Book Name:Dilchasp Malomaat Sawalan Jawaaban Part 02

عالَمِ بَرْزَخ

سوال      بَرْزَخ سے مراد قبر ہے یا وہ زمانہ جو بعد مرنے سے قیامت یا حشر تک ہے ؟

جواب     نہ قبر نہ وہ زمانہ بلکہ وہ مقامات جن میں اَرواح بعدِموت حشر تک حسبِ مراتب رہتی ہیں ۔  (  [1])

سوال      وہ کونسا وقت ہے جب ہر شخص پر اسلام کی حقانیّت واضح ہوجاتی ہے ؟

جواب     جب زندگی کا وقت پورا ہو جاتا ہے ، اُس وقت حضرت عزرائیل عَلَیْہِ السَّلَام قَبضِ روح کے لیے آتے ہیں اور اُس شخص کے دائیں بائیں جہاں تک نگاہ کام کرتی ہے فرشتے دکھائی دیتے ہیں ، مسلمان کے آس پاس رحمت کے فرشتے ہوتے ہیں اور کافر کے دائیں بائیں عذاب کے ۔  (  [2])  اُس وقت ہر شخص پر اسلام کی حقّانیت آفتاب سے زیادہ روشن ہو جاتی ہے ، مگر اُس وقت کا ایمان معتبر نہیں ۔  (  [3])

سوال      نزع کے وقت  ایمان لانا کیوں فائدہ مند نہیں ہے ؟

جواب     کیونکہ حکم ایمان بِالغیب کا ہے اور اب غیب نہ رہا ، بلکہ یہ چیزیں مُشَاہَدَہ میں آگئیں ۔  (  [4])

سوال      دفن کے بعد مردے کے ساتھ کیا معاملات پیش آتے ہیں؟

جواب     جب دفن کرنے والے دفن کرکے وہاں سے چلتے ہیں  مردہ اُن کے جُوتوں کی آواز سنتا ہے ۔  (  [5]) ، اُس وقت اُس کے پاس دو فرشتے اپنے دانتوں سے زمین چیرتے ہوئے آتے ہیں[6]) ، اُن کی شکلیں نہایت ڈراؤنی اور ہیبت ناک ہوتی ہیں[7]) ، اُن کے بدن کا رنگ سیاہ[8]) اور آنکھیں نیلی[9]) اور دیگ کے برابر اور شعلہ زن ہوتی  ہیں[10]) اور اُن کے ہیبت ناک بال سر سے پاؤں تک[11]) اور اُن کے دانت گائے کے سینگ برابر[12]) ، جن سے زمین چیرتے ہوئے آئیں گے [13]) ، اُن میں ایک کومنکراوردوسرے کو نَکِیْر کہتے ہیں[14]) ، مردے کو جھنجھوڑتے اور جِھڑک کر اُٹھاتے اور نہایت سختی کے ساتھ کَرَخْت آواز میں سوال کرتے ہیں ۔  (  [15])

سوال      اگر مردے کو دفن نہ کیا گیا تو کیا اس سے بھی سوالاتِ قبر ہوں گے ؟

جواب     مردہ اگر قبر میں دفن نہ کیا جائے تو جہاں پڑا رہ گیا یا پھینک دیا گیا ، غرض کہیں ہو اُس سے وہیں سوالات ہوں گے اور وہیں ثواب یا عذاب اُسے پہنچے گا یہاں تک کہ جسے شیر کھا گیا تو شیر کے پیٹ میں سوالات ہوں گے اور ثواب و عذاب جو کچھ ہو پہنچے گا ۔  (  [16])

سوال      عذاب فقط روح پر ہوتا ہے یا جسم پر بھی ہوتا ہے ؟

جواب     روح و جسم دونوں پر ہوتا ہے ۔ یونہی ثواب بھی دونوں پر ہوتا ہے ۔  (  [17])

سوال      مرنے کے بعد اچھے اور برے اعمال راحت اور اذیت کا ذریعہ کیسے بنیں گے ؟

جواب     گنہگاروں کے اعمال اپنے مناسب شکل پر متشکل ہو کر کتّا یا بھیڑیا یا کسی اور شکل کے بن کر اُن کو ایذا پہنچائیں گے اور نیکوں کے اعمالِ حَسَنہ مقبول و محبوب صورت پر متشکل ہو کرانہیں  اُنس وراحت دیں گے ۔  (  [18])

سوال      کیا مُردہ کلام بھی کرتا ہے ؟

 



[1]     ملفوظات اعلیٰ حضرت ، ص۴۵۵ ۔

[2]     مسند امام احمد ، مسند الکوفیین ، ۶ /  ۴۱۳ ، حدیث : ۱۸۵۵۹ ۔

[3]     تفسیر طبری ، پ۲۴ ، المومن ، تحت الآیة : ۸۵ ، ۱۱ /  ۸۳ ۔

[4]     بہار شریعت ، حصہ اول ، ۱ /  ۱۰۰ ۔

[5]     بخاری ، کتاب الجنائز ، باب ماجاء فی عذاب القبر ، ۱ / ۴۶۳ ، حدیث : ۱۳۷۴ ۔

[6]     اثبات عذاب القبر للبیھقی ، باب تخویف اھل الایمان  بعذاب القبر ، ص۸۱ ، حدیث : ۱۰۴ ۔

[7]     احیاء علوم الدين ، کتاب قواعد العقائد ، معنی الکلمة الثانیة ۔ ۔ ۔  الخ ، ۱ /  ۱۲۷ ۔

[8]     اثبات عذاب القبر للبیھقی ، باب تخویف اھل الایمان  بعذاب القبر ، ص۸۱ ، حدیث : ۱۰۴ ۔

[9]     ترمذی ، کتاب الجنائز ، باب ماجاء فی عذاب القبر ، ۲ /  ۳۳۷ ، حدیث : ۱۰۷۳ ۔

[10]     معجم اوسط ، ۳ /  ۲۹۲ ، حدیث : ۴۶۲۹ ۔

[11]     اثبات عذاب القبر للبیھقی ، باب تخویف اھل الایمان  بعذاب القبر ، ص۸۱ ، حدیث : ۱۰۴ ۔

شرح الصدور ، باب فتنة القبر وسوال الملکین ، حدیث ابن عباس ، ص۱۲۲ ۔