Book Name:Seerat e Ala Hazrat Ki Chand Jhalkiyan

لڑکیوں کے مُعاملے میں ہم کو سرکارِ مدینہ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم نے کىسى اِحتىاط بتائى ہے ۔ اِس سے وہ لوگ عِبرت حاصِل کریں جو  گھروں میں فلمىں ڈرامے اور گناہوں بھرے چىنلز چلاتے ہیں۔ عشقىہ فسقىہ کہانیاں، ڈانس، گانے  باجے جب لڑکىاں دىکھیں گی تو ان پر کِس قدر بُرا اَثر پڑے گا۔ ایسے ماحول میں پَرورش پانے والی لڑکیاں جب گھر سے  بھاگ جاتى ہىں، Civil Marriage(یعنی عدالتی شادی) کر لىتى ہیں تو پھر والدین سر پکڑ کر روتے ہىں کہ ہائے یہ  کىا ہو گیا؟ ایسی نوبت آنے سے پہلے ہی جتنا ممکن ہو کنٹرول کىا جائے ۔ اگر آپ نے اپنے بچوں کو پکا مسلمان، نىک نمازى بنانا ہے ، بچىوں کو باحىا بنانا ہے تو پھر ہاتھ جوڑ کر مَدَنى اِلتجا ہے کہ اپنے گھر مىں مَدَنى چىنل  چلائیں۔ صِرف مَدَنى چىنل ہی دىکھتے رہىں تب جا کر بچت ہوگى ورنہ باقی  چىنلز پر تو عورتوں کے طرح طرح کے فىشن اىبل انداز اور فىشن شو کے نام پر دُنىا بھر کے گلے سڑے لباس دِکھاتے ہوں گے ۔ ہم تو مدینے والے آقا صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمکے غُلام ہیں، جو ہمارے آقا صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم کو اچھا لگے وہى ہم کو بھی اچھا لگنا چاہىے ۔ بہرحال گھروں میں صِرف مَدَنى چىنل ہی دِکھائىں اور بچیوں کو سورۂ نور کی تفسىر پڑھائیں تاکہ بچىوں کو حىا کا دَرس ملے ۔ مُفتى خلىل خان صاحب بَرکاتى عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللّٰہِ الْہَادِی نے سورۂ نُور کى باقاعدہ تفسیر لکھى ہے جو ”چادر اور چار دیواری“ کے نام سے ملتی ہے نیز مولانا مفتى قاسِم صاحِبدَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ کی بھی ”تفسىر سورۂ نور“مکتبۃ المدىنہ نے شائع کى ہے  ان کُتُب کا  مُطالعہ کیجئے ۔  

٭٭٭٭

              ”فیضانِ امام اہلسنَّت“پڑھنے کی  تَرغیب

(از شیخِ طریقت، امیرِ اہلسنَّت، بانیِ دعوتِ اسلامی حضرتِ علّامہ مولانا ابوبلال محمد الیاس عطّار قادری رضوی ضیائی دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ)

اَلْحَمْدُ لِلّٰہ عَزَّوَجَلَّ   100 سالہ عُرسِ اعلیٰ حضرت(۱۴۴۰ھ)کے سلسلے مىں مجلس ”ماہنامہ فیضانِ مدینہ“ کی طرف سے 252 صفحات پر مشتمل خصوصی شمارہ بنام” فىضانِ امام اہلسنَّت“جاری کیا گیا ہے ۔ اِس شمارے میں آپ کو بہت منتخب اور مُفید  مَضامىن پڑھنے  کو ملىں گے ، خود بھی اس کا مُطالعہ کیجیے اور ایک ، دو ، تین یا پچیس کی نسبت سے 25 خرید کر تقسیم بھی فرمائیے کہ جتنا شہد  ڈالىں گے اتنا ہی  مىٹھا ہو گا۔ کم از کم اپنے محلے کی  مَساجد کے  دو چار امام صاحبان تک  پہنچائیں۔ ائمہ کِرام اس مىں سے بىانات کرىں گے تو اِنْ شَآءَ اللّٰہ عَزَّوَجَلَّ  بہت فائدہ ہو گا۔ اِس کے عِلاوہ عام اسلامى بھائىوں، محلے داروں، رِشتہ داروں اور شادی وغیرہ کے مَواقع پر بھی  خوب خوب تقسیم فرمائیں۔ ىہ شمارہ جس کے  گھر مىں جائے گا کوئى نہ کوئى تو کھول کر دىکھے گا کہ اس مىں ہے کىا؟اور اس  پر  مىرے اعلىٰ حضرت کى نظر پڑ گئى تو اِنْ شَآءَ اللّٰہ عَزَّوَجَلَّ  پکا عاشقِ رَسول بن جائے گا۔ (نگرانِ شُورىٰ نے فرمایا : ) اس  شمارے کے پڑھنے کا تعلق صرف صَفَرُ الْمُظَفَّر کے مہینے کے ساتھ ہی خاص نہىں  ىہ تو اعلىٰ حضرت  عَلَیْہِ رَحْمَۃُرَبِّ الْعِزَّت کى پىارى پیاری سىرت کے پىارے پىارے مَضامىن پر مشتمل ہے ، ىہ سب کو کام آنے والا ہے لہٰذا اِس کوپڑھتے ہى رہنا چاہیے ۔



Total Pages: 11

Go To