ہے تو انہیں ہم ان کے تذکرہ کے موقع پر مکمل تفصیل کے ساتھ بیان کریں گے۔ اللہ  عَزَّ وَجَلَّ اپنے فضل وکرم سے یہ کام آسان فرمائے ۔  (اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْنِ صلی اللّٰہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم )

 

 ٭٭٭٭٭٭

کبیرہ گناہوں کی تعداد اور ان کے متعلقات

                حضرت سیدنا ابو طالب مکی رَحْمَۃُ اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہفرماتے ہیں :  ’’ کبیرہ گناہ سترہ ہیں ۔

 چار کا تعلق دل سے ہے:   (۱) شرک  (۲) گناہ پر اصرار  (۳) مایوسی اور  (۴) اللہ  عَزَّ وَجَلَّ کی خفیہ تدبیر سے بے خوف رہنا،

چار کا تعلق زبان سے ہے:   (۱) تہمت لگانا  (۲) جھوٹی گواہی دینااور  (۳) جادو کرنا اور جادو ہر اس کلام کو کہتے ہیں جو انسان یا اس کے بدن کے کسی حصہ ( کی حالت)  کو بدل دے  (۴) جھوٹی قسم اٹھانا اور اس سے مراد وہ قسم ہے جس کے ذریعے کسی کا حق باطل کیا جائے یا کسی باطل کو ثابت کیاجائے،

تین کا تعلق پیٹ سے ہے:   (۱) یتیم کا مال ظلماً کھانا  (۲) سود کھانا (۳) ہر نشہ آور چیز پینا،

 دوکا تعلق شرمگاہ سے ہے:   (۱) زنااور  (۲) لواطت،

 دو کا تعلق ہاتھوں سے ہے:   (۱) قتل کرنااور  (۲) چوری کرنا،

ایک کا تعلق پاؤں سے ہے: وہ جہاد سے فرار ہونا ہے ،

ایک گناہِ کبیرہ کا تعلق پورے جسم سے ہے:  وہ والدین کی نافرمانی کرنا ہے ۔

٭٭٭٭٭٭

خاتمہ

ہر چھوٹے بڑے گناہ سے ڈرانے کا بیان

                ہم نے ان سطور کوخلافِ دُستور اس لئے مقدم کردیا ت



Total Pages: 320

Go To