Book Name:Mufti e Dawateislami

ان کی طرف سے کوئی جواب نہ آیا تو وہ خود نیچے تشریف لائیں اور دیکھا کہ مفتی ٔ دعوتِ اسلامی علیہ الرحمۃ بے حِس وحرکت پڑے ہوئے ہیں ۔ انہوں نے فوراً ان کے بڑے بھائی کو فون کیا ۔ وہ فوراً گھر پہنچے اور مفتی ٔ دعوتِ اسلامی علیہ الرحمۃ کو لے کر ہسپتال کی طرف روانہ ہوگئے ۔ وہاں پہنچنے پر ڈاکٹروں نے آپ علیہ الرحمۃ کا طِبّی معائنہ کیا اور بتایا کہ یہ توحرکتِ قَلْب بند ہونے کی وجہ سے تقریباً دوگھنٹے پہلے ہی داعیٔ اجل کو لَبَّیْک کہہ چکے ہیں ۔ ‘‘{اللہ عَزَّوَجَلَّ کی اِن پر رحمت ہو۔۔ا ور۔۔ اِن کے صدقے ہماری مغفرت ہو۔آمین بجاہ النبی الامین صَلَّی اللّٰہ تعالٰی علیہ واٰلہ وسلَّم }

اِِیْصَالِ ثواب کا آغاز

آپ کے گھر کے باہر جمع ہونے والے اسلامی بھائی تِلاوتِ قرآن اور ذکر و دُرُود میں مشغول تھے اور یوں آپ کو ایصال ثواب کا سلسلہ دَفْن ہونے سے پہلے ہی شروع ہوگیا ۔ اَلْحَمْدُلِلّٰہِ عَلٰی ذٰلِکَ

تختۂ غُسل پر مُسکراہٹ

رات تقریباً 10:00بجے مفتی ٔ دعوتِ اسلامی رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ کو غُسل دیا گیا ۔ آپ کوغُسل دینے والے اسلامی بھائیوں کا بیان ہے کہ ہم نے جاگتی آنکھوں سے دیکھا کہ مفتی ٔ دعوتِ اسلامی رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ دورانِ غسل مسکرا رہے تھے ۔ اس کی گواہی وہاں پر موجود دیگر اسلامی بھائیوں نے بھی دی ہے ۔ گویا کہ آپ سَیِّدُنَا شیخ سعدی رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہکے اس شعر کے مصداق تھے :

یادداری کہ وقت ِ زادن تو ہمہ خَنداں بدند توگِریاں

آنچناں زی کہ وقت مُردن تو ہَمہ گِریاں شَوند توخَنداں


 

 



Total Pages: 89

Go To