Book Name:Saman-e-Bakhsish

 

آپ  محبوب  ہیں  اللّٰہ  کے  ایسے محبوب

ہر محب آپ کا محبوبِ خدا ہوتا ہے

جس گلی سے تو گزرتا ہے مرے جانِ جناں

ذَرَّہ ذَرَّہ تری خوشبو سے بسا ہوتا ہے

عرشِ اَعلیٰ سے کہیں بالا ہے رتبہ اس کا

آپ کے قدموں سے سر جس کا لگا ہوتا ہے

پیاسو مژدہ ہو کہ وہ ساقیٔ کوثر آئے

چین ہی چین ہے اب جام عطا ہوتا ہے

آستانے کے گداؤں کے لیے رحمت ہے

اور اَعدا پہ شہا قہرِ خدا ہوتا ہے

کب گل طیبہ کی خوشبو سے بسیں گے دل و جاں

دیکھئے کب کرمِ بادِ صبا ہوتا ہے

دیکھئے غنچۂ دِل اپنا کھلے گا کب تک

دیکھئے کب دِلِ پژمردہ ہرا ہوتا ہے

کب بہارِ چمنِ طیبہ نظر آتی ہے

دیکھئے کب دلِ پژمردہ ہرا ہوتا ہے

 

سر بلندی اسے حاصل ہے جناب ِرب میں

جو کوئی دَر پہ ترے ناصیہ سا ہوتا ہے

دل تپا سوزِ محبت سے کہ سب میل چھٹے

تپنے کے بعد ہی تو سونا کھرا ہوتا ہے

کب مٹانے سے کسی کے خطِ تقدیر مٹے

ہو کے رہتا ہے جو قسمت کا لکھا ہوتا ہے

محو اِثبات کی ہاں آپ نے قدرت پائی

تم جو چاہو تو برا آج بھلا ہوتا ہے

تیرا دِیدار مُیَسَّر ہو جسے نورِ خدا

اُسے دنیا ہی میں دِیدارِ خدا ہوتا ہے

وہ نہیں حشر میں جو ہوگا شہا بے پردہ

 



Total Pages: 123

Go To