Book Name:Jahannam Kay Khatrat

غمگین ہو جاتا ہے اور اگر بھاؤ گراں کر دیتا ہے تو وہ خوشی مناتا ہے۔

(مشکوٰۃ المصابیح، کتاب البیوع، باب الاحتکار، الفصل الثالث، الحدیث :  ۲۸۹۷، ج۲، ص۱۵۸، شعب الایمان، باب فی أن یحب المسلم...الخ، فصل فی ترک الاحتکار، الحدیث : ۱۱۲۱۵، ج۷، ص۵۲۵)

حدیث : ۷

         حضرت ابن عمر رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُمَا  سے روایت ہے کہ جو ایک ہی رات میری امت پر گرانی ہونے کی تمنا کرے   اللہ  تَعَالٰی اس کے چالیس برس کے نیک اعمال کو غارت و برباد کر دے گا۔  

(کنزالعمال، کتاب البیوع، من قسم الاقوال، الباب الثالث فی الاحتکاروالتسعیر، الحدیث : ۹۷۱۷، ج۲، الجزء الرابع، ص۴۰)

حدیث : ۸

         حضرت ابوہریرہ رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت ہے کہ جو اس نیت سے ذخیرہ اندوزی کرے کہ مسلمانوں پر گرانی لا دے تووہ شخص   اللہ  تَعَالٰی اور اس کے رسول کے ذمہ سے نکل گیا۔

(کنزالعمال، کتاب البیوع، من قسم الاقوال، الباب الثالث فی الاحتکار...الخ، الحدیث :  ۹۷۱۵، ج۲، الجزء الرابع، ص۴۰)

نوٹ :  احتکار (ذخیرہ اندوزی) کے مفصل فقہی مسائل ہماری کتاب’’ جنتی زیور‘‘  میں پڑھئے۔     

(۴۶)  تصویریں

        کسی جاندار چیز کی تصویر بنانی اس کو عزت و احترام کے ساتھ رکھنا اس کو بیچنا خریدنا یہ سب حرام ہیں ۔ اور حدیثوں میں بڑی شدت کے ساتھ اس کی حرمت و ممانعت کو بیان کیا گیا ہے۔

حدیث : ۱

         حضرت ابو جحیفۃ رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت ہے کہ نبی کریم  صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے تصویر بنانے والے پر لعنت فرمائی ہے۔

   (صحیح البخاری، کتاب البیوع، باب موکل الربٰوا، الحدیث : ۲۰۸۶، ج۲، ص۱۵)

حدیث : ۲

         حضرت ابو طلحہ رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت ہے کہ نبی کریم  صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے فرمایا ہے کہ (رحمت کے) فرشتے اس گھرمیں داخل نہیں ہوتے جس گھر میں کتا یا تصویریں ہوں ۔   

     (صحیح البخاری، کتاب اللباس، باب التصاویر، الحدیث۵۹۴۹، ج۴، ص۸۷)

حدیث : ۳

         حضرت عبد  اللہ  بن مسعود رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ نے کہا کہ میں نے رسول   اللہ   صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  کو فرماتے ہوئے سنا کہ تمام لوگوں میں سب سے زیادہ سخت عذاب تصویر بنانے والوں کو دیا جائے گا۔(صحیح البخاری، کتاب اللباس، باب عذاب المصورین یوم القیامۃ، الحدیث۵۹۵، ج۴، ص۸۷)   

حدیث : ۴

         حضرت ابن عباس  رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُمَا  سے روایت ہے انہوں نے کہا کہ میں نے  رَسُولَ  اللہ  صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  کو یہ فرماتے ہوئے سنا کہ ہر تصویر بنانے والا جہنم میں ہے۔ اس نے جتنی تصویریں بنائی ہیں ہر تصویر کے بدلے   اللہ  تَعَالٰی اس کیلئے ایک جان پیدا فرمائے گا جو اس کو جہنم میں عذاب دے گی ۔حضرت ابن عباس رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُمَا  نے فرمایا کہ اگر تمہارے لئے تصویربنانا ہی ضروری ہے تو درخت یا ان چیزوں کی تصویریں بناؤ جن میں روح نہیں ہے۔

(مشکوٰۃ المصابیح، کتاب اللباس، باب التصاویر، الفصل الاول، الحدیث : ۴۴۹۸، ج۲، ص۴۹۹، صحیح مسلم، کتاب اللباس والزینۃ، باب تحریم صورۃ ...الخ، الحدیث : ۲۱۱۰، ص۱۱۷۰)

حدیث : ۵

         حضرت ابوہریرہ رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت ہے کہ رسول   اللہ   صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے فرمایا کہ قیامت کے دن جہنم کے اندر سے ایک گردن نمودار ہو گی کہ اس کی دو آنکھیں ہوں گی اور دوکان ہوں گے اورایک بولتی ہوئی زبان ہو گی ۔ وہ یہ کہے گی کہ تین شخصوں کو عذاب دینا میرے سپرد کیا گیا ہے (۱) سرکش ظالم  (۲) جو   اللہ     عَزَّ وَجَلَّ    کے ساتھ کسی دوسرے معبود کی عبادت کرے   (۳)تصویریں بنانے والا۔  (