$header_html

Book Name:Aey Iman Walo (89 Ayat e Qurani)

(1)… حضرت ابوہریرہ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت ہے ، حضورِ اقدس صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے ارشاد فرمایا :  ’’جس نے اچھی طرح وضو کیا پھر جمعہ کو آیا اور (خطبہ) سنا اور چپ رہا ، اس کے لیے ان گناہوں  کی مغفرت ہو جائے گی جو اس جمعہ اور دوسرے جمعہ کے درمیان ہوئے ہیں  اور(ان کے علاوہ)مزید تین دن(کے گناہ بخش دئیے جائیں  گے ) اور جس نے کنکری چھوئی اس نے لَغْوْ کیا ۔ ( مسلم، کتاب الجمعة، باب فضل من استمع وانصت فی الخطبة، ص۴۲۷، الحدیث :  ۲۷(۸۵۷)) یعنی خطبہ سننے کی حالت میں  اتنا کام بھی لَغْوْ میں  داخل ہے کہ کنکری پڑی ہو اُسے ہٹا دے ۔

(2)…حضرت ابو سعیدرَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت ہے ، رسولِ کریم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے ارشاد فرمایا : ’’پانچ چیزیں  جو ایک دن میں  کرے گا، اللّٰہ تعالیٰ اس کو جنتی لکھ دے گا ۔  (1) جو مریض کو پوچھنے جائے ، (2) جنازے میں  حاضر ہو ، (3) روزہ رکھے ، (4) جمعہ کو جائے ، (5)اور غلام آزاد کرے ۔ ( الاحسان بترتیب صحیح ابن حبان، کتاب الصلاة، باب صلاة الجمعة، ۳ / ۱۹۱ ، الحدیث :  ۲۷۶۰، الجزء الرابع)

 جمعہ کی نماز چھوڑنے کی وعیدیں

            اَحادیث میں  جہاں  نمازِ جمعہ کے فضائل بیان کئے گئے ہیں  وہیں  جمعہ کی نماز چھوڑنے پر وعیدیں  بھی بیان کی گئی ہیں  چنانچہ یہاں  اس کی دووعیدیں  ملاحظہ ہوں  :

(1)…حضرت ابو ہریرہ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ اور حضرت عبداللّٰہ بن عمر  رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُمَا سے روایت ہے ، حضورِ اقدس صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے ارشاد فرمایا :  لوگ جمعہ چھوڑنے سے باز آئیں  گے یا اللّٰہ تعالیٰ ان کے دلوں  پر مہر کر دے گا، پھر وہ غافلین میں  سے ہو جائیں  گے ۔

( مسلم، کتاب الجمعة، باب التغلیظ فی ترک  الجمعة، ص۴۳۰، الحدیث :  ۴۰(۸۶۵))

(2)…حضرت اسامہ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت ہے ، رسولِ اکرم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے ارشاد فرمایا : ’’جس نے کسی عذر کے بغیر تین جمعے چھوڑے وہ منافقین میں  لکھ دیاگیا ۔ ( معجم الکبیر، مسند الزبیر بن العوام، باب ما جاء فی المرأة السوءالخ، ۱ / ۱۷۰، الحدیث :  ۴۲۲)

                نماز ِ جمعہ کی فرضیّت کی شرائط اور دیگر مسائل کیلئے بہارِ شریعت کامطالعہ فرمائیں  ۔

نمازِ جمعہ کی فرضیت سے متعلق3 شرعی مسائل :

            یہاں  نمازِ جمعہ کی فرضیت سے متعلق 3شرعی مسائل ملاحظہ ہوں  :

(1)…جمعہ فرضِ عین ہے اور ا س کی فرضیت ظہر سے زیادہ مُؤکَّد ہے اور اس کا منکر کافر ہے ۔ ( بہار شریعت، حصہ چہارم، جمعہ کا بیان، مسائل فقہیہ، ۱ / ۷۶۲)

