Book Name:Dilchasp Malomaat Sawalan Jawaaban Part 02

سوال      عِیدَین کی نماز کا طریقہ بیان کیجئے ؟

جواب     (  امام صاحب جباَللهُ اَكْبَر  کہیں تو) کانوں تک ہاتھ اُٹھائیے اوراَللهُ اَكْبَرکہہ کر حَسبِ معمول ناف کے نیچے باندھ لیجئے اور ثَناء پڑھئے ۔ پھر کانوں تک ہاتھ اُٹھائیے اوراَللهُ اَكْبَرکہتے ہوئے لٹکا دیجئے  ۔ پھر ہاتھ کانوں تک اٹھائیے اوراَللهُ اَكْبَرکہہ کر لٹکا دیجئے ۔ پھر کانوں تک ہاتھ اٹھائیے اوراَللهُ اَكْبَرکہہ کر باندھ لیجئے یعنی پہلی تکبیر کے بعد ہاتھ باندھئے اس کے بعد دوسری اور تیسری تکبیر میں لٹکائیے اور چوتھی میں ہاتھ باند ھ لیجئے ۔  اس کو یوں یادرکھئے کہ جہاں قِیام میں تکبیر کے بعد کچھ پڑھنا ہے وہاں ہاتھ باندھنے ہیں اور جہاں نہیں پڑھنا وہاں ہاتھ لٹکانے ہیں ۔  (  [1])  پھر امام تَعَوُّذ اور تَسْمِیَہ آہِستہ پڑھ کر اَلحَمدُ شريف اور سورت جہر  (  یعنی بُلند آواز ) کے ساتھ پڑھے ، پھر رُکوع کرے ۔ دوسری رَکْعَت میں پہلے اَلحَمدُ شريف اور سُورت جہر کے ساتھ پڑھے ، پھر تین بار کانوں٠ تک ہاتھ اٹھا کراَللهُ اَكْبَرکہئے اور ہاتھ نہ باندھئے اور چوتھی باربِغیر ہاتھ اُٹھا ئے اَللهُ اَكْبَرکہتے ہوئے رُکوع میں جائیے اور نَماز مکمَّل کر لیجئے ۔  (  [2])

سوال      مقتدی رُکوع میں زائد تکبیریں پوری نہیں کرسکا یا پھر قَوْمَہ میں شامل ہوا تو اب تکبیریں کب کہے گا؟

جواب     اگر اس نے رکوع میں تکبیریں پوری نہ کی تھیں کہ امام نے سر اٹھا لیا تو باقی ساقط ہوگئیں اور اگر امام کے رکوع سے اٹھنے کے بعد شامل ہوا تو اب تکبیریں نہ کہے بلکہ جب اپنی پڑھے اس وقت کہے اور رکوع میں جہاں تکبیر کہنا بتایا گیا اس میں ہاتھ نہ اٹھائے اور اگر دوسری رکعت میں شامل ہوا تو پہلی رکعت کی تکبیریں اب نہ کہے بلکہ جب اپنی فوت شدہ پڑھنے کھڑا ہو اس وقت کہے ۔  (  [3])

سوال      امام صاحب نے چھ سے زیادہ تکبیریں کہہ دیں تو مقتدی کیا کرے گا؟

جواب     امام نے چھ تکبیروں سے زیادہ کہیں تو مقتدی بھی امام کی پیروی کرے مگر تیرہ سے زیادہ میں امام کی پیروی نہیں (  کی جائے گی کہ عیدین میں تیرہ تک تکبیریں مشروع ہیں) ۔   (  [4])

سوال      وہ کون سی نماز ہے جس میں رُکوع کی تکبیر کہنا واجب ہے ؟

جواب     عیدین میں دوسری رکعت کے رکوع کی تکبیرکہنا واجب ہے ۔  (  [5])

سوال      پہلی رکعت میں امام صاحِب نے تکبیروں سے پہلے قِرَاءَت شروع کردی تو کیا حکم ہے ؟

جواب     پہلی رکعت میں امام تکبیریں بھول گیا اور قِرَاءَ ت شروع کر دی تو قِرَاءَ ت کے بعد کہہ لے يا رکوع میں اور قِرَاءَ ت کا اعادہ نہ کرے ۔  (  [6])

