Book Name:Dilchasp Malomaat Sawalan Jawaaban Part 01

سوال   قعدۂ اُولیٰ میں تَشَہُّد کے بعد اگر بے خیالی میںاَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰی مُحَمَّدٍیا  اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰی سَیِّدِنَاکہہ لیا تو اس سے نماز پر کیا اثر پڑے گا؟

جواب             فَرْض، وِتْر اور سنّتِ مُؤکَّدہ کے قعدۂ اُولیٰ میں تشہد کے بعد اگر بے خیالی میں ایسا ہواتوسجدۂ سہو واجب ہوجائے گا اوراگرجان بوجھ کر کہا تو نماز لوٹانا واجب ہے۔([1])

سوال   کس صورت میں نمازی سلام پھیرنے کے باوجود نماز سے باہر نہیں ہوتا؟

جواب   جس پر سجدۂ سہو واجب ہو مگر سہو ہونا یاد نہ ہوتو اس صورت میں سلام پھیرنے کے باوجود نماز کے باہر نہیں بَشرطیْکہ سجدۂ سہو کرلے لہٰذا جب تک کوئی فعل مُنافیٔ نماز نہ کیا ہو اسے حکم ہے کہ سجدۂ سہو کرے اور تشہد وغیرہ پڑھ کر نماز پوری کرے۔([2])

نمازِ وتر

سوال   نمازِ وتر کا وقت کب سے کب تک ہے؟

جواب             وتر کا وقت عشاء کے فرضوں کے بعد سے صبحِ صا دِق تک ہے ۔([3])

سوال   نمازِوترکب ادا کرنا افضل ہے ؟

جواب             جو سو کر اٹھنے پر قادر ہو اس کے لیے افضل ہے کہ  رات کے آخری حصے میں اٹھ کر پہلے تَہَجُّد ادا کرے پھر وتر۔([4])  حدیثِ پاک میں ہے : ”جس شخص کو یہ خَدْشَہ ہو کہ وہ رات کے پچھلے پہر نہیں اُٹھ سکے گا وہ وتر پڑھ کر سویا کرےاور جس شخص کو رات کے اُٹھنے پر اعتماد ہو وہ رات کے پچھلے پہر وتر پڑھے“([5])

سوال   نمازِ وتر کا حکم بتائیے ؟

جواب             نمازِ وتر واجب ہے۔([6])  اگر یہ چھوٹ جائے توا س کی قضا لازم ہے۔([7])

سوال   وتر میں تکبیرِ قنوت کہنے کا کیا حکم ہے؟  

جواب                تیسری رکعت میں قراء ت کے بعد تکبیرِ قنوت کہنا واجب ہے۔([8])

سوال      مشہور دعائے قنوت کونسی ہے ؟

جواب     مشہور دعائے قنوت یہ ہے : ’’ اَللّٰھُمَّ اِنَّا نَسْتَعِیْنُکَ وَ نَسْتَغْفِرُکَ وَ نُؤْمِنُ بِکَ وَ نَتَوَکَّلُ عَلَیْکَ وَنُثْنِیْ عَلَیْکَ الْخَیْرَ وَنَشْکُرُکَ وَلَا نَکْفُرُکَ وَ نَخْلَعُ وَنَتْرُکُ مَنْ یَّفْجُرُکَ ؕاَللّٰھُمَّ اِیَّاکَ نَعْبُدُ وَلَکَ نُصَلِّیْ وَنَسْجُدُ وَاِلَیْکَ نَسْعٰی وَنَحْفِدُ وَنَرْجُوْ رَحْمَتَکَ وَنَخْشٰی عَذَابَکَ اِنَّ عَذَابَکَ بِالْکُفَّارِ مُلْحِقْ۔ ‘‘ ([9])

سوال      جو شخص دعائے قنوت نہ پڑھ سکےتو وہ کیا پڑھے ؟

جواب                وہ یہ پڑھے: ”اَللّٰھُمَّ رَبَّنَا اٰ تِنَا فِی الدُّنْیَا حَسَنَۃً وَّ فِی الْاٰخِرَۃِ حَسَنَۃً وَّقِنَا عَذَابَ النَّارْ“یا تین مرتبہ یہ پڑھے : ”اَللّٰھُمَّ اغْفِرْ لِیْ“۔([10])

سوال      اگر دعائے قنوت پڑھنا بھول جائیں تو کیا کریں  ؟

جواب                اگر دعائے قنوت پڑھنا بھول گئے اور رکوع میں چلے گئے تو واپس نہ لَوٹئے بلکہ سجدۂ سہو کر لیجئے ۔([11])

سوال      دعائے قنوت  بلند آواز سے پڑھی جائے  یا آہستہ ؟

جواب     دعائے قنوت آہستہ آواز سے  پڑھے امام ہو یا مُنْفَرِد یا مُقتدی،  ادا ہو یا قضا،  رمضان میں ہو یا اور دنوں میں۔([12])

سوال   کس شخص کو وتر کی نماز میں دُعائے قنوت پڑھنا منع ہے؟  

جواب   جو شخص وتر کی جماعت میں تیسری رکعت کے رکوع میں شامل ہو ااور امام کے ساتھ قنوت نہ پڑھ سکا وہ اپنی بقیہ نماز میں بھی قنوت نہیں پڑھے گا۔([13])

سوال   مُقتدی کی دعائے قنوت ختم ہونے سے قبل امام رکوع میں چلا گیا تو مقتدی کیلئے کیا حکم ہے؟

 



4   درمختار وردالمحتار، کتاب الصلاۃ، باب سجود السھو، ۲/۶۵۷۔

1   در مختار ورد المحتار، کتاب الصلاۃ، باب سجود السھو، ۲/۶۷۰-۶۷۱۔

2   مراقی الفلاح وحاشیۃ طحطاوی، ص۱۷۸۔

3   غنیۃ المتملی، ص ۴۰۳۔

4   مسلم، کتاب صلاۃ المسافرین وقصرھا، باب من خاف ان لایقوم    الخ، ص ۳۸۰، حدیث:  ۷۵۵۔

5   بحر الرائق، کتاب الصلاۃ، باب الوتر والنوافل،  ۲/۶۶۔

6   در مختار ورد المحتار، کتاب الصلاۃ، مطلب :فی منکر الوتر     الخ،  ۲/۵۳۲۔

1   در مختار ورد المحتار، کتاب الصلاۃ، مطلب :فی منکر الوتر    الخ،  ۲/۵۳۳۔

2   نماز کے احکام، ص۲۷۴۔

3   مراقی الفلاح، کتاب الصلاۃ، باب الوتر واحکامہ، ص۱۹۷۔

4   فتاوی ھندیۃ، کتاب الصلاۃ، الباب الثامن فی صلاۃ الوتر، ۱/۱۱۱۔

5   در مختار ورد المحتار، کتاب الصلاۃ، باب الوتر و النوافل، مطلب فی منکر الوتر    الخ،  ۲/۵۳۶۔

1   فتاوی ھندیۃ، کتاب الصلاۃ، الباب الثامن فی صلاۃ الوتر، ۱/۱۱۱۔



Total Pages: 99

Go To