Book Name:Zoq-e-Naat

پا شکستہ اور عبورِ پل صراط

ہے مَدد کا وقت یا اچھے میاں

 

خائن و خاطی سے لیتے ہیں حساب

ہے مَدد کا وقت یا اچھے میاں

 

بھول جاؤں نہ میں سیدھی راہ کو

میرے اچھے رہنما اچھے میاں

 

تم مجھے اپنا بنا لو بہر غوث

میں تمہارا ہو چکا اچھے میاں

 

کون دے مجھ کو مرادیں آپ دیں

میں ہوں کس کا آپ کا اچھے میاں

 

یہ گھٹائیں غم کی یہ روزِ سیاہ

مہر فرما مہ لقا اچھے میاں

 

احمد نوری کا صدقہ ہر جگہ

منہ اُجالا ہو مرا اچھے میاں

 

آنکھ نیچی دونوں عالم میں نہ ہو

بول بالا ہو مرا اچھے میاں

 

میرے بھائی جن کو کہتے ہیں رضا

جو ہیں اس دَر کے گدا اچھے میاں

 

ان کی منہ مانگی مرادیں ہوں حصول

آپ فرمائیں عطا اچھے میاں

 

عمر بھر میں اُن کے سایہ میں رہوں

اُن پہ سایہ آپ کا اچھے میاں

 

مجھ کو میرے بھائیوں کو حشر تک

ہو نہ غم کا سامنا اچھے میاں

 

مجھ پہ میرے بھائیوں پر ہر گھڑی

ہو کرم سرکار کا اچھے میاں

 

مجھ سے میرے بھائیوں سے دُور ہو

 



Total Pages: 158

Go To