Book Name:Dilchasp Malomaat Sawalan Jawaaban Part 02

محتاج ضرورت مند زکوٰۃ کا روپیہ نہیں لینا چاہتے ، انہیں زکوٰۃ کہہ کر دیا جائے گا تو نہیں لیں گے لہٰذا زکوٰۃ کا لفظ نہ کہے ۔  (  [1])

سوال      کیازکوٰۃ کی نیت سے کسی شرعی فقیر کو کھانا کھلانے سے زکوٰۃ ادا ہوجائے گی؟

جواب     مباح کر دینے سے زکوٰۃ ادا نہ ہوگی مثلاً فقیر کو بہ نیّتِ زکوٰۃ کھانا کھلا دیا زکوٰۃ ادا نہ ہوئی کہ مالک کر دینا نہیں پایا گیا ، ہاں اگر کھانا دے دیا کہ چاہے کھائے یالے جائے تو ادا ہوگئی ۔  یونہی بہ نیّتِ زکوٰۃ فقیر کو کپڑا دے دیا یا پہنا دیا ادا ہوگئی ۔  (  [2])

سوال      کوئی شے گِروِی رکھوائی تو اُس کی زکوٰۃ کون ادا کرے گا ؟

جواب     جو چیز گِروِی رکھوائی گئی ہے اس کی زکوٰۃ نہ گِروی رکھوانے والے پر لازم ہے اور نہ ہی جس کے پاس گِروی رکھوائی گئی ہے اُس پر لازم ہے کیونکہ جس کے پاس وہ چیز گروی ہے وہ اس کا مالک نہیں اور گروی رکھوانے والے کی بھی ملکیت کامل نہیں کیونکہ وہ چیز اب اس کے قبضے میں ہی نہیں اور جب وہ چیز گروی رکھوانے والے کے قبضہ میں آئے گی تو جتنی مُدّت وہ چیز گروی تھی اس کے قبضے میں نہیں تھی اس پر اتنے عرصہ کی زکوٰۃ بھی لازم نہیں ۔  (  [3])

سوال      کیا سال بھر صدقہ وخیرات کرنے کے بعد اُس میں نیتِ زکوٰۃ ہوسکتی ہے ؟

جواب     سال بھر تک خیرات کرتا رہا ، اب نیّت کی کہ جو کچھ دیا ہے زکوٰۃ ہے تو ادا نہ ہوئی ۔  زکوٰۃ دیتے وقت یا زکوٰۃ کے لیے مال علیحدہ کرتے وقت نیتِ زکوٰۃ شرط ہے ۔  نیّت کے یہ معنی ہیں کہ اگر پوچھا جائے تو بلا تَأَمُّل بتا سکے کہ زکوٰۃ ہے ۔  (  [4])

سوال      کیا مسجد کی تعمیریا مَیِّت کی تجہیز وتکفین میں زکوٰۃ کی رقم لگائی جاسکتی ہے ؟

جواب     زکوٰۃ کا روپیہ مُردہ کی تجہیز و تکفین یا مسجد کی تعمیر میں نہیں صرف کر سکتے کہ تملیکِ فقیر نہیں پائی گئی اور ان اُمور میں صرف کر نا چاہیں تو اس کا طریقہ یہ ہے کہ فقیر کو مالک کر دیں اور وہ صَرْف (  یعنی خرچ) کرے اور ثواب دونوں کو ہوگا ۔  (  [5])

سوال      کیا ایسا مقروض جوشرعی فقیر بھی ہو اس کو قرض معاف کردینے سے قرض خواہ کی زکوٰۃ ادا ہوجائے گی؟

جواب     کسی کا فقیر پر قرض ہے اور وہ اس قرض کو اپنے مال کی زکوٰۃ میں دینا چاہتا ہے یعنی یہ چاہتا ہے کہ قرض فقیر کو معاف کر دے اور وہ میرے مال کی زکوٰۃ ہو جائے تو یہ نہیں ہوسکتا ۔  البتہ یہ  ہوسکتا ہے کہ پہلے اُسے زکوٰۃ کا مال دے پھر وہی مال اپنے قرض کے طور پر اس سے واپس لے لے ، اب اگر وہ دینے سے انکار کرے تو چھین بھی سکتا ہے ۔  (  [6])