سوال      جس شخص کی نمازِعید کی جماعت نکل جائے کیاوہ اپنے طور پر پڑھ سکتا ہے ؟

جواب     امام نے نماز پڑھ لی اور کوئی شخص باقی رہ گیا خواہ وہ شامل ہی نہ ہوا تھا یا شامل تو ہوا مگر اس کی نماز فاسد ہوگئی تو اگر دوسری جگہ مل جائے پڑھ لے ورنہ نہیں پڑھ سکتا ، ہاں بہتر یہ ہے کہ یہ شخص چار رکعت چاشت کی نماز پڑھے ۔  (  [7])

سوال      امام کا خطبۂ عید  سے پہلے اور بعد میں تکبیر کہنے کا حکم بیان کیجئے ؟

جواب     نمازِ عید میں پہلے خطبہ سے قبل نو بار اور دوسرے سے پہلے سات بار اور منبر سے اترنے سے پہلے چودہ بار اللہ اَکْبَرکہنا سنت ہے ۔  (  [8])

سوال      کیا نمازِ عید دوسرے دن بھی پڑھی جاسکتی ہے ؟

جواب     کسی عذر کے سبب عید کے دن نماز نہ ہو سکی  (  مثلاً سخت بارش ہوئی یا ابر کے سبب چاند نہیں دیکھا گیا اور گواہی ایسے وقت گزری کہ نماز نہ ہو سکی یا ابر تھا اور نماز ایسے وقت ختم ہوئی کہ زوال ہو چکا تھا) تو دوسرے دن پڑھی جائے اور دوسرے دن بھی نہ ہوئی تو عیدالفطر کی نماز تیسرے دن نہیں ہو سکتی اور دوسرے دن بھی نماز کا وہی وقت ہے جو پہلے دن تھا یعنی ایک نیزہ آفتاب بلند ہونے سے نِصْفُ النہار شرعی تک اور بلاعذر عِیدُالفطر کی نماز پہلے دن نہ پڑھی تو دوسرے دن نہیں پڑھ سکتے ۔  (  [9])

بیماری  اور علاج

سوال      حدیث پاک میں بخار کی کیا فضیلت بیان کی گئی ہے ؟

جواب     تاجدارِ ختم ِنبوت صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے فرمایا :  بخار کو بُرانہ کہوکیونکہ وہ بندۂ مومن کوگناہوں سے اس طرح پاک کر دیتا ہے جیسے آگ لوہے  کا زنگ صاف کر دیتی ہے ۔  (  [10])

 



[1]     درمختار ، کتاب الصلاة ، باب العیدین ، ۳ /  ۶۶ ۔

[2]     فتاوی ھندیة ، کتاب الصلاة ، الباب السابع عشر فی صلاة العیدین ، ۱ /  ۱۵۰ ۔

[3]     فتاوی ھندیة ، کتاب الصلاة ، الباب السابع عشر فی صلاة العیدین ، ۱ /  ۱۵۱ ۔

[4]     ردالمحتار ، کتاب الصلاة ، باب العیدین ، ۳ /  ۶۳ ، بہار شریعت ، حصہ۴ ، ۱ /  ۷۸۲ ۔

[5]     درمختار ، کتاب الصلاة ، باب صفة الصلاة ، ۲ /  ۲۰۰ ۔

[6]     فتاوی ھندیة ، کتاب الصلاة ، الباب السابع عشر ۔ ۔  ۔ الخ ، ۱ /  ۱۵۱ ، غنیۃ المتملی ، فصل فی صلاة العید ، ص۵۷۲ ۔

[7]     درمختار ، کتاب الصلاة ، باب العیدین ، ۳ /  ۶۷ ۔

[8]     درمختار ، کتاب الصلاة ، باب العیدین ، ۳ /  ۶۷ ۔

[9]     فتاوی ھندیة ، کتاب الصلاة ، الباب السابع عشر فی صلاة العیدین ، ۱ /  ۱۵۱ ، بہارشریعت ، حصہ۴ ، ۱ /  ۷۸۴ ۔

[10]     مسلم ، کتاب البر والصلة ، باب ثواب المومن فیما یصیبہ...الخ ، ص۱۰۶۸ ، حدیث : ۶۵۷۰ ۔



Total Pages: 122

Go To