(2)…جمعہ پڑھنے کے لئے 6شرطیں  ہیں  ، ان میں  سے ایک شرط بھی نہ پائی گئی تو جمعہ ہو گا ہی نہیں  ، (1)جہاں  جمعہ پڑھا جا رہا ہے وہ شہر یا فناءِشہر ہو ۔  (2)جمعہ پڑھانے والاسلطانِ اسلام ہویا اس کا نائب ہو جسے جمعہ قائم کرنے کا حکم دیا ۔  (3)ظہر کا وقت ہو ۔ یعنی ظہر کے وقت میں  نماز پوری ہو جائے ، لہٰذا اگر نماز کے دوران اگرچہ تشہد کے بعد عصر کا وقت آگیا تو جمعہ باطل ہو گیا، اب ظہر کی قضا پڑھیں  ۔ (4) خطبہ ہونا ۔ (5)جماعت یعنی امام کے علاوہ کم سے کم تین مَردوں  کا ہونا ۔  (6)اذنِ عام، یعنی مسجد کا دروازہ کھول دیا جائے کہ جس مسلمان کا جی چاہے آئے ، کسی کو روک ٹوک نہ ہو  ۔

(3)…جمعہ فرض ہونے کے لئے 11شرطیں  ہیں  ، اگر ان میں  سے ایک بھی نہ پائی گئی تو جمعہ فرض نہیں  ، لیکن اگر پڑھے گا تو ادا ہو جائے گا : (1)شہر میں  مقیم ہونا، (2)صحت، یعنی مریض پر جمعہ فرض نہیں ، مریض سے مراد وہ ہے کہ جامع مسجد تک نہ جا سکتا ہو، یا چلا تو جائے گا مگر مرض بڑھ جائے گا یا دیر میں  اچھا ہو گا ۔  (3)آزاد ہونا، (4)مرد ہونا، (5)عاقل ہونا، (6)بالغ ہونا، (7)آنکھوں والا ہونا، یعنی نابینا نہ ہو، (8)چلنے پر قادر ہونا، (9)قید میں  نہ ہونا(10)بادشاہ یا چور وغیرہ کسی ظالم کا خوف نہ ہونا، (11)اس قدر بارش، آندھی، اولے یا سردی نہ ہوناکہ ان سے نقصان کا صحیح خوف ہو ۔

                نوٹ : جمعہ سے متعلق شرعی مسائل کی مزید معلومات حاصل کرنے کیلئے بہار شریعت، جلد 1، حصہ4سے ’’جمعہ کا بیان‘‘ مطالعہ فرمائیں  ۔

( ذٰلِكُمْ خَیْرٌ لَّكُمْ:  یہ تمہارے لیے بہتر ہے ۔ ) یہاں  بہتری سے مراد لُغوی بہتری ہے یعنی دنیاوی کاروبار سے نمازِ جمعہ اور خطبہ وغیرہ بہتر ہے ، اس سے یہ لازم نہیں  آتا کہ یہ حاضری واجب نہ ہو، صرف مستحب ہو ۔

سورۃ المنافقون

(86)

مال، اولاد اللہ کی یادسے غافل نہ کریں

یٰۤاَیُّهَا الَّذِیْنَ اٰمَنُوْا لَا تُلْهِكُمْ اَمْوَالُكُمْ وَ لَاۤ اَوْلَادُكُمْ عَنْ ذِكْرِ اللّٰهِۚ-وَ مَنْ یَّفْعَلْ ذٰلِكَ فَاُولٰٓىٕكَ هُمُ الْخٰسِرُوْنَ(۹)

ترجمۂ کنزُالعِرفان :  اے ایمان والو! تمہارے مال اور تمہاری اولاد تمہیں  اللّٰہ کے ذکر سے غافل نہ کردیں  اور جو ایسا کرے گاتو وہی لوگ نقصان اٹھانے والے ہیں  ۔ (المنافقون



Total Pages: 97

Go To
$footer_html