صدقہ

سوال      آدمی کا کون سا عمل بروزِ قیامت اس کے لئے سایہ بنے گا؟

جواب     وہ عمل صَدَقہ ہے  ۔ حضور نبیِ مکرّم ، نُورِ مجسم صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَنے ارشادفرمایا : بے شک صَدَقہ کرنے والوں کو صَدَقہ قبر کی گرمی سے بچاتا ہے ، اور بِلاشُبہ مسلمان قيامت کے دن اپنے صَدَقہ کے سائے میں ہوگا ۔  (  [7])

سوال      عام مسکین پر صَدَقہ کرنے اور رشتہ دار پر صَدَقہ کرنے میں کیا فرق ہے ؟

جواب     حضورنبیِ پاک ، صاحبِ لولاک صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے ارشاد فرمایا :  رشتہ دار کو صَدَقہ دینے میں دو ثواب ہیں ایک صَدَقہ کرنے کا اوردوسراصِلَہ رحمی کرنے کا ۔  (  [8])

سوال      صدقۂ نافلہ دیتے وقت کیا نیّت ہونی چاہئے ؟

جواب    جو شخص نفلی صدقہ دے اس کے لئے افضل یہ ہے کہ تمام اہل ایمان کو ثواب پہنچانے کی نیت کرے اس طرح انھیں بھی ثواب پہنچے گا اور اس کا ثواب بھی کم نہ ہوگا ۔  (  [9])

سوال      چُھپا کر صدقہ کرنے کی کوئی فضیلت بیان کیجئے ؟

جواب     حضورِ پُر نور ، شَافِعِ یَوْمُ النشورصَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے ارشاد فرمایا : سات شخص ہیں جن پر اللہ تعالیٰ اُس دن سایہ کرے گا جس دن اُس کے  (  عرش کے ) سائے کے سوا کوئی سایہ نہ ہو گا ۔   (  اُن میں سے ایک) وہ شخص ہے جس نے کچھ صدقہ کیا اور اِسے اتنا چُھپایا کہ بائیں  ہاتھ کو بھی خبر نہ ہوئی کہ دائیں نے کیا خرچ کیا ۔  (  [10])

سوال      آدمی کا اپنے نفس پر صَدقہ کیا ہے ؟

جواب   حضرت سَیِّدُنا ابُو ذَررَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ سے مروی ہے کہ حضور تاجدارِ ختمِ نبوّت صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے ارشاد فرمایا : تم لوگوں  کو  (  اپنے ) شر سے محفوظ رکھو ، یہ ایک صَدَقہ



[1]     فتاوی ھندیة ، کتاب الزکاة ، الباب الاول فی تفسیرھا ۔ ۔ ۔ الخ ، ۱ /  ۱۷۱ ، بہار شریعت ، حصہ۵ ، ۱ /  ۸۹۰ ، ملتقطاً ۔

[2]     درمختار مع ردالمحتار ، کتاب الزکاة ، ۳ /  ۲۰۴ملخصاً ، بہار شریعت ، حصہ۵ ، ۱ /  ۸۷۴ ۔

[3]     درمختار مع ردالمحتار ، کتاب الزکاة ، مطلب فی زکاة ثمن المبیع وفاء ، ۳ /  ۲۱۴ ، بہار شریعت ، حصہ۵ ، ۱ /  ۸۷۷ ، ملخصاً ۔

[4]     فتاوی ھندیة ، کتاب الزکاة ، الباب الاول فی تفسیرھا وصفتھا وشرائطھا ، ۱ /  ۱۷۰ ۔

[5]     درمختار مع ردالمحتار ، کتاب الزکاة ، ۳ /  ۲۲۷ ، بہار شریعت ، حصہ۵ ، ۱ /  ۸۹۰ ، ملتقطاً ۔

[6]     درمختار ، کتاب الزکاة ، ۳ / ۲۲۶ ، بہار شریعت ، حصہ۵ ، ۱ /  ۸۹۰ ، ملخصاً ۔

[7]     شعب الایمان ، باب فی الزکاة ، التحریض علی صدقة التطوع ، ۳ /  ۲۱۲ ، حدیث : ۳۳۴۷ ۔

[8]     ترمذی ، کتاب الزکاة ، باب ماجاء فی الصدقة علی ذی القرابة ، ۲ /  ۱۴۲ ، حدیث : ۶۵۸ ۔

[9]     ردالمحتار ، کتاب الحج ، مطلب في إھداء ثواب الأعمال للغیر ، ۴ / ۱۳ ۔

[10]     بخاری ، کتاب الاذان ، باب من جلس فی المسجد    

Total Pages: 122

Go To