Book Name:Islami Shadi

4۔  جب تم میں سے کوئی نکاح کر لیتاہے تو شیطان کہتا ہے ہائے افسوس!ابنِ آدم نے مجھ سے دو تہائی دین بچا لیا۔ ([1])

5۔  دو محبت کرنے والوں کیلئے نکاح سے بہتر کوئی اور تعلُّق نہیں دیکھا گیا۔ ([2])

6۔  شادی شُدہ کی دو رکعتیں غیر شادی شُدہ شخص کی ستّر رکعتوں سےاور ایک رِوایت کے مطابق بیاسی رکعتوں سے بہتر ہیں ۔ ([3])

               اِس آخری حدیثِ پاک میں شادی شُدہ کیلئے نماز کے معاملے میں جو فضیلت ذکر کی گئی ہے اس کی وجہ بیان کرتے ہوئے علّامہ عبدُ الرّؤف مُناوی رَحْمَۃُ اللّٰہ ِتَعَالٰی عَلَیْہ فرماتے ہیں : غالباً اِس کی وجہ یہ ہے کہ غیر شادی شُدہ کے مقابلے میں شادی شُدہ آدمی کے حواس قابو میں رہتے ہیں ، حوصلے مضبوط ہوتے ہیں اور اُسے خُشُوع و خُضُوع زیادہ حاصل ہوتا ہے جو کہ عبادت کی رُوح ہے۔([4])

صَلُّوْا عَلَی الْحَبِیْب!                              صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلٰی مُحَمَّد

نکاح کے 5 فائدے

               حُجَّۃُ الْاِسلام امام محمد بن محمد غزالی رَحْمَۃُ اللّٰہ ِتَعَالٰی عَلَیْہ  نکاح کے فوائد بیان کرتے ہوئے فرماتے ہیں : نکاح کے پانچ فائدے ہیں : (1)اَولاد حاصل ہونا (2)شَہْوت ٹوٹنا (یعنی کم ہونا) (3)گھر کے معاملات کو چلانا (4)خاندان میں اضافہ ہونا اور (5)عورتوں (بیویوں ) کے ساتھ رہنے کے ذریعے مجاہدۂ نَفْس کرنا۔([5])

      بہرحال شادی کے کثیر فوائد ہیں اور رسولِ کریم رؤفٌ رَّحیم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَ سے سچی محبت رکھنے والے کیلئے تو اتنی ہی بات کافی ہونی چاہئے کہ شادی حضورِ اکرم ، نورِ مُجَسَّم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَ کی سنّت بھی ہے اور آپ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے اُس کی تاکید بھی فرمائی بلکہ بعض اوقات تو ایسا بھی ہوا کہ آپ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَ کو کسی کے غیر شادی شُدہ ہونے کا پتا چلا تو اُسے شادی کرلینے کے مشورے سے نوازا۔ چنانچہ

شادی کرنے کی تاکید

  حضرت سَیِّدُنا ابو ذَر رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ سے مروی ہے کہ رسولُ اللہ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَ کی خدمت میں ایک مرتبہ عکّاف بن بِشْر تمیمی صحابی رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ حاضر ہوئے ، رسولِ کریم ، رؤفٌ رَّحیم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے اِسْتِفْسار فرمایا : عکّاف!تمہاری کوئی بیوی ہے؟عرض کی نہیں ۔ پوچھا : کوئی باندی ہے؟عرض کی : نہیں ۔ فرمایا : تم تو مالدار بھی ہو؟  عرض کی : جی ہاں ۔ فرمایا : تب تو تم شیطان کے بھائی ہو ، اگر تم عیسائیوں میں ہوتے تو اُن کے راہبوں میں شُمار ہوتے ، ہماری سنّت تو نکاح کرنا ہے ، تم میں بَدترین لوگ وہ ہیں جو کنوارے ہیں اور گھٹیا ترین موت مرنے والے بھی وہ ہیں جو کنوارے ہیں ، کیا تم شیطان سے لڑتے ہو؟ شیطان کے پاس نیک آدمیوں کے لئے عورتوں سے زیادہ کار گر ہتھیار کوئی نہیں ، ہاں اگر وہ نیک لوگ شادی شُدہ ہوں (تو شیطان کے ہتھیار سے بچ جاتے ہیں ) وہی لوگ پاکیزہ اور گندگی سے محفوظ ہوتے ہیں ، عکّاف! نکاح کر لو ورنہ تَذبذُب کا شکار رہو گے ، اُنہوں نے عرض کیا : یارسولَ الله صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَ آپ خود ہی کسی سے میرا نکاح کر دیجئے ، رسولِ کریم ، رؤفٌ رَّحیم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے فرمایا : میں نے کریمہ بنتِ کُلثوم حِمْیَری سے تمہارا نکاح کردیا۔ ([6])

صَلُّوْا عَلَی الْحَبِیْب!                              صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلٰی مُحَمَّد

شادی نہ کرنے یا تاخیر سے کرنے والوں کیلئے لمحۂ فکریہ

میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو!نکاح کے اِس قدر کثیر فوائد اور ایسی زبردست تاکید کے باوُجُود کسی اہم اور خاص وجہ کے بغیر شادی نہ کرنا نہ صرف بہت سی



[1]   مسند الفردوس ، ۱ / ۳۰۹ ، حدیث : ۱۲۲۲

[2]   ابن ماجه ، کتاب النکاح ، باب ماجاء فی فضل النکاح ، ۲ / ۴۰۷ ، حدیث : ۱۸۴۷

[3]   جامع صغیر ، ص۳۰۰ ، حدیث : ۴۸۶۷ ،  الاحاديث المختاره ، مسند انس بن مالک ، ۶ / ۱۱۰ ،  حدیث : ۲۱۰۱

[4]   تیسیر شرح جامع الصغیر ، حرف الراء ، ۲ / ۳۶ ، فیض القدیر ، ۴ / ۲۰۷ ، تحت الحدیث : ۴۸۶۷

[5]   احیاء العلوم ، کتاب  اٰداب النکاح ، الباب الاول فی الترغیب   الخ ، ۲ / ۳۲

[6]   مسند احمد ، مسند الانصار ،  ۸ / ۱۰۳ ، حدیث : ۲۱۵۰۶ملتقطا



Total Pages: 74

Go To