Book Name:Kia Jannat Main Walidain Bhi Sath Hongay?

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَالصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْمِ ط

کیا جنَّت میں والدین بھی ساتھ ہوں گے؟ ([1])

شیطان لاکھ سُستی دِلائے یہ رِسالہ(۴۹صَفحات) مکمل پڑھ لیجیے اِنْ  شَآءَ اللّٰہ  عَزَّ وَجَلَّ   معلومات کا اَنمول خزانہ  ہاتھ آئے  گا ۔

دُرُود شریف کی فضیلت

فَرمانِ مصطفےٰصَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم ہے : مجھ پر دُرُود شریف پڑھ کر اپنی مجالس کو آراستہ کرو کہ تمہارا  دُرُودِ پاک پڑھنا بروزِ قِیامت تمہارے لیے نُور ہو گا ۔  ([2])

صَلُّوْا عَلَی الْحَبِیْب!                                    صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلٰی مُحَمَّد

اچھی نیت کی عادت کیسے بنائی جائے؟

سُوال  : ہر نىک کام سے پہلے  اچھى نىت کرنے کى عادت بنانا ایک مشکل کام ہے، یہ اِرشاد فرمائیے کہ نیک کام سے پہلے اچھی نیت کرنے کی عادت کىسے بنائی جائے ؟

جواب : نوٹ گننا بھى بڑا مشکل کام ہے ۔ اگر کوئی نوٹوں کی بورى بھر کر دے اور کہے کہ انہیں گنتی کرو تو یقیناً  بڑا مشکل اور محنت طلب کام نظر آئے گا، لیکن اگر وہ کہے کہ جتنى سو سو کى گڈىاں بناؤ گے تو ہر گڈی پر اىک نوٹ آپ کا ہو گا تو  اب ىہ گنتی کا مشکل کام بہت آسان لگے گا اور آپ دھڑا دھڑ گڈىاں بنا لىں گے کیونکہ ہر گڈی پر اىک نوٹ ملنے کا جَذبہ کام کروا دے گا ۔   

اِسی طرح نىتىں کرنے کا کام بھى اگرچہ مشکل نظر آتا ہے لیکن اس پر ملنے والے ثواب پر نظر رکھیں گے تو قدرے آسان ہو جائے گا ۔  ثواب جنَّت مىں لے جانے والا کام ہے ۔ نىکى جنَّت مىں لے جانے والا کام ہے ۔  اىک نىکى اللہ پاک نے قبول فرما لی اور اسى کے صَدقے جنَّت مِل جائے تو کوئى بعىد نہىں ۔  بہرحال ثواب اور جنَّت کی نعمتوں پر نظر ہو گی تو نیت کرنا آسان ہو جائے گا ۔  

نیت نہ کرنے کا نقصان

سُوال  : کسی نىک کام سے پہلے  اچھى نىت نہ کرنے کا کیا نقصان ہے؟ ([3])

جواب : کسی نیک کام سے پہلے اچھی نیت نہ ہوئی تو ثواب یا عمل ہی ضائع ہو سکتا ہے مثلاً اگر نماز کى نىت نہىں کى، نہ دِل مىں نىت تھى تو اب ثواب کى کوئى صورت ہی نہ  رہى کہ یہ فقط اُٹھک بىٹھک ہے نماز تو ہے ہی نہیں ۔

نماز کی نیت کیسے کی جائے؟

نماز میں کیا نىت کرنی ہےىہ بھى سىکھنا پڑے گا ۔  اب خالى ىہ کہہ لىا کہ مىں نماز پڑھتا ہوں تو ہر صورت مىں یہ نیت کافی نہىں ہے مثلاً عشا کى نماز پڑھتے وقت ذہن مىں ہونا چاہىے کہ مىں عشا کے فرض پڑھ رہا ہوں، کم از کم ىہ ذہن مىں ہونا ضَرورى ہے ۔  

نیت کے متعلق کچھ مَدَنی پھول

سُوال : نیت کے متعلق کچھ مَدَنی پھول اِرشاد فرما دیجیے ۔

جواب : نىت کے بارے مىں چند اہم مَدَنى پھول پیشِ خدمت ہیں : (۱)جتنى اچھى نىتىں زىادہ اتنا ثواب بھى زىادہ ۔ (۲)نىت دِل کے اِرادے کو کہتے ہىں دِل مىں نىت ہوتے ہوئے زبان سے کہہ لىنا زىادہ اچھا ہے ۔ دِل مىں اِرادہ نہ ہونے کى صورت مىں صِرف زبان سے نىت کے اَلفاظ ادا کر لىنے سے نىت نہىں ہو گى ۔  (۳)کسى بھى عملِ خىر ىعنى اچھے کام مىں اچھى نىت کا مَطلب ىہ ہے کہ وہ عمل رضائے اِلٰہى کے لىے ہو ۔ (۴) جو اچھى نىتوں کا عادى نہىں اسے شروع مىں بتکلف ىعنى زبردستى اپنے آپ کو  اچھی نىتیں کرنے کا  عادی  بنانا پڑے گا ۔

نیت کی حکمت اور اس کا طریقہ

سُوال : کسی کام سے پہلے اچھی نیتوں کی تَرغیب دِلانے  میں کیا  حکمت ہے؟نیز نیت کب کہلائے گی؟

جواب : کسی کام سے قبل نیتیں کرنے سے مقصود عبادت اور عادت مىں فرق کرنا ہوتا ہے ۔ صِرف زبانى کلامی ىا بے توجہى سے اِرادہ کرنا نىت نہیں کىونکہ نىت اس بات



[1]   یہ رِسالہ ۲۹ رَبیع الاوّل ۱۴۴۰؁ ھ بمطابق8 دَسمبر 2018 کو عالمی مَدَنی مَرکز فیضانِ مدینہ بابُ المدینہ (کراچی) میں ہونے والے مَدَنی مذاکرے کا تحریری گلدستہ ہے ، جسے اَلْمَدِیْنَۃُ الْعِلْمِیَّۃ کے شعبے ’’ فیضانِ مَدَنی مذاکرہ ‘‘ نے مُرتَّب کیا ہے ۔    (شعبہ فیضانِ  مَدَنی مذاکرہ)         

[2]   فِردوسُ الاخبار ، باب الزای، ۱  / ۴۲۲، حدیث : ۳۱۴۹  دار الفکر بیروت

[3]   یہ سُوال اور اس کے بعد والے چھ سُوالات  شعبہ فیضانِ مَدَنی مذاکرہ کی طرف سے قائم کیے گئے ہیں جبکہ جوابات امیرِاہلسنَّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ کے عطا فرمودہ  ہی ہیں ۔ (شعبہ فیضانِ مَدَنی مذاکرہ)



Total Pages: 15

Go To