Book Name:Jannati Zevar

مسئلہ : ۔جن بیماریوں سے دوسروں کو نفرت ہوتی ہے جیسے خارش کوڑھ وغیرہ ایسے مریضوں کو چاہئے کہ وہ خود سب سے الگ الگ رہیں تاکہ کسی کو تکلیف نہ ہو۔

قرآن کی تلاوت کا ثواب

        قرآن مجید پڑھنے اور پڑھانے کے فضائل اور اجر و ثواب بہت زیادہ ہیں اس کے متعلق چند حدیثوں کو پڑھ لو اور ان پر عمل کرکے اجر و ثواب کی دولتوں سے مالا مال ہو جاؤ۔

حدیث : ۔رسول اﷲ صَلَّی اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَنے ارشاد فرمایا کہ تم میں وہ بہترین شخص ہے جو قرآن مجید پڑھے اور پڑھائے ۔

(صحیح البخاری ، کتاب فضائل القرآن، باب خیرکم من تعلم ۔۔۔الخ، رقم ۵۰۲۷، ج۳، ص۴۱۰)

حدیث :         حضور اقدسصَلَّی اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَنے ارشاد فرمایا کہ جو قرآن پڑھنے میں ماہر ہے وہ ’’کراماً کاتبین‘‘ کے ساتھ ہے اور جو شخص رُک رُک کر قرآن پڑھتا ہے اور وہ اس پر شاق ہے یعنی اس کی زبان آسانی سے نہیں چلتی تکلیف کے ساتھ الفاظ ادا ہوتے ہیں اس کے لئے دوگنا ثواب ہے۔(جامع الترمذی، کتاب فضائل القرآن، باب ماجاء فی فضل قاری ء القرآن، رقم۲۹۱۳، ج۴، ص۴۱۴)

حدیث : ۔حضور انورصَلَّی اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَنے فرمایا کہ جس کے سینے میں کچھ بھی قرآن نہیں ہے وہ ویرانہ اور اجاڑ مکان کے مثل ہے۔  

   (جامع الترمذی، کتاب فضائل القرآن، باب (ت : ۱۸) رقم۲۹۲۲، ج۴، ص۴۱۹)

حدیث : ۔رسول اﷲ صَلَّی اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَنے ارشاد فرمایا کہ جو شخص قرآن کا ایک حرف پڑھے گا اس کو ایک ایسی نیکی ملے گی جو دس نیکیوں کے برابر ہوگی میں یہ نہیں کہتا کہ الم ایک حرف ہے بلکہ الف ایک حرف ہے اور لام دوسرا حرف ہے اور میم تیسرا حرف ہے مطلب یہ ہے کہ جس نے صرف الم پڑھ لیا تو اس کو تیس نیکیاں ملیں گی ۔

 (جامع الترمذی، کتاب فضائل القرآن، باب ماجاء فی من قرء ۔۔۔الخ، رقم۲۹۱۹، ج۴، ص۴۱۷)

حدیث : ۔جس نے قرآن مجید پڑھااور اس کو یاد کر لیا اور اس نے قرآن کے حلال کئے ہوئے کو حلال سمجھا اور حرام کئے ہوئے کو حرام جانا تو وہ اپنے گھر والوں میں سے ایسے دس آدمیوں کی شفاعت کرے گا جن کے لئے جہنم واجب ہو چکا تھا۔   (جامع الترمذی، کتاب فضائل القرآن، باب ماجاء فی ۔۔۔الخ، رقم۲۹۱۴، ج۴، ص۴۱۴)

حدیث : ۔حضور اکرمصَلَّی اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَنے حضرت ابی بن کعب رَضِیَ اللہ  تَعَالٰی عَنْہُسے دریافت فرمایا کہ نماز میں تم نے کون سی سورہ پڑھی انہوں نے سورئہ فاتحہ الحمدﷲ رب العلمین پڑھ کر سنائی تو آپ نے ارشاد فرمایا کہ مجھے اس ذات کی قسم ہے جس کے قبضہ قدرت میں میری جان ہے کہ نہ اس کے مثل توریت میں کوئی سورہ اتاری گئی نہ انجیل میں نہ زبور میں یہ سورئہ سبع مثانی ہے اور قرآن عظیم ہے جو مجھے خدا کی طرف سے عطا کیا گیا ہے ۔(جامع الترمذی، کتاب فضائل القرآن، باب ماجاء فی فضل فاتحۃ الکتاب، رقم۲۸۸۴، ج۴، ص۴۰۰)  

حدیث : ۔حضور اقدسصَلَّی اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَنے فرمایا کہ تم لوگ اپنے گھروں کو قبرستان نہ بناؤ شیطان اس گھر میں سے بھاگتا ہے جس میں سورئہ بقرہ پڑھی جاتی ہے۔

(جامع الترمذی، کتاب فضائل القرآن، باب ماجاء فی فضل سورۃ البقرۃ۔۔۔الخ، رقم۲۸۸۶، ج۴، ص۴۰۲)

 اوریہ بھی ارشاد فرمایا کہ تم لوگ دو چمک دار سورتیں سورئہ بقرہ اور سورئہ آل عمران کو پڑھو کیونکہ یہ دونوں قیامت کے دن اس طرح آئیں گی گویا دو ابر ہیں یا دوسائبان ہیں یا صف بستہ پرندوں کی دو جماعتیں وہ دونوں اپنے پڑھنے والوں کی طرف سے جھگڑا کریں گی یعنی شفاعت کریں گی سورئہ بقرہ کو پڑھا کرو کہ اس کا لینا برکت ہے اور اس کو چھوڑنا حسرت ہے اور اہل باطل اس سورہ کی تاب نہیں لا سکتے ۔(جامع الترمذی، کتاب فضائل القرآن، باب ماجاء فی فضل سورۃ اٰل عمران، رقم۲۸۹۲، ج۴، ص۴۰۴)

حدیث : ۔جو شخص سورئہ کہف جمعہ کے دن پڑھے گااس کے لئے دونوں جمعوں کے درمیان نور روشن ہوگا۔  (مشکوۃ المصابیح، کتاب فضائل القراٰن، الفصل الثالث، رقم۲۱۷۵، ج۱، ص۵۹۶)

حدیث : ۔جو شخص اﷲ   تَعَالٰی کی رضا کے لئے سورئہ یٰسٓ پڑھے گا اس کے اگلے گناہوں کی مغفرت ہو جائے گی لہٰذا اس کو اپنے مردوں کے پاس پڑھا کرو۔  (شعب الایمان، باب فی تعظیم القرآن، فصل فی فضائل السور۔۔۔الخ، رقم ۲۴۵۸، ج۲، ص۴۷۹)

 اور حضور اقدسصَلَّی اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَنے یہ بھی فرمایا کہ ہر چیز کے لئے دل ہے اور قرآن کا دل یٰسٓ ہے جس نے سورئہ یس پڑھی دس مرتبہ قرآن پڑھنا اﷲ   تَعَالٰی اس کے لئے لکھے گا ۔

 (جامع الترمذی، کتاب فضائل القرآن، باب ماجاء فی فضل سورۃ یٰسین، رقم۲۸۹۶، ج۴، ص