Book Name:Zoq-e-Naat

کہیں  گے  اور  نبی   اِذْ   ھَبُوْا  اِلٰی  غَیْرِیْ

مرے   حضور   کے   لب   پر  اَنَا  لَھَا   ہوگا

 

دُعائے امت بدکار وِردِ لب ہوگی

خدا کے سامنے سجدہ میں سر جھکا ہوگا

 

غلام ان کی عنایت سے چین میں ہونگے

عدو حضور کا آفت میں مبتلا ہوگا

 

میں ان کے در کا بھکاری ہوں فضل مولیٰ سے

حسنؔ فقیر کا جنت میں بسترا ہوگا

 

یہ اکرام ہے مصطفٰے پر خدا کا

یہ اِکرام ہے مصطفیٰ پر خدا کا

کہ سب کچھ خدا کا ہوا مصطفیٰ کا

 

یہ بیٹھا ہے سکہ تمہاری عطا کا

کبھی ہاتھ اُٹھنے نہ پایا گدا کا

 

چمکتا ہوا چاند غارِ حرا کا

اُجالا ہوا برجِ عرشِ خدا کا

 

لحد میں عمل ہو نہ دیو بلا کا

جو تعویذ میں نقش ہو نقشِ پا کا

 

جو بندہ خدا کا وہ بندہ تمہارا

جو بندہ تمہارا وہ بندہ خدا کا

 

مِرے گیسوؤں والے میں تیرے صدقے

کہ سر پر ہجومِ بلا ہے بلا کا

 

تِرے زیر پا مسندِ مُلک یزداں

تِرے فرق پر تاج مُلکِ خدا کا

 

سہارا دیا جب مِرے ناخدا نے

ہوئی ناؤ سیدھی پھرا رُخ ہوا کا

 

کیا ایسا قادِر قضا و قدر نے

کہ قدرت میں ہے پھیر دینا قضا کا

 

 



Total Pages: 158

Go To