Book Name:Zoq-e-Naat

ہر جان منتظر ہے ہر دیدہ رہ نگر ہے

غوغا ہے مرحبا کا صبحِ شبِ وِلادت

 

جبریل سر جھکائے قدسی پرے جمائے

ہیں سروِ قد ستادہ صبحِ شبِ وِلادت

 

کس داب کس اَدَب سے کس جوش کس طرب سے

پڑھتے ہے ان کا کلمہ صبحِ شبِ وِلادت

 

ہاں دِین والو اُٹھو تعظیم والو اُوٹھو

آیا تمہارا مولا صبحِ شبِ وِلادت

 

اُٹھو حضور آئے شاہِ غیور آئے

سلطانِ دین و دنیا صبحِ شبِ وِلادت

 

اُٹھومَلک اُٹھے ہیں عرش و فلک اُٹھے ہیں

کرتے ہیں ان کو سجدہ صبحِ شبِ وِلادت

 

آؤ فقیرو آؤ مونھ مانگی آس پاؤ

بابِ کریم ہے وا صبحِ شبِ وِلادت

 

سوکھی زبانوں آؤ اے جلتی جانوں آؤ

لہرا رہا ہے دریا صبحِ شبِ وِلادت

 

مرجھائی کلیوں آؤ ُکمھلائے پھولوں آؤ

برسا کرم کا جھالا صبحِ شبِ وِلادت

 

تیری چمک دمک سے عالم چمک رہا ہے

میرے بھی بخت چمکا صبحِ شبِ وِلادت

 

تاریک رات غم کی لائی بلا ستم کی

صدقہ تجلیوں کا صبحِ شبِ وِلادت

 

لایا ہے شیر تیرا نورِ خدا کا جلوہ

دِل کر دے دودھ دھویا صبحِ شبِ وِلادت

 

بانٹا ہے دو جہاں میں تو نے ضیا کا باڑا

دیدے حسنؔ کا حصہ صبحِ شبِ وِلادت

باغ جنت کے ہیں بہر مَدح خوانِ اَہل بیت

باغ جنت کے ہیں بہرِ مَدح خوانِ اَہلِ بیت

 



Total Pages: 158

Go To